عبد اللہ بن جد

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
عبد اللہ بن جد
معلومات شخصیت

عبد اللہ بن جد غزوہ بدر میں شریک قبیلہ بنی سلمہ کے انصار صحابی ہیں۔
ان کا نسب عبد اللہ بن الجد بن قيس بن صخر بن خنساء بن سنان بن عبيد ہے ان کی والدہ ہند بنت سہل ہےیہ معاذ بن جبل کی بہن تھیں غزوہ بدر اور غزوہ احد میں شریک رہےان کی کوئی اولاد نہ تھی ان کا تذکرہ تینوں (ابن مندہ ابو نعیم ابن عبد البر) نے کیا[1] ان کے والد جد بن قیس کی کنیت ابو وہب تھی اس نے اسلام قبول کیا غزوات میں بھی شریک رہاغزوہ تبوک کے موقع پر جد ابن قیس منافق سے فرمایا کہ جنگ تبوک میں چلنے کی تیاری کرو، وہ بولا کہ میری قوم جانتی ہے کہ مجھے عورتوں سے بہت رغبت ہے اگر میں ان رومیوں کے مقابل گیا تو مجھے خطرہ ہے ان کی حسین عورتیں دیکھ کر ان پر فریفتہ ہوجاؤں اور فتنہ میں پڑجاؤں ، مجھے وہاں نہ لے جایے، فتنہ میں واقع نہ فرمایئے، اسی کے متعلق سورہ توبہ کی آیت 49 نازل ہوئی۔ [2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. اسد الغابہ جلد5صفحہ 214 مؤلف: ابو الحسن عز الدين ابن الاثير ،ناشر: المیزان ناشران و تاجران کتب لاہور
  2. الطبقات الكبرى مؤلف: ابن سعد ناشر: دار الكتب العلمية - بيروت