سینٹرل ریزرو پولیس فورس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
سینٹرل ریزرو پولیس فورس
Central Reserve Police Force emblem.svg
سینٹرل ریزرو پولیس فورس کا نشان
مخفف CRPF
شعار خدمت و فرمانبرداری
ایجنسی کی معلومات
تشکیل 27 جولائی، 1939
ملازمین 313,678 متحرک اہلکار[1]
سالانہ بجٹ 20268.03 کروڑ (امریکی $3.2 بلین) (2018–19 تخمینہ)[2]
عدالتی ڈھانچا
وفاقی ادارہ IN
کارروائیوں کا دائرہ اختیار IN
مجلس منتظمہ وزارت داخلی امور، حکومت ہند
تشکیلی قانون
  • سینٹرل ریزرو پولیس فورس ایکٹ، 1949
عمومی نوعیتFederal law enforcement
صدر دفاتر نئی دہلی، بھارت

ذمہ دار وزیر
ایجنسی ایگزیکٹو
اصل ایجنسی وزارت داخلی امور، حکومت ہند
ذیلی ایجنسی
ویب سائٹ
crpf.gov.in

سنٹرل ریزرو پولیس فورس (سابق: تاج برطانیہ کی نمائندہ افواج) مرکزی مسلح پولیس افواج کی سب سے بڑی ٹکڑی ہے جو وزارت داخلی امور، حکومت ہند کے زیر نگرانی کام کرتی ہے۔ سی آر پی ایف کا بنیادی کام ریاست اور یونین علاقہ میں لا اینڈ آرڈر کو کو برقرار رکھنا اور بغاوت کو کچلنا ہے۔ سی آر پی ایف کی بنیاد تاج برطانیہ کی نمائندہ افواج کے طور پر 27 جولائی 1939ء میں رکھی گئی تھی۔ آزادی ہند کے بعد اس کا نام بدل کر سنٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) کر دیا گیا۔ ایسا سی آر پی ایف ایکٹ (29د سمبر 1949ء) کے تحت کیا گیا تھا۔ لا اینڈ آرڈر کے علاوہ سی ای پی ایف بغاوت کو کچلنے میں مہارت رکھتی ہے۔ عام انتخابات میں سی آر پی ایف کو وسیع پیمانے پر تعینات کیا جاتا ہے۔ بالخصوص جموں و کشمیر، بہار (بھارت) میں انتخابات کے دوران میں جب کشیدگی اور تنازعات کا خدشہ رہتا ہے اور حفاظتی نظم و نسق سی آر پی ایف کے ذمہ ہوتا ہے۔ سی آر پی ایف ملک کی سب سے بڑی نیم فوجی پولیس ہے۔ اس کے جوانوں کی کل تعداد 313,678 نفر پر مشتمل ہے۔[3]

سربراہان کی فہرست[ترمیم]

شمار نام از تا
1 وی کے کانیٹکا 3 اگست 1968 15 ستمبر 1969
2 امداد علی 16 ستمبر 1969 28 فروری 1973
3 بی بی مشرا 1 مارچ 1973 30 ستمبر 1974
4 این ایس سیکسینا 30 ستمبر 1974 31 مئی 1977
5 ایس ایم گھوش 1 جون 1977 31 جولائی 1978
6 آر سی گوپال 31 جولائی 1978 10 اگست 1979
7 پی آر راجپال 10 اگست 1979 30 مارچ 1980
8 بربال ناتھ 13 مئی 1980 3 ستمبر 1980
9 آر این شیوپورے 3 ستمبر 1980 31 دسمبر 1981
10 ایس ڈی چودھری 27 جنوری 1982 30 اپریل 1983
11 شیوال سوارپ 30 جولائی 1983 7 مئی 1985
12 جے ایف ریبیرو 4 جون 1985 8 جولائی 1985
13 ٹی جی ایئر جولائی-1985 نومبر-1985
14 ایس ڈی پانڈے 1 نومبر 1985 31 مارچ 1988
15 پی جی ہرلانکر 1 اپریل 1988 30 ستمبر 1990
16 کنور پال سنگھ گل 19 دسمبر 1990 8 نومبر 1991
17 ایس سبھرامنین 9 نومبر 1991 31 جنوری 1992
18 ڈی پی این سنگھ 1 فروری 1992 30 نومبر 1993
19 ایس وی ایم تریپاٹھی 1 دسمبر 1993 30 جون 1996
20 ایم بی خوشحال 1 اکتوبر 1996 12 نومبر 1997
21 ایم این سبھروال 2 دسمبر 1997 31 جولائی 2000
22 تریناتھ مشرا 31 جولائی-2000 31 دسمبر 2002
23 ایس سی چوبے 31 دسمبر 2002 31 جنوری 2004
24 جے کے سنہا 31 جنوری 2004 28 فروری 2007
25 ایس آئی ایس احمد 1 مارچ 2007 31 مارچ 2008
26 وی کے جوشی 31 مارچ 2008 28 فروری 2009
27 اے ایس گل 28 فروری 2009 31 جنوری 2010
28 وکرم شریواستو 31 جنوری 2010 6 اکتوبر 2010
29 کے وجے کمار 7 اکتوبر 2010 30 ستمبر 2012
30 پرنائے سہائے 1 اکتوبر 2012 31 جولائی 2013
31 دلپ تریویدی 17 اگست 2013 30 نومبر 2014
32 پرکاش مشرا 1 دسمبر 2014 29 فروری 2016
33 کے درگا پرساد 1 مارچ 2016 28 فروری 2017
34 راجیو رائے بھٹناگر 27 اپریل 2017 تاحال

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Archived copy" (پی‌ڈی‌ایف)۔ مورخہ 8 اگست 2017 کو اصل (پی‌ڈی‌ایف) سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 اگست 2017۔
  2. "MINISTRY OF HOME AFFAIRS DEMAND NO. 48 Police" (پی‌ڈی‌ایف)۔ indiabudget.gov.in۔
  3. "MHA Annual Report 2016-2017" (پی‌ڈی‌ایف)۔ مورخہ 8 اگست 2017 کو اصل (پی‌ڈی‌ایف) سے آرکائیو شدہ۔