عدنان اکمل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
عدنان اکمل
Adnan akmal cropped.jpg
ذاتی معلومات
مکمل نامعدنان اکمل
پیدائش13 مارچ 1985ء (عمر 37 سال)
لاہور، پنجاب، پاکستان
قد1.65 میٹر (5 فٹ 5 انچ)
بلے بازیدائیں ہاتھ کا بلے باز
گیند بازیدائیں ہاتھ کا میڈیم گیند باز
حیثیتوکٹ کیپر
تعلقاتکامران اکمل (بھائی)
عمر اکمل (بھائی)
بابر اعظم (کزن)
محفوظ اعظم (کزن)
بین الاقوامی کرکٹ
قومی ٹیم
پہلا ٹیسٹ (کیپ 203)12 نومبر 2010  بمقابلہ  جنوبی افریقہ
آخری ٹیسٹ23–26 اکتوبر 2013  بمقابلہ  جنوبی افریقہ
پہلا ایک روزہ (کیپ 186)8 ستمبر 2011  بمقابلہ  زمبابوے
آخری ایک روزہ21 فروری 2012  بمقابلہ  انگلینڈ
ملکی کرکٹ
عرصہٹیمیں
2007–تاحالسوئی ناردرن گیس پائپ لائنز لمیٹڈ کرکٹ ٹیم
2006–2007لاہور راوی
2003–2007زرعی ترقیاتی بینک لمیٹڈ کرکٹ ٹیم
2005–2006ملتان
2004–2005لاہور بلیوز
2003–2004لاہور
2005–تاحاللاہور ایگلز
2019-تاحالجنوبی پنجاب
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ ٹیسٹ ایک روزہ بین الاقوامی فرسٹ کلاس کرکٹ لسٹ اے کرکٹ
میچ 21 5 170 101
رنز بنائے 591 62 6,519 1,629
بیٹنگ اوسط 24.62 20.66 29.10 23.60
100s/50s 0/3 0/0 9/34 0/6
ٹاپ اسکور 64 27 149* 85*
کیچ/سٹمپ 66/11 3/0 546/32 112/33
ماخذ: ESPNcricinfo، 14 March 2021

عدنان اکمل (پیدائش 13 مارچ 1985) ایک بین الاقوامی پاکستانی کرکٹر ہے۔ وہ ایک دائیں ہاتھ کے بلے باز اور وکٹ کیپر ہیں جو زرعی تراقیتی بینک لمیٹڈ کرکٹ ٹیم کے لیے کھیلتے ہیں اور انڈر 17 کی سطح پر اپنے ملک کی نمائندگی کر چکے ہیں۔ انہیں متحدہ عرب امارات میں جنوبی افریقہ کے خلاف پاکستان کے دورے کے لیے بلایا گیا تھا، پہلے پسند کیپر ذوالقرنین حیدر کے متبادل کے طور پر۔ ان کے بھائی، کامران اکمل اور عمر اکمل، دونوں کے پاکستان کرکٹ بورڈ کے ساتھ سینٹرل کنٹریکٹ تھے، اور قومی ٹیم میں باقاعدہ فکسچر تھے۔ عدنان نے اپنا ٹیسٹ ڈیبیو 12 نومبر 2010 کو جنوبی افریقہ کے خلاف کیا۔

گھریلو کیریئر

اپریل 2018 میں، انہیں 2018 کے پاکستان کپ کے لیے سندھ کے اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔ مارچ 2019 میں، انہیں 2019 کے پاکستان کپ کے لیے خیبر پختونخوا کے اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔ ستمبر 2019 میں، انہیں 2019-20 قائد اعظم ٹرافی ٹورنامنٹ کے لیے جنوبی پنجاب کے اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔ جنوری 2021 میں، انہیں 2020-21 پاکستان کپ کے لیے بلوچستان کے اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔

بین الاقوامی کیریئر

عدنان کو ذوالقرنین حیدر کی جگہ پاکستان ٹیسٹ اسکواڈ میں شامل کیا گیا تھا جنہوں نے مبینہ طور پر بکیز کی جانب سے دھمکیاں ملنے کے بعد بین الاقوامی کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا تھا۔ نیوزی لینڈ کے خلاف سیریز میں انہوں نے شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے مستقبل میں اپنی جگہ بنالی۔ وہ پاکستان اے کے وکٹ کیپر تھے۔

حوالہ جات[ترمیم]