ساکچی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
جمشید پور کا ایک علاقہ
ساکچی
ساکچی گول چکر
متناسقات: 22°48′19″N 86°12′08″E / 22.805182°N 86.202282°E / 22.805182; 86.202282متناسقات: 22°48′19″N 86°12′08″E / 22.805182°N 86.202282°E / 22.805182; 86.202282
ملکبھارت
شہرجمشید پور
ریاستجھارکھنڈ
منطقۂ وقتGMT + 0530

ساکچی شمال مشرقی بھارت کے سنگھ بھوم کا ایک علاقہ تھا، جو ایک گاؤں تھا، جسے جمشید جی ٹاٹا نے منتخب کردہ اسٹیل شہر کا مقام بنانے کے لیے منتخب کیا تھا ، جو 1919 میں جمشید پور بن گیا تھا۔ ساکچی اب ٹاٹا اسٹیل سائٹ اور دریا سبرناریکھا کے درمیان شہر کا ایک حصہ ہے۔ تب یہ کالی ماٹی کے نام سے جانا جاتا تھا۔ لوہے ، ندی کے پانی اور ریت کی موجودگی کی وجہ سے جمسیٹ جی ٹاٹا نے وہاں ٹسکو (ٹاٹا آئرن اور اسٹیل کمپنی لمیٹڈ) قائم کرنے کا فیصلہ کیا۔ اب یہ کمپنی ٹاٹا اسٹیل لمیٹیڈ کے نام سے مشہور ہے۔

آج بھی ساکچی سے کالی ماٹی روڈ گزرتا ہے۔ برطانوی سامراج کے دور میں جمشید پور کو ہاوڑہ (کلکتہ) سے ملانے والی ریلوے لائن شروع کی گئی۔ جمشید پور؛ بھارت کی معدنیات سے مالا مال ریاست جھارکھنڈ میں ہے، جو پہلے بہار میں جنوبی بہار کی حیثیت سے تھا۔

چوں کہ ٹاٹا اسٹیل کا قیام عمل میں آیا تھا تو ساکچی علاقہ میں پہلی منصوبہ بند شہری آبادکاری کا آغاز ہوا اور اس میں تاجر (گجراتی ، پارسی ، پنجابی) ، خدمت گار (بہار ، بنگالی ، اوریاس ، تلگو ، تامل ، ملیالی) سبھی آباد ہوئے۔ بہت سارے لوگ جو اس وقت مغربی بنگال ، مشرقی بنگال (اب بنگلہ دیش) ، گجرات ، آسام ہجرت کرچکے ہیں اب وہ جمشید پور شہر کے مستقل باشندے ہیں اور ان کے آبائی گھر یا تو گم ہو گئے تھے یا مشرقی پاکستان (بنگلہ دیش) کی علیحدگی کے بعد فروخت ہو گئے۔ بنگالیوں ، پارسیوں ، اینگلو انڈین اور گجراتیوں کے پرانے مکان اب بھی ساکچی کے آم بگان، ہل کارٹ روڈ ، کالی ماٹی روڈ ، پینر روڈ ، ساکچی بازار علاقوں میں دیکھے جاسکتے ہیں۔ بسٹو پور میں بھی ایسے ہی کچھ مکانات موجود ہیں۔

حوالہ جات[ترمیم]

Midori Extension.svg یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کر کے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔