سربراہ پاک بحریہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
رئیسِ عملۂ پاک بحریہ
Chief of Naval Staff
CNS
Pakistan Navy Admiral.svg
رئیسِ عملۂ پاک بحریہ کا پرچم
موجودہ
ایڈمرل امجد خان نیازی

7 اکتوبر 2020ء سے
مخففCNS
رکنمشترکہ رؤسائے عملہ کمیٹی
جواب دہوزیر اعظم پاکستان
وزیر دفاع پاکستان
نامزد کُننِدہوزیر اعظم پاکستان
تقرر کُننِدہصدر پاکستان
مدت عہدہ3 سال
ایک بار قابل تجدید
پیشروپاک بحریہ کے سالار خاص (سی ان سی)
تشکیلمارچ 3، 1972؛ 49 سال قبل (1972-03-03)
اولین حاملایڈمرل حسن حفيظ احمد
جانشینOn basis of seniority, subjected to the decision of the Prime Minister of Pakistan.
غیر سرکاری نامنیول چیف
تنخواہپاکستان کے فوجی آفیسر کی تنخواہ گریڈ کے مطابق
ویب سائٹOfficial website

رئیسِ عملۂ پاک بحریہ چیف آف نیول اسٹاف (CNS) ، پاک بحریہ میں سینئر ترین تقرریوں میں سے ایک ہے جو چار ستارہ ایڈمرل ہوتا ہے جسے وزیر اعظم کے باہمی مشورے سے صدر منتخب کرتا ہے اور یہ رئیسِ عسکریہ پاکستان (CJCSC) کے ماتحت کام کرتا ہے۔ وزیر اعظم پاکستان اور اس کی سویلین حکومت کا ایک بنیادی فوجی مشیر بھی ہوتا ہے جو قوم کی سمندری سرحدوں کا دفاع کا ذمہ دار ہوتا ہے۔ یعنی یہ سویلین وزیر دفاع اور سیکرٹری دفاع کے ماتحت ہوتا ہے :86 [1] [2]

تاریخ[ترمیم]

چیف آف نیول اسٹاف کا عہدہ سن 1972 میں (سی این ایس) کے طور پاک بحریہ کے سابق سالارِ خاص یعنی کمانڈر انچیف (سی ان سی) کے عہدے سے تشکیل دیا گیا تھا۔ کیونکہ قائد عوام ذوالفقار علی بھٹوؒ نے پاک بحریہ کے سالارِ خاص کا قلمدان آئین مجریہ 1973ء کے تحت صدر پاکستان کو سونپ دیا تھا لہٰذا اب صدر یہ اختیار وزیر اعظم کے باہمی مشورے سے استعمال کرتا ہے۔ مارچ 1972ء کو ، پہلا "چیف آف نیول اسٹاف" (سی این ایس) نائب ایڈمرل حسن حفیظ احمد بحری عملے کا چیف بن گیا ، حالانکہ ان کا درجہ چار اسٹار رینک پر نہیں بڑھایا گیا تھا۔[3]

پاک بحریہ سالارانِ خاص کی فہرست[ترمیم]

رؤسائے عملۂ پاک بحریہ کی فہرست[ترمیم]

حوالاجات[ترمیم]

  1. Cheema، Pervaiz Iqbal (2002). "Evolution of the Navy". The Armed Forces of Pakistan (google books) (بزبان انگریزی). New york: NYU Press. صفحہ 225. ISBN 9780814716335. 
  2. Shabbir، Usman (2003). "Command & Structure". pakdef.org (بزبان انگریزی). PakDef Military Consortium. 26 ستمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 28 جولا‎ئی 2017. 
  3. https://www.paknavy.gov.pk/chron_history.html