عبد المالک بلوچ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
عبد المالک بلوچ
تفصیل=

وزیر اعلیٰ بلوچستان
مدت منصب
7 جون، 2013ء – 23 دسمبر 2015ء
صدر ممنون حسین
وزیر اعظم نواز شریف
Fleche-defaut-droite-gris-32.png نواب غوث بخش باروزئی
نواب ثناء اللہ خان زہری Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش 15 جنوری 1958 (61 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
لاہور  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
مقام وفات بلوچستان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
مذہب اسلام
جماعت نیشنل پارٹی (پاکستان)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں سیاسی جماعت کی رکنیت (P102) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر

ڈاکٹر عبد المالک بلوچ بلوچستان کے سابق وزیر اعلیٰ ہیں۔ ان کا تعلق نیشنل پارٹی سے ہے۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

15 جنوری 1958ء کو ڈاکٹر عبد المالک بلوچ نے بلوچستان کے علاقے تربت میں پیدا ہوئے۔ آپ نے بچپن میں ابتدائی تعلیم روایتی انداز سے حاصل کی مسجد میں قرآن پاک پڑھا۔ 1975ء میں آپ نے انٹر سائنس کیا۔ اچھے نمبر آنے پر آپ کو بولان میڈیکل کالج، کوئٹہ میں داخلہ مل گیا۔ 1982ء میں آپ نے ایم بی بی ایس کا امتحان پاس کیا۔ 1987ء میں آپ نے قوم پرست رہنما، ڈاکٹر عبدالحئی بلوچ کے ساتھ مل کر نئی سیاسی جماعت، بلوچ نیشنل موومنٹ کی بنیاد رکھی۔ اسی اتحاد سے آپ نے الیکشن لڑا اور صوبائی امیدوار بننے میں کامیاب رہے۔ وزیراعلیٰ بلوچستان"محمد اکبر خان بگٹی"نے آپ کو وزیر صحت بنایا اس حیثیت سے آپ نے اسپتال قائم کیے۔ ڈاکٹرعبدالمالک بلوچ 2008ء تا 2012ء سینٹ کے رکن بھی رہے۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

عبد المالک بلوچ جنوبی بلوچستان کے شہر تبت میں پیدا ہوئے۔ ابتدائی تعلیم بھی وہیں سے حاصل کی۔ بولان میڈیکل کالج سے ڈاکٹریٹ کی ڈگری حاصل کی۔ وہ ماہر امراض چشم ہیں۔

سیاسی زندگی[ترمیم]

اپنی سیاسی زندگی کا آغاز بلوچ سٹوڈنٹ آرگنائیزیشن سے کیا۔ پھر 1988ء میں بلوچستان نیشنل موومنٹ نامی جماعت تشکیل دی۔ انتخابات کے بعد وہ اکبر بگٹی کی کابینہ کے وزیر صحت منتخب بنے۔ 2004ء میں میر بخش بزنجو کی جماعت نے ان سے سیاسی اتحاد کر لیا۔ وہ 1993ء میں وزیر تعلیم بھی رہ چکے ہیں۔ 7 جون 2013ء کو انہیں وزیراعلیٰ بلوچستان بنا دیا گیا اور مدت معاہدے کے تحت ختم ہو گئی جس کے بعد ان کے جانشین نواب ثناء اللہ خان زہری ہوئے۔ بلوچ قبائل میں ان کو عزت کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے۔