شعلے

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
شعلے
Description of l'image Sholayposter2.jpg.
ہدایت کار رمیش سپی
تخلیق کار جی پی سپی
تحریر جاوید اختر
سلیم خان
ستارے دھرمیندر
سنجیو کمار
ہیما مالنی
امیتابھ بچن
جیا بچن
امجد خان
موسیقی راہول دیو برمن
عکسبندی دوارکا دویچا
ادارت ایم ایس شندے
‎تقسیم کاری سپی فلمز
نمائش 15 اگست 1975ء
دورانیہ 199 دقیقہ
زبان ہندی
میزانیہ 2 کروڑ روپے [1]
باکس آفس 768.81 کروڑ روپے

مزید تفصیلات کے لیے دیکھیے کوائف نامہ اور تقسیم کاری

شعلے بھارت کی ایک ہندی فلم ہے جس کے لیے ہدایات رمیش سپی نے دی تھیں۔ یہ بھارت کی فلمی صنعت بالی ووڈ کی تاریخ کی سب سے کامیاب ہندی فلم ہے۔ 15 اگست 1975ء کو جاری ہونے والی اس فلم میں دھرمیندر، سنجیو کمار، امیتابھ بچن، ہیما مالنی، جیا بچن اور امجد خان نے اپنی فنکاری کے جوہر دکھائے۔ ریاست کرناٹک کے قصبہ رام نگر کے پہاڑی علاقے میں فلمائی گئی یہ فلم دراصل دو چھوٹے موٹے مجرموں کی کہانی ہے جن کی خدمات ایک ڈاکو گبر سنگھ کی گرفتاری کے لیے حاصل کی گئی تھیں۔

یہ بھارتی فلمی تاریخ میں سب سے زیادہ منافع بخش فلم ہے۔ اس نے 7 ارب 68 کروڑ 81 لاکھ روپے (160 ملین امریکی ڈالرز) کی آمدنی حاصل کی۔ فلم ممبئی کے ایک سینما گھر "منروا" میں مسلسل 286 ہفتوں (پانچ سے زائد سال) تک نمائش کے لیے چلتی رہی۔ شعلے اب بھی بھارت بھر میں 60 سینما گھروں میں 50 ہفتے، جسے فلمی اصطلاح میں گولڈن جوبلی کہا جاتا ہے، تک مسلسل نمائش پر لگی رہنے کا ریکارڈ رکھتی ہے اور 1970ء کی دہائی کے اواخر، 1980ء، 1990ء کی دہائیوں اور 2000ء کی دہائی کے اوائل میں سینما گھروں میں ایک مرتبہ پھر جلوہ گر ہو کر اپنی اصل آمدنی میں دوگنا اضافہ کیا۔ شعلے بھارت کی تاریخ کی پہلی فلم تھی جس نے ملک کے 100 سے زائد سینما گھروں میں 25 ہفتے تک نمائش کے لیے موجود رہی۔

1999ء میں بی بی سی انڈیا نے اسے "ہزاریے کی بہترین فلم" قرار دیا جبکہ انڈیا ٹائمز نے اسے بالی ووڈ کی لازمی دیکھنے والی اولین 25 فلموں میں شمار کیا[2]۔ اسی سال 50 ویں فلم ویئر ایوارڈز کی تقریب میں منصفین نے اسے ایک خصوصی اعزاز "فلم فیئر 50 سالوں کی بہترین فلم" سے نوازا۔

یہ فلم مغربی فلموں کی نقالی کی ایک اور بہترین مثال تھی، جیسا کہ بھارت کی فلمی صنعت میں بیشتر فلمیں ہوتی ہیں۔ یہ فلم خاص طور پر سرجیو لیون کی اسپیگھٹی ویسٹرنز (Spaghetti Westerns) اور جون اسٹرجز کی دی میگنفیسنٹ سیون (The Magnificent Seven) سے بہت زیادہ متاثر تھی۔ اس کے علاوہ چند مناظر 1969ء کی وائلڈ بنچ (The Wild Bunch) اور 1973ء کی بلی دی کڈ (Billy the Kid) کی نقالی تھے۔

اہم کردار[ترمیم]

موسیقی[ترمیم]

فلم کی موسیقی راہول دیو برمن (المعروف آر ڈی برمن) نے ترتیب دی تھی۔ یہ ایک گیت محبوبہ محبوبہ انہوں نے خود گایا بھی تھا۔ فلم کے دیگر گانے و گلوکار یہ ہیں:

حوالہ جات[ترمیم]