شیخ محمد درویش

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

درویش محمد بن قاسم کے والد کا نام شیخ قاسم ہے۔ بعض شجرہ جات میں محمد درویش بھی آپ سلسلہ چشتیہ نظامیہ میں شیخ فتح اللہ اودھی سے بیعت تھے۔ آپ نے سلسلہ چشتیہ قادریہ اور سہروردیہ میں سید بڈھن بھڑائچی سے بیعت تھے۔ اور ان کے خلیفہ بھی تھے۔یہ شیخ عبد القدوس گنگوہی کے پیرو مرشد تھے۔[1]

مصنف گلزار ابرار کے مطابق سلسلہ چشتیہ میں درویش محمد بن قاسم شیخ سعد اللہ بدایونی کے مرید و خلیفہ تھے اور اپنے والد کے پیر و مرشد شیخ فتح اللہ اودھی کے بھی مرید وخلیفہ تھے۔ شیخ فتح اللہ کو شیخ صدر الدین شہاب قریشی سے خرقہ خلافت ملا تھا اور انہیں اپنے پیرو مرشد شیخ نصیر الدین محمود چراغ دہلوی سے خرقہ خلافت ملا تھا۔القصہ درویش محمد بن قاسم تین واسطوں سے شیخ نصیر الدین محمود چراغ دہلوی تک پہنچتا ہے۔[2]

درویش محمد بن قاسم 16 محرم 896ھ کو اس دارفانی سے رخصت ہوئے۔ آپ کا مزار شریف فیض آباد ہندوستان میں مرجع خاص و عام ہے۔

حوالہ جات[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. تاریخ اولیاء،ابو الاسفارعلی محمد بلخی،صفحہ266،نورانی کتب خانہ قصہ خوانی بازار پشاور
  2. گلزار ابرار محمد غوثی شطاری،صفحہ 580،سید احمد شہید اکیڈمی لاہور