طارق پرویز خان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
طارق پرویز خان
معلومات شخصیت
پیدائش 15 فروری 1948  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پشاور  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تاریخ وفات 18 اپریل 2020 (72 سال)[1]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تعداد اولاد 4   ویکی ڈیٹا پر (P1971) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی جامعۂ پشاور (–1975)  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تخصص تعلیم سیاسیات  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ منصف  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان اردو  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

طارق پرویز خان خیبر پختونخواہ کے نگران وزیر اعلیٰ رہے ۔ امیر حیدر خان ہوتی کے بعد جسٹس ریٹائرڈ طارق پرویز خان کو نگراں وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ مقرر کیا گیا،وہ 20مارچ 2013 سے31 مئی 2013 تک اس عہدے پر رہے[2]

سابقہ نگران وزیر اعلیٰ جسٹس (ر) طارق پرویز 15 فروری 1948ء کو پشاور کے علاقے سکندر ٹاؤن میں پیدا ہوئے۔ جسٹس طارق پرویز گزشتہ چار دہائیوں سے قانون کے پیشے سے منسلک رہے۔ انہوں نے 1972ء میں پشاور ڈسٹرکٹ کورٹ سے وکالت کا آغاز کیا تھا اور 1975ء میں پشاور ہائی کورٹ کا لائسنس حاصل کیا۔

طارق پرویز 11 سال تک ہائی کورٹ کی وکالت کے بعد 1983ء میں سُپریم کورٹ کے وکیل بنے۔

جسٹس طارق پرویز 1997 میں پشاور ہائی کورٹ کے جج بنے جبکہ اپریل 2005ء میں انہیں ترقی دے کر پشاور ہائی کورٹ کا چیف جسٹس تعینات کیاگیا۔

انہوں نے 3 نومبر 2007ء کو جنرل پرویز مُشرف کی جانب سے مُلک میں ایمرجنسی کے نفاذ کے بعد پی سی او کے تحت حلف اُٹھانے سے انکار کر دیا تھا۔

جسٹس طارق پرویز 5 ستمبر 2008 کو پی سی او کے تحت حلف اٹھانے والے پاکستان کے چیف جسٹس عبدالحمید ڈوگر کے دور میں پشاور ہائی کورٹ کا دوبارہ چیف جسٹس تعینات کیا گیا اور بیس اکتوبر دو ہزار نو کو انہیں سُپریم کورٹ کا جج بنایاگیا۔

جسٹس طارق پرویز نے لاء کالج پشاور یونیورسٹی سے 1971ء میں لاء کی ڈگری حاصل کی تھی اور 1975ء میں پشاور یونیورسٹی سے ہی پولیٹکل سائنس کی ڈگری حاصل کی۔

گورنر خیبر پختونخوا علی محمد جان اورکزئی کے دور میں وہ دو بار قائم مقام گورنر بھی رہے۔

جسٹس طارق پرویز 14 فروری کو 65 برس کی عمر میں 2013ء کو ریٹائر ہوئے تھے۔ ان کی تین بٹیاں اور ایک بیٹا ہے۔

حوالہ جات[ترمیم]