شہریار خان آفریدی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
شہریار خان آفریدی
وزیر مملکت برائے داخلہ
آغاز منصب
31 اگست 2018ء
رکن قومی اسمبلی پاکستان
آغاز منصب
13 اگست 2018ء
مدت منصب
جون 2013ء – 31 مئی 2018ء
معلومات شخصیت
پیدائش 12 مارچ 1971 (48 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
جماعت پاکستان تحریک انصاف  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں سیاسی جماعت کی رکنیت (P102) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
مادر علمی جامعۂ پشاور  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ سیاست دان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر

شہریار خان آفریدی ایک پاکستانی سیاست دان جو وزیر مملکت برائے داخلہ اور قومی اسمبلی کے اگست 2018ء سے رکن ہیں۔ اس سے قبل وہ قومی اسمبلی کے جون 2013ء سے مئی 2018ء تک رکن رہ چکے ہیں۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

شہریار 12 مارچ 1971ء کو پیدا ہوئے۔[1]

سیاسی زندگی[ترمیم]

شہریار نے پاکستان کے عام انتخابات، 2002ء میں خیبر پختونخوا کے این اے-14 (کوہاٹ) میں آزاد امیدوار کی حیثیت سے انتخاب میں حصہ لیا[2] مگر ناکام رہے۔ انہوں نے 12,083 ووٹ حاصل کیے اور متحدہ مجلس عمل کے امیدوار سے ہار گئے۔[3]

انہوں نے پاکستان عام انتخابات، 2013ء میں خیبر پختونخوا کے این اے-14 (کوہاٹ) میں پاکستان تحریک انصاف سے انتخاب میں حصہ لیا اور کامیابی حاصل کی۔[4][5][6][7] انہوں نے 68,129 ووٹ حاصل کیے اور جمعیت علمائے اسلام (ف) کے امیدوار کو شکست دی۔[8]

وہ پاکستان کے عام انتخابات، 2018ء میں قومی اسمبلی کی نشست کے لیے حلقہ این اے-32 (کوہاٹ) سے دوبارہ منتخب ہوئے۔[9] انہوں نے 82,248 ووٹ حاصل کیے اور متحدہ مجلس عمل کے امیدوار گوہر محمد خان بنگش کو شکست دی۔[10]

نجی ٹی وی کے مطابق 28 اگست 2018ء کو شہریار خان کو عمران خان نے وزیر مملکت برائے داخلہ بنانے کی منظوری دی۔[11] 31 اگست 2018ء کو انہوں عہدے کا حلف اٹھا لیا۔[12]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Detail Information"۔ www.pildat.org۔ پی آئی ایل ڈی اے ٹی۔ Archived from the original on 25 اپریل 2017۔ اخذ شدہ بتاریخ 24 اپریل 2017۔
  2. "Three women file papers in Kohat"۔ ڈان (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 18 مارچ 2017 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 17 مارچ 2017۔
  3. "2002 election result" (پی‌ڈی‌ایف)۔ الیکشن کمیشن پاکستان۔ مورخہ 26 جنوری 2018 کو اصل (پی‌ڈی‌ایف) سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 23 فروری 2018۔
  4. "PTI's MNA Shehryar Afridi terms terrorism major issue of Pakistan"۔ آج نیوز۔ مورخہ 3 مارچ 2017 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 3 مارچ 2017۔
  5. "Rift on PK-37 result: Boost for PTI in Kohat, Hangu"۔ ڈان (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 3 مارچ 2017 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 3 مارچ 2017۔
  6. "PTI tops list of lawmakers yet to file statements of assets"۔ ڈان (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 4 مارچ 2017 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 3 مارچ 2017۔
  7. "100 new MNAs-elect to make debut in NA today"۔ مورخہ 6 مارچ 2017 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 16 مارچ 2017۔
  8. "2013 election result" (پی‌ڈی‌ایف)۔ الیکشن کمیشن پاکستان۔ مورخہ 1 فروری 2018 کو اصل (پی‌ڈی‌ایف) سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 1 اپریل 2018۔
  9. The Newspaper's Correspondent۔ "Vote recount ordered in Kohat's PK-81"۔ DAWN.COM۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 1 اگست 2018۔
  10. "NA-32 Result – Election Results 2018 – Kohat – NA-32 Candidates – NA-32 Constituency Details – thenews.com.pk"۔ www.thenews.com.pk (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 1 اگست 2018۔
  11. "Shehryar Khan Afridi to be appointed minister of state for interior: sources"۔ جیو نیوز۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 28 اگست 2018۔
  12. "شہریار آفریدی نے وزیر مملکت برائے داخلہ کے عہدے کا حلف اٹھا لیا"۔ جیو نیوز۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔