سید محمد چنن شاہ نوری

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

( 1789ء یا 1790ء ۔ 1889ء یا 1890ء )

خواجۂ خواجگان، شمس الہند حضرت پیر سید محمد چنن شاہ نوری دائم الحضوری رحمۃ اللہ علیہ کا دور حیات وہی زمانہ ہے جب مغلیہ سلطنت کے اقتدار کا سورج غروب ہو چکاتھا۔ آپ اٹھارھویں صدی عیسوی کے اختتام پر ( 1789ء تا 1790ء ) امت مسلمہ کی رشد و ہدایت کیلئے اس کائنات میں تشریف لائے۔ یوں تو آپ سے پیشتر بھی اشراف سادات کے اس گھرانے میں نامور اولیاء کاملین کا وجود موجود رہا مگر مشائخ آلو مہار شریف کو جس وجود سے شہرت ملی وہ حضرت موصوف علیہ الرحمہ کی ذات ستودہ صفات ہی ہے۔ آپ بچپن ہی سے بلا کے ذہین، نہایت فطین، خاموش طبع اور تنہائی پسند تھے۔ ستارۂ بلندی آپ کی لوح پیشانی پر بچپن ہی سے ہویداتھا۔ آپ علوم عقلیہ و نقلیہ میں مہارت تامہ کے بعد تلاش مرشد میں جو نکلے تو جہاں کسی اہل دل کا نام سنتے تو دیوانہ وار وہاں حاضر ہوتے۔ کافی تلاش کے بعد آپ نے پیر کامل، قدوۃ الکاملین خواجۂ خواجگاں حضرت محمد ہادی نامدار شاہ رحمۃ اللہ علیہ خلیفہ مجاز آستانہ عالیہ چورہ شریف کے دست اقدس پر بیعت کی اور تھوڑے ہی عرصے میں قرب ولایت کی منزلوں پر فائز المرام ہوکر خلق خدا کی ہدایت پر مامور ہو گئے۔ آپ نے اپنے انفاس قدسیہ سے ہزاروں دلوں کوخدا آشنا بنا دیا اوراس دار فنا میں تقریباً ایک صدی زندگی گذار کے اور لاکھوں دلوں کی دھڑکن بن کر 1889ء یا 1890ء میں دار بقا کی طرف رخصت ہوگئے۔

بیرونی روابط[ترمیم]

[1] سالانہ عرس پاک شمس الہند حضرت خواجہ سید چنن شاہ نوری دائم الحضوری از علامہ محمد یاسین مجددی