سید احسان اللہ شاہ راشدی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

سید رشد اللہ شاہ راشدی رحمہ اللہ کی وفات کے بعد آپ کے فرزند سید فضل اللہ شاہ عرف پیرسید احسان اللہ شاہ راشدی پیر جھنڈہ پنجم کی حیثیت سے اپنے خاندانی سجادگی کی مسند عالیہ پر مقرر کیا گیا اور پیر "سائیں سنت" والے کے نام سے معروف ہوئے۔

پیدائش[ترمیم]

آپ 27 رجب 1313ھ میں پیدا ہوئے۔ موصوف پیرسید رشد اللہ شاہ راشدی کے چھوٹے صاحبزادے تھے۔

نسب نامہ[ترمیم]

سید احسان اللہ شاہ راشدی بن سید رشد اللہ شاہ راشدی بن سید رشید الدین شاہ راشدی بن سید محمد یاسین شاہ راشدی بن سید محمد راشد شاہ بن سید محمد بقا شاہ رحمۃ اللہ علیھم اور پھر سیدنا حسین ابن علی رضی اللہ عنھما تک۔ آپ کے ناناسید فضل اللہ شاہ راشدی رحمۃ اللہ علیہ تھے جن کا سلسلہ نسب سید محمد یاسین شاہ بن سید محمد راشد شاہ تک جاملتا ہے۔ اس طرح آپ دودھیالی و ننھیالی "راشدی حسینی سید" ہیں۔

تعلیم[ترمیم]

آپ نے دینی تعلیم اپنے آبائی مدرسہ دارالارشادسے حاصل کی۔ آپ کے اساتذہ میں

کے نام ملتے ہیں۔

آپ فن اسماء الرجال کے بھی بہت بڑے عالم تھے۔ مولانا ثناءاللہ امرتسری نے آپ کے بارہ میں فرمایاتھا کہ

آج اگر کوئی اسماء الرجال کا امام ہے تو پیر احسان اللہ شاہ راشدی ہے[1]

اسی طرح سید سلیمان ندوی موصوف کے متعلق لکھتے ہیں کہ:

مرحوم حدیث ورجال کے بڑ ےعالم تھے ….. ایک خانقاہ کے سجادہ نشین تھے اور طریق سلف کے متبع اور علم وعمل دونوں میں ممتاز تھے[2]۔

وفات[ترمیم]

آپ صرف 45برس کی عمر میں15 شعبان 1358ھ مطابق13 اکتوبر1938ء کو فوت ہوئے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ماہنامہ شریعت سکھر سوانح نمبر ، صفحہ : 414)
  2. یادرفتگاں ، صفحہ : 186
Midori Extension.svg یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کر کے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔