شیر نما والدین

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

باگھ نما والدین (انگریزی: Tiger parenting)، جسے شیر نما ماں بھی کہا جاتا ہے، ان والدین کو کہا جاتا ہے جو اپنے بچوں پر کافی زور چلاتے ہیں تاکہ ان کے بچے مہارت اور تعلیمی حصول کی اعلٰی سطحوں تک پہنچیں۔ اس کے لیے حاکمانہ پرورش کے طریقوں کا استعمال کیا جاتا ہے۔[1] اس اصطلاح کو ییل یونیورسٹی میں قانون کی پروفیسر ایمی چؤا نے اپنے 2011ء کی یادگار تحریر بیٹل ہیم آف دی ٹائیگر مدر میں وضع کیا تھا۔[2] یہ ایک زیادہ تر چینی امریکی تصور ہے، جس کی اصطلاح اصول و ضوابط کی پرورش کا موازنہ کرتا ہے جیسا کہ مشرقی ایشیا، جنوبی ایشیا اور جنوب مشرقی ایشیا کے گھرانوں میں ہوتا ہے۔[3][4][5][6][7] چؤا کی شہرت فوری طور پر "شیر نما ماں" کی اصطلاح اور تصور کو مقبول بنا دیا جس کی وجہ سے کئی مزاحیہ تصویر نگاری کی گئی اور یہ 2014-2015 کے سنگاپوری ٹی وی شو ٹائیگر مم، 2015ء کے چینی سرزمین کے ڈراما ٹائیگر مام اور 2017ء ہانگ کانگ سیریز ٹائیگر مام بلوز تصور سے متاثر ٹی وی پروگرام کے طور پر وجود میں آئے۔ ان میں سے ہر ایک میں گھسی پٹی کردار کو چینی ماں کے طور پر پیش کیا جاتا ہے جو ان تھک کوششوں کے ذریعے اپنے بچے کو محنت سے پڑھاتی ہے، جو کئی بار بچوں کی فطرت کے منافی ہوتا ہے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Kim، Su Yeong. "Defining Tiger Parenting in Chinese Americans". Human development 56.4: 217-222. doi:ڈی او ئي. https://www.ncbi.nlm.nih.Agov/pmc/articles/PMC4865261/. [مردہ ربط]
  2. Kim، S. "What is "tiger" parenting? How does it affect children?". American Psychological Association. 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 04 دسمبر 2018. 
  3. Lyu، Sung Ryung (2017). Rethinking Parenting of East Asian Immigrant Families in the United States with Asian Feminist Perspectives. University of Texas at Austin Press. pp. iii. doi:ڈی او ئي. https://repositories.lib.utexas.edu/bitstream/handle/2152/47397/LYU-MASTERSREPORT-2017.pdf?sequence=1. 
  4. Seal، Kathy (December 13, 2010). "Asian-American Parenting and Academic Success". Pacific Standard. 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 04 دسمبر 2018. 
  5. Markus، Hazel Rose; Fu، Alyssa S. (April 11, 2014). "My Mother and Me Why Tiger Mothers Motivate Asian Americans But Not European Americans". Personality and Social Psychology Bulletin. doi:ڈی او ئي. http://journals.sagepub.com/doi/pdf/10.1177/0146167214524992. 
  6. Tan، Sor-Hoon؛ Foust، Mathew (2016). Feminist Encounters with Confucius. Brill Academic Publishing (نشر October 20, 2016). صفحہ 40. ISBN 978-9004332102. 
  7. Parker، Clifton B. (May 20, 2014). "'Tiger moms' vs. Western-style mothers? Stanford researchers find different but equally effective styles". Stanford Report. 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 04 دسمبر 2018.