شرقپور شریف

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
شرقپُور
شہر
شرقپور شریف
ملکپاکستان
پاکستان کی انتظامی تقسیمپنجاب، پاکستان
پاکستان کی انتظامی تقسیمضلع شیخوپورہ
بلندی196 میل (643 فٹ)
منطقۂ وقتپاکستان کا معیاری وقت (UTC+5)
Calling code0562
ویب سائٹwww.Sharaqpur.com

شرقپور شریف (انگریزی: Sharaqpur) پاکستان کا ایک رہائشی علاقہ شرقپور ایک تحصیل سطح کا قصبہ ہے جو ضلع شیخوپورہ صوبہ پنجاب پاکستان میں واقع ہے۔[1]

وجہ شہرت[ترمیم]

شرقپور ایک تحصیل سطح کا قصبہ ہے جو ضلع شیخوپورہ صوبہ پنجاب پاکستان میں واقع ہے۔ یہ قصبہ اپنے اولیا اکرام اور صوفی بزرگوں کے مزاروں کی وجہ سے جانا جاتا ہے، خاص طور پر مشہور ولی اللہ حضرت میاں شیر محمد المعروف شیرربانی رحمتہ اللہ علیہ کی وجہ سے۔ شرقپور شریف کی سر زمین نے بے شمار ایسے اولیا کرام، صوفیا کرام، دانشوروں، صحافیوں، شاعروں، سیاست دانوں، علما کرام اور مشائخ کرام کو جنم دیا ہے، جن کی ادبی سربلندی اور علمی سرفرازیوں کے چرچے ان کی جنم نگری کی محدود فضاوں سے ابھر کر لامحدود دنیائے علم وادب کا حصہ ہی نہیں بلکہ علم اودب کا افتخار اور تہذیب کا نگار بن چکے ہیں۔ شرقپور کی سرزمین پر فطرت اپنے پورے حسن کے ساتھ مسکراتی نظر آتی ہے۔ فضاوں میں موجود محبت کی خوشبو دامن دل کھینچتی ہے اور امن وسکون نے یہاں کا معاشرہ اپنی آغوش میں لے رکھا ہے۔ یہ شہر اولیا ہے، جلوت کدہ اصفیاہ ہے۔ جس کا گوشہ گوشہ فیضان سے معمور اور بقعہ نور ہے۔ عظمت اس کے ماتھے کا سویرا ہے تو ماحول کو روحانی تجلیات نے گھیرا ہے۔ یہ دھرتی تہذیب کے دامن میں ہے۔ یہ زندہ دلوں کا مسکن اور گہوارہ علم وفن اور روحانیت کا مدفن ہے۔

شرقپور کی بنیاد مغل بادشاہ شاہ جہاں (جنوری 1592 تا 22 جنوری 1666 عیسوی) کے آخری دور میں رکھی گئی تھی۔ 1904 عیسوی میں شرقپور ضلع لاہور کی تحصیل تھا، 1911/12 عیسوی میں شرقپور ضلع گجرانولا کے تحت تھا۔ اس کے بعد یہ سب تحصیل اور اب ضلع شیخوپورہ کی تحصیل بن گیا ہے۔۔ پاکستان کی تحریک آزادی میں شرقپور کے نوجوانوں نے ایک یادگار اور دلیرانا کردار ادا کیا۔ شرقپور کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ برطانوی حکومت کے خلاف سول نافرمانی کی تحریک میں سب سے پہلے نوجوانوں کا جو اسکواڈ پکڑا گیا تھا ان کا تعلق شرقپور سے تھا۔ شرقپور کو اپنے ایسے سپوتوں پر ہمیشہ ناز رہے گا۔

محل وقوع[ترمیم]

یہ لاہور سے جڑانوالہ روڑ پر 32 کلو میڑ کے فاصلے پر واقع ہے۔ اور یہ 31.4657877 عرض بلد اور 74.1004658 طول بلد پر واقع ہے۔ شرقپور کا ٹوٹل رقبہ تقریبا 4 مربع کلو میڑ ہے۔

تاریخی حیثیت[ترمیم]

شرقپور کی بنیاد مغل بادشاہ شاہجہاں (جنوری-1592، 22 جنوری 1666 عیسوی) کے آخری دور میں رکھی گئی تھی۔ 1904ء میں شرقپور ضلع لاہور کی تحصیل تھا، 1911-12 عیسوی میں شرقپور ضلع گوجرانولہ کے تحت تھا۔ اس کے بعد یہ سب تحصیل اور اب ضلع شیخوپورہ کی تحصیل بن گیا ہے۔ پاکستان کی تحریک آزادی میں شرقپور کے نوجوانوں نے ایک یادگار اور دلیرانہ کردار ادا کیا۔ شرقپور کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ برطانوی حکومت کے خلاف سول نافرمانی کی تحریک میں سب سے پہلے نوجوانوں کا جو اسکواڈ پکڑا گیا تھا ان کا تعلق شرقپور سے تھا۔[2]

شرقپور کی مکمل تاریخ جاننے کے لیے کہ یہ کب اور کیسے وجود میں آیا اور اس کا نام کیسے پڑا۔ آپ وزٹ کرسکتے ہیں شرقپور کی تاریخ کے سیکشن پر جو شرقپور ڈاٹ کام پر موجود ہے۔

http://sharaqpur.com/History.aspx

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. انگریزی ویکیپیڈیا کے مشارکین. "Sharaqpur". 
  2. http://new.netct.in/more/643317_1/Welcome-to-Sharaqpur-Sharif.html