سیاسی معیشت

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
ضد ابہام صفحہ کے لیے معاونت معاشی پالیسی سے مغالطہ نہ کھائیں۔

سیاسی معیشت ایک اصطلاح ہے جو تصنع اور تجارت کے پڑھنے، ان کے قانون سے رشتوں کو سمجمھنے، کسٹم، حکومت اور معیشت، قومی آمدنی اور دولت کا مطالعہ کرنے کے لیے استعمال کی جاتی ہے۔ سیاسی معیشت اخلاقی فلسفہ کی اُپج ہے۔ اس کی ترقی 18 ویں صدی میں مملکتوں کی معیشتوں کے مطالعے کے لیے یا حکومت سازیوں میں ہوتی ہے، اس لیے اصطلاح سیاسی معیشت کے طور پر موسوم ہے۔

مثال[ترمیم]

بھارت کی ریاست گجرات کے لوگوں نے مشرقی افریقہ کی سیاسی معیشت میں اہم تعاون دیا ہے۔ افرادی قوت سے قطع نظر ان لوگوں کئی مالی اداروں اور کاروباروں کو سنبھالا جس سے وہ وہاں سیاسی طور بااثر ہو گئے اور پالیسی سازی کا بھی حصہ بن گئے۔ گجرات کے سیاسی وفود کینیا اور یوگنڈا کے دورے کیے جہاں کی حکومتوں سے ان کے خاص روابط قائم ہوئے۔ [1]

حوالہ جات[ترمیم]