مندرجات کا رخ کریں

سمیع اللہ خان (فیلڈ ہاکی)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
سمیع اللہ خان (فیلڈ ہاکی)
معلومات شخصیت
پیدائش 6 ستمبر 1951ء (73 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بہاولپور   ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت پاکستان   ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
قد
وزن
عملی زندگی
مادر علمی اسلامیہ کالج لاہور   ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ہاکی کھلاڑی   ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کھیل فیلڈ ہاکی   ویکی ڈیٹا پر (P641) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
میڈل ریکارڈ
مردوں کی فیلڈ ہاکی
نمائندگی  پاکستان
اولمپکس
Bronze medal – third place 1976ء گرمائی اولمپکس ٹیم مقابلہ
ایشیائی کھیل
Gold medal – first place ایشیائی کھیل 1974 ٹیم مقابلہ
Gold medal – first place ایشیائی کھیل 1978ء ٹیم مقابلہ
Gold medal – first place ایشیائی کھیل 1982ء ٹیم مقابلہ

سمیع اللہ خان (انگریزی: Samiullah Khan) ایک پاکستانی بین الاقوامی فیلڈ ہاکی کھلاڑی ہیں۔

پیدائش

[ترمیم]

6 ستمبر 1951ء کو بہاولپور میں پیدا ہوئے

کیریئر

[ترمیم]

وہ 1970ء اور 1980ء کی دہائیوں میں اپنے ملک کے لیے بائیں بازو کے کھلاڑی کے طور پر کھیلے۔

انھوں نے مانٹریال میں 1976ء کے سمر اولمپکس میں پاکستان کے کانسی کا تمغا جیتنے میں اہم کردار ادا کیا اور 1978ء میں بنکاک اور 1982ء میں بھارت میں ایشین گیمز میں سونے کا تمغا جیتا ۔ وہ پاکستان ہاکی ٹیم کے نائب کپتان تھے جس نے ممبئی، بھارت میں ورلڈ کپ جیتا تھا۔ اور اسی سال ہندوستان کو 7-1 سے شکست دے کر دہلی میں ایشین گیمز جیتنے والی ٹیم کے کپتان تھے۔ زبردست رفتار کے ساتھ ان کا شاندار بال کنٹرول ایک نایاب اور عمدہ امتزاج تھا، ،ان کی رفتار کے باعث انھیں "فلائنگ ہارس" کا خطاب دیا گیا تھا۔

ان کے بھائی کلیم اللہ خان (فیلڈ ہاکی) بھی پاکستان کی قومی فیلڈ ہاکی ٹیم کے لیے کھیلے۔ سمیع اللہ نے 1982ء میں انٹرنیشنل ہاکی سے ریٹائرمنٹ لے لی جب کہ وہ پاکستانی ٹیم کے کپتان تھے۔ سمیع اللہ خان نے بعد میں پاکستان ہاکی ٹیم کو سنبھالا، 2005 میں چھوڑ دیا ۔

سمیع اللہ مطیع اللہ خان کے بھتیجے ہیں ، جو 1960 کے روم اولمپکس میں گولڈ جیتنے والی پاکستان ہاکی ٹیم کے رکن تھے،

اعزازات

[ترمیم]

حوالہ جات

[ترمیم]