عالمی تنظیم برائے حقوق دانش

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
عالمی تنظیم برائے حقوق دانش
Emblem of the United Nations.svg

World Intellectual Property Organization (WIPO) members world map.svg
 

مخفف WIPO
صدر دفتر جنیوا  ویکی ڈیٹا پر (P159) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تاریخ تاسیس جولائی 14, 1967
قسم خصوصی ادارہ
تنظیمی زبان انگریزی
فرانسیسی  ویکی ڈیٹا پر (P37) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
سربراہ ڈائریکٹر جنرل Francis Gurry
جدی تنظیم اقوام متحدہ[1]  ویکی ڈیٹا پر (P749) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
باضابطہ ویب سائٹ www.wipo.int
متناسقات 46°13′19″N 6°08′13″E / 46.2220647°N 6.1369864060505°E / 46.2220647; 6.1369864060505[2]  ویکی ڈیٹا پر (P625) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

عالمی تنظیم برائے حقوق دانش، عالمی تنظیم برائے ملکیتی حقوق دانش یا ورلڈ انٹیلکچوئیل پراپرٹی آرگنائزیشن (WIPO) اقوام متحدہ کی 16 خصوصی تنظیموں میں سے ایک تنظیم ہے۔ عالمی تنظیم برائے فکری ملکیت 1967ء میں قائم کی گئی، جس کا مقصد دنیا بھر میں تخلیقی سرگرمیوں کی ترویج اور بین الاقوامی سطح پر حقوق دانش کا تحفظ کرنا تھا۔[3]
اس تنظیم کے اراکین میں دنیا بھر کی 184 ریاستیں شامل ہیں۔[4] اس تنظیم نے کل 24 معاہدے تشکیل دیے تھے۔ اس تنظیم کا مرکزی دفتر سوئٹزرلینڈ کے شہر جنیوا میں قائم کیا گیا ہے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. GRID ID: https://www.grid.ac/institutes/grid.467132.5
  2. https://n2t.net/e/pub/naan_registry.txt — اخذ شدہ بتاریخ: فروری 2021
  3. کنونشن برائے تنظیم سازی بحوالہ حقوق دانش, [1] آرکائیو شدہ (Date missing) بذریعہ wipo.int (Error: unknown archive URL)اسٹاک ہوم میں منظور کی گئی، بتاریخ جولائی 14, 1967ء
  4. فہرست اراکین عالمی تنظیم برائے حقوق دانش 11 ستمبر 2008ء تک

بیرونی روابط[ترمیم]