سلی (فلم)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
سلی (فلم)
Sully xxlg.jpeg
Theatrical release poster
ہدایت کار کلینٹ ایسٹووڈ
پروڈیوسر
تحریر Todd Komarnicki
ماخوذ از Highest Duty: My Search for What Really Matters 
از Chesley Sullenberger
ستارے
موسیقی
سنیماگرافی Tom Stern
ایڈیٹر Blu Murray
پروڈکشن
کمپنی
تقسیم کار وارنر بردرز
تاریخ اشاعت
  • 2 ستمبر 2016ء (2016ء-09-02) (Telluride)
  • 9 ستمبر 2016ء (2016ء-09-09) (United States)
دورانیہ
96 minutes[1][2]
ملک United States
زبان انگریزی
بجٹ $60 million[3][4]
باکس آفس $200.7 million[5]

سلی (فلم) 15 جنوری 2009 کی یخ بستہ دوپہر کو ہونے والے ایک واقعہ سے متعلق ہے جب یو ایس ائیر ویز کی پرواز 1549 کے انجن سے پرندوں کا ایک جھنڈ ٹکرا جاتا ہے ا جس کے نتیجہ میں جہاز کے دونوں انجن کام چھوڑ دیتے ہیں۔ اس پرواز پر عملے کے علاوہ 155 مسافر سوار تھے۔ جہاز کے کپتان سلن برگر سے کہا گیا کہ وہ نزدیک ترین دو میں سے کسی ایک ائرپورٹ پر لینڈنگ کر سکتا ہے لیکن کپتان نے جہاز کی صورت حال دیکھتے ہوئے اسے ناممکن خیال کیا اور جہاز کو نیویارک کے دریائے ہڈسن میں اتارنے کا فیصلہ کر لیا۔ جہاز نہ صرف بخیریت ہڈسن کے برفیلے پانیوں پر اتر گیا بلکہ اس عمل میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔ سب 155 مسافر اور عملے کے تمام افراد بحفاظت وہاں سے نکال لیے گئے۔ ہر طرف اس واقعہ کی دھوم مچ گئی اور کپتان کی بے انتہا تحسین کی گئی۔ کپتان سلن برگر، "سلی"، کو ایک عوامی ہیرو کے ملک گیر حیثیت حاصل ہو گئی۔ تاہم نیشنل ٹرانسپورٹ و سیفٹی بورڈ اس واقعہ اور اس کی جزئیات کے متعلق مزید اطمینان کے لیے انکوائری کا حکم دیتا ہے۔ وہ یہ دیکھنا چاہتے ہیں کہ دریا میں اترنے کا فیصلہ واقعی آخری حل ہی تھا یا پائلٹ کی غلطی یا غلط اندازے سے یہ صورت حال پیدا ہوئی۔ ماہرین ہوا بازی، کمپیوٹر ڈیٹا اور فلائٹ سیمولیشن ... غرض تمام وسائل بروئے کار لائے جاتے ہیں تاکہ اس بات کا تعین ہو سکے۔ کپتان سے تیکھے سوال پوچھے جاتے ہیں ... کبھی ایسا لگنے لگتا ہے کہ "ہیرو" کہیں نااہلی کا مرتکب ہی قرار نہ پا جائے۔ تحقیقات پورے شد ومد سے جاری رہتی ہیں، بہت سے صبر آزما مراحل سے گزرنے کے بعد بالآخر پرواز کے ریکارڈ میں 35 سیکنڈ کا ایک ایسا وقفہ سامنے آتا ہے جو یہ بتاتا ہے کہ کمپیوٹر سیمولیٹر کی آئیڈیل اور دباؤ سے پاک ماحول میں بھی دونوں مجوزہ ائرپورٹس میں سے کسی ایک پر بھی پہنچنا ممکن نہ تھا۔ تب وہ تحقیقات ختم کی جاتی ہیں۔ تحقیقات کا بنیادی مقصد صرف یہ تھا کہ ہڈسن پر ہر لینڈنگ تو اتنی خوش قسمت نہیں ہو سکتی۔... خوش قسمتی کی بجائے "محفوظ" کا راستہ چننا دراصل درست فیصلہ ہونا چاہیے۔۔ ....یہ بات صڄح ہے

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Sully (12A)"۔ British Board of Film Classification۔ ستمبر 5, 2016۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ ستمبر 5, 2016۔
  2. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ IMAX نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔
  3. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ DDD نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔
  4. Ryan Faughnder (ستمبر 6, 2016)۔ "'Sully' and 'When the Bough Breaks' to choke 'Don't Breathe' at the box office"۔ Los Angeles Times۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ ستمبر 8, 2016۔
  5. "Sully (2016)"۔ Box Office Mojo۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ دسمبر 5, 2016۔

بیرونی روابط[ترمیم]

سانچہ:Clint Eastwood