صحیفہ منظوم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
صحیفہ منظوم
Shi Jing.jpg
چی این لونگ کے ہاتھ کی تصویر اور متن والے صحیفہ منظوم کا پہلا سنگیت
اصل عنوان
ملک ژؤ خاندان کا چین
زبان قدیم چینی
موضوع قدیم چینی شاعری اور گیت

صحیفہ منظوم (چینی: ; پینین: Shī، تلفظ: شی چنگ) چینی ادب کے پانچ ادبیات عالیہ میں سے ایک اور چینی شاعری کا موجود قدیم ترین مجموعہ ہے جس میں گیارہویں صدی ق م سے ساتویں صدی ق م کے درمیانی عرصے کی نظمیں اور گیت یکجا کیے گئے ہیں۔ چینی روایات کے مطابق اس کتاب کے مولف کنفیوشس ہیں اور اسی انتساب کی بنا پر اس کتاب کو چینی معاشرے میں اس درجہ پزیرائی حاصل ہے۔ چنانچہ اسی غایت اہمیت کے پیش نظر تقریباً دو ہزار برسوں سے چین اور اس کے ہمسایہ ممالک کے اہل علم صحیفہ منظوم کو حرز جاں بنا رکھا ہے۔ چینی اس کا نہ صرف مطالعہ کرتے بلکہ اسے حفظ بھی کرتے رہے ہیں۔

اس مجموعہ میں دراصل ان نظموں کو یکجا کیا گیا ہے جو رؤسا کے شاعر مخصوص تقریبات کے موقع پر شہنشاہ کی نذر کیا کرتے تھے۔ بیشتر نظمیں تاریخی اور دیہاتی گیت ہیں۔ کل 311 نظمیں ہیں جن میں سے گیارہ چنگ خاندان کی اور بقیہ ژؤ خاندان کے عہد کی ہیں۔ نیز یہ نظمیں چینی محاوروں اور ضرب الامثال کا بڑا ماخذ ہیں اور یہ محاورے آج بھی چینی روزمرہ کا حصہ ہیں۔

مشتملات[ترمیم]

صحیفہ منظوم میں چینی نظموں کا قدیم ترین مستند انتخاب ملتا ہے۔[1] ان نظموں اور گیتوں کا بڑا حصہ ژؤ خاندان کے عہد حکومت (1046–771 ق م) کا ہے جبکہ آخری پانچ نظمیں شانگ شہنشاہوں کے قصائد پر مشتمل اور ان کی رسمی نظم معلوم ہوتی ہیں۔[2][3] ہان عہد کے عالم ژینگ شوان کے مطابق صحیفہ منظوم کی سب سے آخری نظم عہد بہار و خزاں کے وسط (700 ق م) کی ہے۔

صحیفہ میں نظم کردہ خیالات اور احساسات کو دو حصوں میں تقسیم کیا جا سکتا ہے: ریاستی دھن اور قصیدے۔[4] ریاستی دھن سادہ زبان میں چھوٹے چھوٹے قطعات ہیں جو عموماً قدیم لوک گیت سے لیے گئے ہیں، یہ قطعے عوام کی آواز اور ان کے جذبات کا اظہار سمجھے جاتے ہیں۔[4]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Zheng Xuan 鄭玄 (AD 127–200), Shipu xu 詩譜序.
  2. Cited in Saussy (1993), p. 19.
  3. Granet (1929), cited in Saussy (1993), p. 20.
  4. ^ ا ب Kern (2010), p. 20.