سلمى بنت صخر بن عامر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
سلمى بنت صخر بن عامر
معلومات شخصیت
شوہر عثمان بن عامر  ویکی ڈیٹا پر شریک حیات (P26) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد ابو بکر صدیق  ویکی ڈیٹا پر اولاد (P40) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

سلمى بنت صخر (عربی: سلمى بنت صخر) خلیفہ اول ابو بکر کی والدہ تھیں۔

سوانح حیات [ترمیم]

سلمی صخر بن عامر کی بیٹی تھیں جن کا تعلق قریش کے قبیلہ تیم تھا اور وہ اپنے کزن عثمان بن عامر (ابو قحافہ) کی زوجہ تھیں۔ ان کو ام الخیر (خیر کی ماں) بھی کہا جاتا ہے۔[1]

سلمی اور ابو قحافہ سے کئی بیٹے پیدا ہوئے لیکن مدت رضاعت ہی میں وفات پا گئے۔ جب ابو بكر 573ء میں پیدا ہوئے تو سلمی ان کو کعبہ لے گئی اور دعا کی: (اللهم إن هذا عتيق من الموت فهبه لي) یعنی "الہی، یہ بچہ موت سے بچ گیا اب اسے مجھے عطا کر دے" چنانچہ ابو بکر کو اس وجہ سے بھی العتیق ("آزاد") کہا جاتا ہے، جبکہ ان کے بعد زندہ بچ جانے والے بھائیوں کے نام معتق اور معیتق تھے۔[2]

سلمی نے ابتدا ہی میں اسلام قبول کر لیا تھا۔ وہ ان لوگوں میں شامل تھی جو 614ء کے بعد لیکن ہجرت سے قبل "بیت ارقم آئے تھے"[3] تاکہ رسول محمد سے ملاقات کر سکیں۔[4]

انہوں نے ابو بکر کے دور خلافت 632ء اور 634ء کے دوران وفات پائی۔[5]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Jalal ad-Din al-Suyuti۔ Tarikh al-Khulafa(The History of the Caliphs)۔ Calcutta: The Asiatic Society۔ صفحہ 29۔
  2. Jalal ad-Din al-Suyuti۔ Tarikh al-Khulafa(The History of the Caliphs)۔ Calcutta: The Asiatic Society۔ صفحہ 27۔
  3. Ibn Hajar۔ Al-Isaba, vol. 8۔
  4. Muhammad ibn Ishaq۔ Sirat Rasul Allah (The Life of Muhammad)۔ Oxford University Press۔ صفحہ 117۔
  5. Ibn Hajar۔ Al-Isaba, vol. 4۔