صنم مہر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
صنم مہر
معلومات شخصیت
عملی زندگی
پیشہ مصنفہ،  صحافی  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

صنم مہر ایک پاکستانی صحافی اور مصنف ہیں جو مرحومہ ماڈل قندیل بلوچ کی زندگی کی کہانی پر مبنی اپنی کتاب سنسنی خیز زندگی قندیل بلوچ کے لیے مشہور ہیں۔[1][2][3][4][5]

کیریئر[ترمیم]

صنم کراچی میں مقیم ایک صحافی ہے۔ انہوں نے الجزیرہ ، دی نیویارک ٹائمز، بزفید، دی گارڈین، دی سکرال اینڈ روڈز اور کنگڈم کے لیے کام کیا ہے۔[6][7][8][9] [10]

صنم سنڈی پر مبنی سنسنی خیز زندگی قندیل بلوچ کی کتاب کے مصنف بھی ہیں، جو ان کی پہلی کتاب تھی۔ ان جیسی عورت کو 2019ء میں رہا کیا گیا تھا ، جو قندیل بلوچ پر بھی مبنی ہے۔[11][12][13]

سنڈیشنل لائف اینڈ ڈیتھ آف قندیل بلوچ کو شکتی بھٹ اول کتاب انعام اور ہندوستانی کتاب انعام ایوارڈ کے لیے شارٹ لسٹ کیا گیا تھا۔[14][15] [16]

صنم نے دس سال سے زیادہ عرصے سے پاکستان کی ثقافت ، کاروباری سیاست ، خواتین اور اقلیتوں کے حقوق پر مضامین لکھے ہیں۔ تھوڑی دیر کے لیے صنم نے خیبر پختونخوا کے خطے میں ہونے والے تنازع کو کوریانے کے لیے ٹیلی ویژن پر کام کیا۔ اس کے بعد وہ ہیرالڈ میں بطور ایڈیٹر اور دی ایکسپریس ٹریبیون اور نیویارک ٹائمز میں نیشنل ڈیسک کے طور پر کام کرتی تھیں۔ 2015 سے ، وہ ایک آزاد صحافی کی حیثیت سے کام کر رہی ہیں۔[17][18][19]

2018 میں ، صنم نے بی بی او ڈی پاکستان اور ایس او سی آؤٹ ریچ کے ساتھ ایک کتاب پروجیکٹ پر کام کیا۔ کتاب کا پروجیکٹ ، "نالج اِج بلٹ پروف " ملالہ یوسف زئی ، شازیہ اور کائنات کے 2012 کے واقعے پر مبنی تھا۔ کتاب نے ان کی کہانی کا احاطہ کیا۔ اگست 2018 میں ، 'ایج اسٹارز' کے ایشیاء کے سب سے بڑے ایوارڈ شو میں ، '' نالج اِج بلٹ پروف '' نے 1 گولڈ ، 5 سلور اور 7 کانسی کے ایوارڈ جیتے۔[20]s[21][22][23][24]

سن 2020 میں ، صنم نے فاطمہ بھٹو کے ساتھ مل کر اسٹیم ہوم ، اسٹینڈ ریڈنگ نامی ایک پہل شروع کی ، جس میں ایک مجازی پڑھنے کا میلہ لکھا گیا تھا جس میں تصنیفات کو ویڈیو کے ذریعے اپنے کام کے اقتباسات پڑھ کر تھرا کام کو فروغ دینے کی اجازت دی گئی تھی۔ اس اقدام کو قومی اور بین الاقوامی خبروں میں نمایاں کیا گیا۔[25] [26][27][28][29]

کتابیں[ترمیم]

قندیل بلوچ کی سنسنی خیز زندگی[30][31][32][33]

اس جیسی عورت[34][35][36]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Sanam Maher – Karachi Literature Festival" (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  2. Pidathala، Archana (2019-12-21). "Pak celebrity Qandeel Baloch was murdered because of people's judgement: Sanam Maher". The Hindu (بزبان انگریزی). ISSN 0971-751X. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  3. ""If there's anything to be learned here, it's that we need to look at how complicit we are in a woman's undoing." – Sanam Maher". South Asia@LSE. 2019-04-03. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  4. "Sanam Maher | Al Jazeera News". www.aljazeera.com (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  5. "Sanam Maher | The Caravan". caravanmagazine.in. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  6. "News stories for Sanam Maher - DAWN.COM". www.dawn.com (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  7. "Sanam Maher, Author at The Express Tribune". The Express Tribune (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  8. "A Woman Like Her by Sanam Maher". Penguin Random House Canada (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  9. "Interview: Sanam Maher author of 'The Sensational Life and Death of Qandeel Baloch'". The Indian Express (بزبان انگریزی). 2018-06-21. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  10. "Sanam Mehar writes about 'Pakistan's Kim Kardashian' in her book 'A Woman Like Her'". www.gulftoday.ae. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  11. "Sanam Maher: on the trail of murdered Pakistani social media star Qandeel Baloch". the Guardian (بزبان انگریزی). 2019-06-30. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  12. "Sanam Maher". NPR.org (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  13. "Why do women downplay their beauty to be taken seriously at work? Pakistani journalist Sanam Maher investigates". Elle India (بزبان انگریزی). 21 اکتوبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  14. NewsBytes. "Sanam Maher's biography on Qandeel Baloch shortlisted for Indian literary prize". www.thenews.com.pk (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  15. "Author - Sanam Maher | Business Standard". www.business-standard.com. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  16. "Sanam Maher". Newsweek Pakistan (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  17. "PEW LITERARY | AUTHOR | SANAM MAHER". www.pewliterary.com. 16 جنوری 2021 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  18. Bloomsbury.com. "Bloomsbury - Sanam Maher - Sanam Maher". www.bloomsbury.com (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. [مردہ ربط]
  19. "A Woman Like Her Sanam Maher". Pages of Hackney - Webshop (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  20. "Sanam Maher". Arab News (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  21. washingtonpost. "Qandeel Baloch". 
  22. "Sanam Maher | Aleph Book Company" (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  23. "Sanam Maher in conversation with Dr Jessamy Gleeson". Queen Victoria Women's Centre (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  24. Sehgal، Parul (2020-01-28). "Pakistan's First Social Media Star and the Forces That Enabled Her Murder". The New York Times (بزبان انگریزی). ISSN 0362-4331. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  25. Xalxo، Jessica (2018-06-15). "Did We Really Know Qandeel Baloch? Asks Sanam Maher In Her Book". SheThePeople TV (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  26. "Sanam Maher". Sanam Maher (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  27. "Let's Talk Books with Sanam Maher". British Council: Pakistan Library (بزبان انگریزی). 29 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  28. Bahuguna، Urvashi. "'Only after her murder was Qandeel Baloch praised as a feminist, as a modern Pakistani woman'". Scroll.in (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  29. "Stay home, stay reading with Fatima Bhutto, Sanam Maher | SAMAA". Samaa TV (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  30. Jimenez، Megin (2020-02-17). "Reclaiming Humanity from the Headlines". Chicago Review of Books (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  31. "Sanam maher | Latest News on Sanam-maher | Breaking Stories and Opinion Articles". Firstpost. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  32. "Author Sanam Maher Says the Murder of Pakistani Social Media Star at The Hands of Her Brother Was a Defining Moment for Pakistan". PRWeb. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  33. "Sanam Maher's 'The Sensational Life And Death Of Qandeel Baloch': An excerpt | Life & Style - Geo.tv". www.geo.tv. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  34. "Sanam Maher". www.goodreads.com. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  35. "A Woman Like Her: The Story Behind the Honor Killing of a Social Media Star by Sanam Maher". Porchlight Books (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020. 
  36. Maher، Sanam (2020-02-26). "Influencers in Islamabad". The Paris Review (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2020.