عبدالحمید (فوجی)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
کمپنی کوارٹر ماسٹر
عبدالحمید
Soldier Abdul Hamid 2000 stamp of India.jpg 

معلومات شخصیت
پیدائش 1 جولائی 1933(1933-07-01)
غازی پور[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات 10 ستمبر 1965(1965-90-10) (عمر  32 سال)
کھیم کرن[2][3]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
رہائش غازی پور  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں رہائش (P551) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of India.svg بھارت
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
مذہب اسلام[4]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مذہب (P140) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
پیشہ فوجی افسر  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
عسکری خدمات
وفاداری Flag of India.svg بھارت
شاخ بھارتی فوج
یونٹ 4 گرینیڈیئرز
عہدہ حوالدار  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں عسکری رتبہ (P410) ویکی ڈیٹا پر
لڑائیاں اور جنگیں پاک بھارت جنگ 1965ء[5]،  چین بھارت جنگ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں لڑائی (P607) ویکی ڈیٹا پر
اعزازات
Param-Vir-Chakra-ribbon.svg پرم ویر چکر
IND Samar Seva Star Ribbon.svg سمر سیوا پدک
IND Raksha Medal Ribbon.svg رکشا پدک
IND Sainya Seva Medal Ribbon.svg سینیا سیوا پدک[6]

کمپنی کوارٹر ماسٹر حوالدار ویر عبد الحمید (1جولائی 1933 – 10 ستمبر 1965) ہندوستانی فوج کے فوجی تھے۔ ویر عبد الحمید چوتھے بھارتی آرمی گریناڈیر میں ایک فوجی تھے۔ 1965 کے بھارت اور پاک جنگ کے دوران، شہید ہوئے۔ جبکہ اس وقت لڑائی میں کھیم کرن سیکٹر کے اسال اتاڈ میں ہوئی جنگ میں شاندار جنگی جوہر کا مظاہرہ کیا تھا۔ جس کے نتیجے میں آپ کو ہندوستانی فوج کے اعلیٰ ترین اعزاز پرم ویر چکر بعد از مرگ دیا گیا۔ شہادت سے پہلے پرم ویر عبد الحمید نے اس وقت "گن ماؤنٹیڈ جیپ" سے پاکستان کے "پٹن ٹینک" کو تباہ کر دیا تھا جو اس وقت ناقابل تصور سمجھا جاتا تھا۔

ابتدائی حالات[ترمیم]

ویر عبد الحمید 1 جولائی 1933 کو ایک سادہ درزی کے خاندان میں اتر پردیش کے غازی پور ضلع کے دھمو پورگاؤں میں پیدا ہوئے تھے۔ ان کے والد لانس نیک عثمان فاروقی بھی گرینڈیریر میں ایک نوجوان تھے۔ انہیں 27 دسمبر، 1954 کو 4 گرینادیرز میں داخلہ دیا گیا تھا۔ اور ان کی سروس کی مدت میں، انہوں نے فوجی سروس میڈل، سمر سروس میڈل اور دفاعی میڈل سے اعزاز حاصل کی۔

1965 کی جنگ[ترمیم]

1965 کی پاک بھارت جنگ میں انہیں پنجاب کے ترن ضلع کے کھیم کرن کے علاقے میں فوج کے سامنے لائن میں تعینات کیا گیا تھا۔ انہوں نے جیپ پر نصب گن سے پاکستانی ٹینک پر حملہ کیا جس سے دو ٹینک تباہ ہو گئے۔ تیسرے ٹینک نے انہیں دیکھ لیا۔ عبد الحمید نے جیسے ہی ٹینک پر فائر کیا ٹینک نے اُن پر گولہ فائر کر دیا۔ دونوں ہی ایک دوسرے کی گولیوں کا شکار ہو گئے۔[7] باقی فوجیوں نے عبد الحمید کے اعضا اکھٹے کر کے انہیں وہیں دفنا دیا۔

اعزاز[ترمیم]

1965 کی جنگ میں اس غیر معمولی بہادر کے لیے ویرعبد الحمید کو سب سے پہلے مہاویر چاکرا چکراور پھر ہندوستانی فوج کے اعلیٰ ترین اعزاز پرم ویر چکربعد از مرگ دیا گیا۔

سانچہ:Ribbon devices/alt
سانچہ:Ribbon devices/alt سانچہ:Ribbon devices/alt سانچہ:Ribbon devices/alt
پرم ویر چکر
سمر سیوا اسٹار
رکھشا میڈل
فوجی سروس میڈل

حوالہ جات[ترمیم]

بیرونی روابط[ترمیم]