شمشاد حسین

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
شمشاد حسین
معلومات شخصیت
پیدائش 1946
ممبئی[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات 24 اکتوبر 2015 (68–69 سال)[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
دہلی[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
وجۂ وفات سرطان جگر[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں وجۂ وفات (P509) ویکی ڈیٹا پر
طرز وفات طبعی موت  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں طرزِ موت (P1196) ویکی ڈیٹا پر
قومیت بھارتی
مذہب اسلام
والد ایم ایف حسین[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں والد (P22) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
پیشہ فن کار،  مصور  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
اعزازات
للت کلا اکادمی کا قومی ایوارڈ 1983 [2]

شمشاد حسین بھارت کے ایک مصور ہیں۔ وہ مرحوم ایم ایف حسین کے فرزند ہیں جو عالمی شہرت یافتہ مصور رہ چکے ہیں۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

شمشاد حسین ممبئی میں 1946ء میں پیدا ہوئے تھے .[3]

انہوں نے بڑودا کے کالج آف فائن آرٹس میں پڑھائی حاصل کی۔ اس کالج میں تعلیم کے دوران انہوں نے مصوری میں ایک ڈپلوما کی سند حاصل کی۔ اس کورس کے لیے انہوں نے کافی محنت کی اور کئی فنکارانہ طور شاہ پارے انہوں نے تیار کیے تھے۔ اس کے بعد انہوں نے رائل کالج آف آرٹ میں تعلیم حاصل کی، [4]

حسین کا دعویٰٰ ہے کہ یہ تجربہ انہیں کئی نئے فنکارانہ تجربے سے واقف کروایا۔ انہیں کئی مشاق اساتذہ اور مصوروں سے ملوانے کا کام کیا۔ اس کے ساتھ ہی ان کا یہ دور "آرٹ کے بارے میں اپنے نقطہ نظر کو تبدیل کر دیا"۔ کیوں کہ فن مصوری کی انفرادیت اور بہت سی باریکیوں کو انہیں سیکھنے کا موقع ملا۔ ان کے اساتذہ بھی نامی گرامی شخصیات ہونے کے علاوہ فن مصوری سے بہ خوبی واقفیت تھی۔ وہ فراٹے سے کئی مصوری کے گن سکھاتے۔۔ یہی گر شمشاد حسین کے لیے کافی مفید اور ثمر آور ثابت ہوئے۔ جلد ہی وہ خود ایک ماہر مصور بن گئے اور دنیا میں اپنا خوب نام کمایا۔[2]

کیریئر[ترمیم]

ان کی پہلی انفرادی نمائش 1968ء میں ہوئی تھی۔ اس نمائش میں انہوں نے محض 50 روپے کے لیے ان کی پہلی پینٹنگ فروخت کی۔ مگر یہ ان کی مصوری کے ابتدائی دنوں کی بات ہے، جب انہیں یا ان کے فن کے بارے میں کسی شخص کو بھی واقفیت نہیں تھی۔[5]

ایوارڈ[ترمیم]

1983ء میں شمشاد حسین کو للت کلا اکادمی کا قومی ایوارڈ حاصل ہوا جو بھارت کے اعلٰی ترین فنکارانہ اعزازوں میں سے ایک ہے۔[2]

انتقال[ترمیم]

شمشاد حسین کا 2015ء میں انتقال ہو گیا۔ وہ انتقال کے وقت 69 سال کے تھے۔ اپنے والد ایم ایف حسین کے انتقال (2011ء) کے محض چار سال بعد وہ گزر گئے۔ [6]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ ت ٹ The Indian Express — شائع شدہ از: 26 اکتوبر 2015
  2. ^ ا ب پ "Shamshad Hussain"۔ The South Asian۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 اگست 2011۔
  3. "SubcontinentArt - Artist Profile - Shamshad Husain"۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 اگست 2011۔
  4. "Our artists - Shamshad Hussain"۔ Quartet Art۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 اگست 2011۔
  5. "Shamshad Husain's journey to fame"۔ The Hindu۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 اگست 2011۔
  6. M F Husain’s son dies of liver cancer at 69 | The Indian Express