شیر خان (فلم)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
شیر خان
SHER KHAN.jpg
Original title Sher Khan
ہدایت کار یونس ملک
لطیف شاھین
ندیم عباس
پروڈیوسر انور کمال پاشا
تحریر ناصر ادیب
ستارے
راوی چوہدری محمد اعظم
موسیقی وجاہت عطرے
سنیماگرافی غضنفر علی
ایڈیٹر اصغر
مرید حسین
پروڈکشن
کمپنی
تقسیم کار الکویت فلمز
تاریخ اشاعت
دورانیہ
165 دقیقہ
ملک Flag of Pakistan.svg پاکستان
زبان پنجابی
بجٹ 5 ملین (امریکی $79,000)
باکس آفس 23 بلین (امریکی $360 ملین)

شیر خان (انگریزی: Sher Khan) پنجابی زبان میں فلم کا آغاز کیا۔ فلم كى نمائش 2 اگست، 1981ء كو ہوئى یہ پاکستانی، ایکشن اور موسیقی فلموں میں پائی جاتی ہیں۔ فلم کے ہدایتکار یونس ملک تھے۔ فلمسازی کی تھی انور کمال پاشا۔ س فلم کے گیتوں کے موسیقار وجاہت عطرے تھے۔ اس فلم میں گیت پاکستان کے مشہور و معروف گلوکاروں نور جہاں اور مسعود رانا نے گائے۔ فلم کی لسٹ ریکارڈنگ میں شامل ایم ظفر انہوں نے گیتوں کی بہترین ریکارڈنگ کی اور شاعر وارث لدھیانوی، خواجہ پرویز کی طرف سے دھنیں بنے ہوئے تھے۔ اس کی مثال ملنا ذرا مشکل ہو گی،اقبال حسن نے ’’شیرخان‘‘ کے ٹائٹل رول کو یادگار بنادیا ۔ بہت کم لوگ جانتے ہونگے ’’شیر خان‘‘ کا ٹائٹل رول سب سے پہلے اردو فلموں کے لیجنڈ اداکار محمد علی کو پیش کیا گیا تھا لیکن اس وقت انھوں نے ایک پنجابی فلم میں کام کرنا اپنی توہین سمجھا تھا جس پر بعد میں وہ بہت پچھتائے ہونگے کیونکہ اردو فلموں کے زوال کے بعد انھیں درجن بھر پنجابی فلموں میں ایسے کردار دار کرنا پڑے تھے۔[1]

عیدالفطر 12 اگست 1981ء کو ریلیز ہونے والی سپرہٹ فلم شیرخان کے مرکزی کردار نے ایکشن پنجابی فلموں کے دور میں اقبال حسن کو سلطان راہی اور مصطفیٰ قریشی کے بعد تیسرا کامیاب ترین فلمی اداکار بنا دیا تھا اور فلموں کی کہانیاں انھی تینوں کرداروں کو سامنے رکھ کر لکھی جاتی تھیں۔ [2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Sher Khan Movie Details Islamabad"۔ Lok Virsa Mandwa Film Club screening Punjabi musical actioner Sher Khan’ today (Saturday) at Actress Bahar is expected to be special guest۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2019۔
  2. "Anjuman in Sher Khan (1981)"۔ box-office success۔ اخذ شدہ بتاریخ 16 اگست 2019۔

بیرونی رابطہ[ترمیم]