عدمِ کلام

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
عدمِ کلام
تخصصاعصابیات, عصبی نفسیات&Nbsp;Edit this on Wikidata
عدمِ کلام
تخصصاعصابیات, عصبی نفسیات&Nbsp;Edit this on Wikidata

عدم کلام جیسا کہ نام سے ظاہر ہے کہ قوتِ کلام کے ناپید ہونے کو کہا جاتا ہے۔ یہاں قابل غور بات یہ ہے کہ لفظ کلام استعمال ہوا ہے نہ کہ آواز، یعنی آواز ختم ہو نا ہو (بعض اوقات آواز ختم بھی ہو جاتی ہے اور بعض اوقات آواز مکمل ختم نہیں بھی ہوتی)، دماغ کی وہ صلاحیت معذور ہوجاتی ہے کہ جو کلام یا قابل فہم گفتگو کا موجب ہوتی ہے۔ اسے حُبسہ بھی کہتے ہیں اور انگریزی میں aphasia کہا جاتا ہے۔ اوپر کے بیان سے یہ بات واضح ہو گئی ہوگی کہ یہاں عدم کلام سے مراد کلام کی ناپیدی یا کلام کا ناقص ہونا یا نا ہونا ہے اس سے مراد گونگے پن (mute) کی نہیں ہے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]