عرفان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

عرفان ایک متصوفانہ اصطلاح ہے جس کے معنی ادراکِ حق کے ہیں ادراکِ حق سے مراد دراصل حقیقت کی کلی شناخت ہے ابتدائے آفرینش سے انسان آج تک مطلق سچائی کی تلاش میں سرگرداں ہے لیکن بجز انتقالِ جذبہ کے وہ کسی کلی حقیقت کا ادراک نہ کر سکا ادراک علم کا تخم ہے جس کے معنی ایک مابعدالطبیعاتی جراح کے ہیں جو کسی چیز کا مختلف زاویوں سے تجزیہ کرتا ہے جبکہ حقیقت تجربات سے ماراء ہے چنانچہ ادراکِ حق کے معنی انتقالِ جذبہ کے سوا کچھ نہیں اور انتقالِ جذبہ یہی ہے کہ آپ اچھی طرح جان لیں کہ محبت ہی اصل الاصول ہے۔