صوفی تبسم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
صوفی تبسم
صوفی تبسم ਸੂਫ਼ੀ ਤਬੱਸੁਮ
ملف:Sufi Tabassum.jpg
پیدائش غلام مصطفٰی تبسم
4 اگست 1899 (1899-08-04)
امرتسر, برٹش پنجاب
وفات 7 فروری 1978 (عمر 78 سال)
لاہور، پاکستان
قومیت پاکستانی
پیشہ شاعر

صوفی غلام مصطفٰی تبسم اردو، پنجابی اور فارسی زبانوں کے شاعر تھے.آپ بچوں کے مقبول ترین شاعر تھے۔ بڑوں کے لیے بھی بہت کچھ لکھا۔استاد رہے، ماہانہ لیل و نہار کے مدیر رہے اور براڈ کاسٹر بھی رہے۔ ٹی وی، ریڈیو سے پروگرام "اقبال کا ایک شعر" کرتے تھے۔ صوفی تبسم ہر میدان کے شہسوار تھے۔ نظم ہو یا نثر، غزل ہو یا گیت، ملی نغمے ہوں یا بچوں کی نظمیں۔کہاں کہاں ان کے نقوش باقی نہیں ہیں۔ ادارہ فیروز سنز سے انکی بہت سی کتابیں شائع ہوئیں۔ جیسے انجمن، صد شعر اقبال اور دوگونہ۔ علاوہ ازیں بچوں کے لیے بے شمار کتب لکھیں۔ جن میں شہرہ آفاق کتابیں جھولنے، ٹوٹ بٹوٹ، کہاوتیں اور پہلیاں، سنو گپ شب وغیرہ شامل ہیں۔"جھولنے" تو ننھے منے بچوں کے لیے ایسی کتاب ہے جو ہر بچہ اپنے اپنے بچپن میں پڑھتا رہا ہے۔1965ءکی جنگ میں ان کے پاک فوج کیلئے لکھے جانے والے نغمات نے بڑی شہرت حاصل کی-

نمونۂ اشعار فارسی[ترمیم]

بس آہ کشیدم و بیاری نرسید بس ناله زدم به غمگساری نرسید
صد اشک فروچکید از دو چشمم یک قطره بدامن نگاری نرسید

حوالہ جات[ترمیم]

سیری در ادبیات فارسی هند و پاکستان