سفرادیم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
سفاردی یہودی سے مغالطہ نہ کھائیں۔

عیسوی سال 70 کے مظالم کے بعد بہت بڑی تعداد میں یہودی عرب کے علاقے میں بھی آباد ہوئے۔ یہ تمام یہود سفرادیم کہلائے۔ عرب میں ان کی آبادیاں تبوک، تَیماء، یثرب (مدینہ)، وادی القریٰ، فَدَک اور خیبر میں واقع تھیں۔ ان علاقوں پر ان کا تسلط بھی تھا۔ ان کے قبائل بنی قریَظہ، بنی نَضِیر اور بنی قینقاع مدینہ میں آباد ہوئے اور نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی وہاں آمد کے وقت وہاں موجود تھے۔ عرب آکر انہوں نے عربی تہذیب کو اختیار کر لیا تھا مگر اپنی یہودی عصبیت نہیں بھولے تھے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]