صاحب ابن عباد

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

خاندان بنو بویہ کی حکومت جب عضد الدولہ کے انتقال کے بعد تقسیم ہو گئی تو عراق، رے اور فارس میں شہزادوں نے علاحدہ علاحدہ حکومتیں قائم کر لیں۔ ان میں سے رے کی حکومت اس لحاظ سے مشہور ہوئی کہ اس کے حکمران فخر الدولہ کو ایک بڑا قابل وزیر صاحب ابن عباد مل گیا تھا۔ صاحب نے٣٧٣ ھ تا ٣٨٥ ھ تک ١٢ سال وزارت کی اور ایسی شہرت حاصل کی جیسی خلافت عباسیہ کے زمانے میں برامکہ نے حاصل کی تھی۔ وہ صاحب تصنیف بھی تھا اور اس نے کئی کتابیں بھی لکھیں۔ اس کا کتب خانہ اتنا بڑا تھا کہ ایک مرتبہ ایک سامانی بادشاہ نے اس کو وزیر بنانے کی خواہش کی تو اس نے یہ کہہ کر انکار کر دیاکہ میرے کتب خانے کو منتقل کرنے کے لیے ٤٠٠ اونٹوں کی ضرورت ہوگی۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالے[ترمیم]