سلطانہ صدیقی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
سلطانہ صدیقی
معلومات شخصیت
پیدائش 20ویں صدی  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کراچی  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مقام وفات پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ کمپنی منیجر  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحہ  ویکی ڈیٹا پر (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

سلطانہ صدیقی جنوبی ایشیا کی ایک تجربہ کار ٹیلی ویژن پروڈیوسر، جنہیں جنوبی ایشیا کی ایسی واحد خاتون ہونے کا اعزاز حاصل ہے جو کئی ٹیلی ویژن چینلز کی مالک ہیں اور نہایت کامیابی سے اس شعبے میں دن دگنی رات چوگنی ترقی کر رہی ہیں۔ سلطانہ صدیقی حیدرآباد، سندھ میں پیدا ہوئیں۔ سلطانہ کا تعلق سندھ کے ایک تعلیم یافتہ گھرانے سے ہے۔ بے اے آنرز کے بعد ہی ان کی شادی ہو گئی۔ کہا جاتا ہے کہ سلطانہ صدیقی نے عورت ہو کر عورت کو ایکسپو لائٹ کیا ہے۔ اِس سے پہلے عورتوں پر اِتنے بولڈ ڈرامے نہ تو لکھے گئے اور نہ ہی بنائے گئے کہ جن سے عورت کا تقدس مجروح ہوا ہے۔

تعلیم[ترمیم]

حیدرآباد سے ابتدائی تعلیم حاصل کی اور اس کے بعد سندھ یونیورسٹی سے انہوں نے علم نفسیات اور تقابلی مذاہب کے شعبے میں بی اے آنرز کیا۔

مشاغل اور پیشہ[ترمیم]

انہیں بچپن ہی سے کھیل کود، فنونِ لطیفہ و موسیقی اور تقریری مقابلوں میں حصہ لینے کا شوق تھا۔ انہوں نے اپنے شوق اور اپنے اندر پائی جانے والی صلاحیتوں کو کبھی دبایا نہیں، بلکہ انہیں اپنی تخلیقی قوت کے بھرپور اظہار کا ذریعہ بنایا۔ انیس سو تہتر، چوہتر سے انہوں نے پاکستان ٹیلی ویژن کی دنیا میں قدم رکھا ۔1981ء سے لے کر 2008ء تک انہیں 15 مختلف اعزازات سے نوازا گیا۔ سلطانہ صدیقی نے پاکستان ٹیلی وژن پر بحثیت پروڈیسر اور ڈائریکٹر کام کرنا اس وقت شروع کیا، جب میڈیا میں بہت کم خواتین دیکھی جاتی تھیں۔ ان کا غیر معمولی شہرت حاصل کرنے والا ڈرامہ ’ماروی‘ انکی پیشہ ورانہ زندگی کا ایک اہم موڑ ثابت ہوا، جس کے بعد سے انہوں نے بے شمار ڈرامے پیش کئے اور اُن کی ہدایات دیں۔ سلطانہ سماجی کاموں میں بھی پیش پیش نظر آتی ہیں۔ وہ ’فخر امداد فاؤنڈیشن ‘ نامی ایک این جی او کی ڈائریکٹر اور ایک مشہور پروڈکشن ہاؤس ’مومل‘ کی بانی بھی ہیں۔سندھ گریجوایٹس ایسوسی ایشن وومن ونگ، میڈیا وومن جرنلسٹس اینڈ پبلشرز آرگنائزیشن کی سربراہ ہیں۔ سندھ مدرستہ الاسلام کے بورڈ آف گورنر کی رکن ہیں۔

ایوارڈز[ترمیم]

صدارتی ایوارڈ برائے حسنِ کارکردگی (2007ء۔2008ء) سمیت مزید چھ مختلف ایوارڈز حاصل کرچکی ہیں۔سی سی او سمٹ ایشیا 2013ء کی جانب سے حال ہی میں منعقدہ ایک اجلاس میں ہم نیٹ ورک لمیٹڈ کی صدر سلطانہ صدیقی کو اُن کی پیشہ ورانہ خدمات کے اعتراف میں ٹرافی پیش کی گئی۔اس کے ساتھ ہی انہیں ایک کتاب ”100بزنس لیڈرز آف پاکستان“ کا2013کا ایڈیشن بھی پیش کیا گیا جس میں ایسے 100 نمایاں صنعت کاروں کے پروفائل ہیں جنہوں نے پاکستانی صنعت کی ترقی میں اپنا کردار ادا کیا۔ اس کتاب میں سلطانہ صدیقی کا پروفائل بھی شامل کیا گیا ہے۔یادش بخیر سلطانہ صدیقی کو یہ اہم ایوارڈ پہلی مرتبہ نہیں دیا گیاہے قبل ازیں انہیں پرائیڈ آف پرفارمنس بھی دیا جاچکا ہے۔یہ تقریب منیجر ٹوڈے اور سی ای او کلب پاکستان کی جانب سے منعقد کی گئی تھی۔

حوالہ جات[ترمیم]

https://dailypakistan.com.pk/15-Dec-2013/65478

https://www.dw.com/ur/%D8%B3%D9%84%D8%B7%D8%A7%D9%86%DB%81-%D8%B5%D8%AF%DB%8C%D9%82%DB%8C-%D9%BE%D8%A7%DA%A9%D8%B3%D8%AA%D8%A7%D9%86%DB%8C-%D9%B9%DB%8C-%D9%88%DB%8C-%D8%A7%D9%86%DA%88%D8%B3%D9%B9%D8%B1%DB%8C-%DA%A9%D8%A7-%D8%B9%D8%B8%DB%8C%D9%85-%D9%86%D8%A7%D9%85/a-4457511-0