ظفر اسحاق انصاری

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

ظفر اسحاق انصاری (27 دسمبر، 1932ء) اسلامی علوم کے ایک عالم تھے۔ وہ بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی اسلام آباد کے اسلامک ریسرچ انسٹیٹیوٹ کے ڈائریکٹر جنرل رہے۔ اس سے پہلے وہ بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی اسلام آباد کے صدر تھے۔ کتابوں اور مضامین کی ایک بڑی تعداد شائع کرنے کے علاوہ انہوں نے اسلامی علوم اور بین المذہبی مکالمے پر بین الاقوامی کانفرنسوں میں تقاریر بھی کیں۔

تعلیم اور ابتدائی زندگی[ترمیم]

ظفر اسحاق انصاری علمی خاندان سے تعلق رکھتے ہیں۔ ان کے والد ظفر احمد انصاری اسلامی علوم کے ایک بہت مشہور عالم تھے جو 1970ء کے دوران پاکستان کی قومی اسمبلی کے لئے منتخب بھی ہوئے۔

ڈاکٹر انصاری نے 1966ء میں ایم اے اور پی ایچ ڈی کی ڈگری کینیڈا کے ایک ادارے سے حاصل کی۔[1] انہوں نے اپنی اعلی تعلیم کے لئے کینیڈا کے جانے سے پہلے جامعہ کراچی میں تعلیم حاصل کی۔ ڈاکٹر انصاری انگریزی اور اردو کے علاوہ عربی، فارسی، فرانسیسی اور جرمن زبانوں پر بھی دسترس رکھتے تھے۔


1988ء سے 2016ء تک، ڈاکٹر انصاری اسلامی ریسرچ انسٹیٹیوٹ، بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی، اسلام آباد کے ڈائریکٹر جنرل کے طور پر کام کرتے رہے۔

حوالہ جات[ترمیم]