سنڈریلا احساس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
کولیٹ ڈولنگ 1989ء میں

سنڈریلا احساس (انگریزی: Cinderella complex) کو سب سے پہلے کولیٹ ڈولنگ نے متعارف کیا تھا[1]، جب اس نے خواتین کی آزادی سے خوف پر لکھا – ایک لا شعوری میں آنے والا جذبہ کہ ان کی کوئی اور دیکھ ریکھ کرے۔[2] اس تصور کو مزید تقویت اس وقت ملتی ہے جب یہ خواتین بڑی عمر کو پہنچتی ہیں۔

یہ نام بچوں کی کہانی کے فسانوی کردار سنڈریلا سے آتا ہے۔ یہ اس نسوانیت کے تصور پر مبنی ہے جو اس کہانی میں دکھایا گیا ہے، جہاں ایک عورت خوبصورت ہے، قبول صورت، نرم گفتار، مدد کے لیے تیار، آزاد اور سماج کی دوسری خواتین کے ذریعے بدنام کی گئی ہے۔ مگر وہ پھر بھی اپنی صورت حال کو اپنے عمل سے بدلنے کی قابل ہے اور اسے کسی باہری طاقت کی مدد درکار ہوتی ہے، جو عمومًا ایک مرد (یعنی شہزادہ) ہوتا ہے۔

تنقید[ترمیم]

اس تصور کو بطور خاص اس وقت اہمیت دی جاتی ہے جب اس سوال کا جواب دیا جاتا ہے کہ کیوں خواتین غیر کار گرد رشتوں میں کیوں رہتی ہیں۔[3]

دفاع[ترمیم]

کچھ اور لوگ رونالڈ فیربیرن کے باشعور انحصار کے تصور کا حوالہ دیتے ہیں،[4] اور ثقافتی عدم وابستگی کو چیلنج کرتے ہیں، وہ اکیلے انحصار کو پیش کرتے ہیں۔ [5] کیرل گیلیگان کے پیش کردہ انٹرنیٹ کے روابط کی چیمپئن شب کو نسوانیت کا مقصد بتایا جاتا ہے [4] جو اس بات کا متبادل ہے کہ اکیلے مرد ہی کو ہیرو کے طور پر پیش کیا جائے۔ اس کا تذکرہ اس لیے بھی کیا جاتا ہے تاکہ سنڈریلا احساس کے اس رجحان کا دفاع کیا جائے تاکہ جو خود کو کسی جوڑی دار / آباد رشتے کی صورت میں تعریف پیش کی جا سکے۔ [6]

عوامی ثقافت[ترمیم]

ٹوٹسی فلم میں ٹیری گیر ڈسٹین ہوفمین سے اپنا رشتہ ٹوٹتے وقت کہتی ہے، "میں سنڈریلا ااحساس کو پڑھ چکی ہوں، میں خود کے اوج لذت جنسی کی ذمے دار ہوں! مجھے پروا نہیں، مجھے صرف 'جھوٹی بات کہی جانا' پسند نہیں ہے!" [7]

ٹی وی سیریز پولیس اسکواڈ! کے چوتھے ایپی سوڈ میں جوئس بردرس کو جوتے پالش کے ایک آدمی سے سنڈریلا احساس کے بارے میں مشورہ ملتا ہے: "انہیں کہ دو کہ وہ اپنی لاشعوری کے جذبات کو ٹٹولیں اور اپنے ابھر جانے کو اپنے ساتھی کے ساتھ بانٹیں۔"

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Colette Dowling (1981). The Cinderella Complex: Women's Hidden Fear of Independence. Simon & Schuster. ISBN 0-671-73334-6. 
  2. Weaver, R. (2017). Psychology Behind the Cinderella Complex. Retrieved January 27, 2017, from http://www.empowher.com/mental-health/content/psychology-behind-cinderella-complex?page=0,1
  3. THE CINDERELLA SYNDROME. (1981, March 21). Retrieved جنوری 27, 2017, from https://www.nytimes.com/1981/03/22/magazine/the-cinderella-syndrome.html?pagewanted=all
  4. ^ ا ب جوڈیتھ ویورسٹ (2010) Necessary Losses. Simon & Schuster. آئی ایس بی این 1439134863. p. 120
  5. Adam Phillips (1994) On Flirtation. Harvard University Press. آئی ایس بی این 0674634403. p. 53
  6. R. J. Corsini (1999) A Dictionary of Psychology. Psychology Press. آئی ایس بی این 158391028X. p. 166
  7. سڈنی پولک (Director) (دسمبر 1, 1982). Tootsie (Motion picture). Manhattan, NY: Warner Bros, Columbia Pictures.  Check date values in: |date= (معاونت)