عقیدہ طحاویہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
عقیدہ طحاویہ
Imam al-Tahawi's Creed of Islam: An Exposition by Siraj al-Din al-Ghaznawi
مصنفابو جعفر احمد طحاوی
اصل عنوانبیان السنۃ والجماعۃ
مترجمامجد محمود
ملکمصر
زبانعربی،البانیہ، انگلش،فرانسیسی، انڈونیشی، مالے، فارسی، روسی زبان، ترکی اور اردو
موضوععقیدہ،توحید،اصول الدین (اسلامی الہیات)
ناشرہیریٹیج پریس یوکے
صفحات200 صفحات
آئی ایس بی این978-0993475665

عقیدة طحاویہ (عربی: العقيدة الطحاوية) یا بیان اتقاد اہل السنۃ والجماعۃ (عربی: بیان اعتقاد اهل السنة والجماعة) دسویں صدی کے مصری لوگوں کے ذریعہ لکھے گئے سنی مسلم نظریے کی ایک مقبول عقیدے کی کتاب ہے۔ اور حنفی فقیہ ابو جعفر احمد طحاویؒ نے تالیف کی۔ [1] [2]

عقیدہ طحاویہ کی متعدد مسلم اسکالرز نے تفسیریں لکھیں ہیں۔ جن میں اسماعیل بن ابراہیم الشیبانیؒ (متوفی 1000) کی تفسیر بھی شامل ہے۔ ہجری 629 (1231/1232) ، نجم الدین منکبرسؒ (متوفی 652ھ)، شجاع الدین الترکستانیؒ (متوفی 733ھ)، سراج الدین الغزنویؒ (متوفی 773ھ)، اکمل الدین البابرتی (متوفی 786ھ)، ابن ابی العزؒ (792ھ)، عبد الغنی المیدانیؒ (متوفی 1298ھ)، عبداللہ الحریریؒ (متوفی 1429ھ)، عمر عبداللہ کاملؒ (متوفی 1429ھ)۔ 1436ھ) اور سعید فودہؒ ۔ یہ 105 کلیدی نکات پر مشتمل ہے۔ جو اہل السنۃ والجماعت کے عقیدہ میں ضروری امور کی فہرست دیتے ہیں۔ 

مشمولات[ترمیم]

متون عقیدہ کے بہت سے نکات کو اٹھاتے ہیں۔ جو ضروری امور ہیں اور سنی مسلمان کے عقیدے کی وضاحت کرتے ہیں، مندرجہ ذیل موضوعات کا احاطہ کرتے ہیں:

  1. عقیدہ اہل السنۃ والجماعۃ کا بیان
  2. الٰہی اتحاد
  3. اللہ کے ابدی اور لازوال اسماء و صفات
  4. اللہ کی تدبیر
  5. محمد (صلی اللہ علیہ وسلم) اور ان کی تفصیل
  6. قرآن: اللہ کا ابدی کلام
  7. بیٹیفک ویژن
  8. نبی صلی اللہ علیہ وسلم کا رات کا سفر اور معراج
  9. بیت اللہ اور شفاعت
  10. وہ عہد جو آدم علیہ السلام اور ان کی اولاد سے کیا گیا تھا۔
  11. خدائی حکم اور پیشگی تعین
  12. محفوظ شدہ گولی اور قلم
  13. اللہ کی مخلوق کی صفت
  14. عرش اور قدموں کی چوکی۔
  15. فرشتے، انبیاء اور نازل شدہ کتابیں۔
  16. اہل قبلہ کو مسلمان قرار دینا
  17. اللہ کی ذات کے بارے میں بحث کرنا
  18. قرآن کے بارے میں بحث کرنا
  19. مسلمان پر کفر کا الزام لگانا جائز ہے۔
  20. ایمان کا مفہوم
  21. ایمان نہ بڑھتا ہے نہ گھٹتا ہے۔
  22. بڑے گناہگاروں کا انجام
  23. مسلمان کی حیثیت
  24. مسلم لیڈروں کے خلاف بغاوت
  25. جوتے پر مسح کرنا
  26. حج اور جہاد
  27. گارڈین فرشتے جو صحیفہ تھے۔
  28. قبر اور اس کی ریاستیں۔
  29. قیامت
  30. جنت اور جہنم
  31. وہ صلاحیت جو اعمال کے ساتھ ہے۔
  32. غلاموں کے اعمال
  33. میت کی طرف سے دعا اور خیرات
  34. اللہ کا غضب اور رضا
  35. اصحاب رسولؓ سے محبت
  36. خلافت کا حکم
  37. جنت کی بشارت دینے والے دس
  38. اسکالرز کی اچھی بات کرنا
  39. ولی عہد کا درجہ
  40. آخری گھڑی۔قیامت کی نشانیاں
  41. جادوگر اور کاہن
  42. جماعت کی پابندی کرنا

مخطوطات[ترمیم]

اسکندریہ میں محفوظ ہونے والے قدیم ترین نسخے ہجری 783 (1381/1382) میں لکھے گئے تھے۔ [3]

ترجمے[ترمیم]

انگریزی ایڈیشن[ترمیم]

اس کتاب کا انگریزی میں ترجمہ کیا گیا ہے اور عنوان کے تحت شائع کیا گیا ہے:

  • اسلامی عقیدہ ، ترجمہ اور 1995 میں IQRA انٹرنیشنل ایجوکیشنل فاؤنڈیشن نے شائع کیا۔ [4]
  • اسلامی عقیدہ: عقیدہ طحاویہ (نظر ثانی شدہ ایڈیشن) اقبال احمد اعظمی کی تدوین۔ یو کے اسلامک اکیڈمی نے 2002 میں ترجمہ اور شائع کیا۔
  • The Creed of At-Thawiyy (سنی عقیدہ کی مختصر وضاحت) ، دوسرا ایڈیشن 2003 میں The Association of Islamic Charitable Projects in USA کے ذریعہ شائع ہوا۔ [5]
  • عقیدہ الطحاوی ، دارالعلوم دیوبند کے سابق ریکٹر قاری محمد طیب کی تفسیر کے ساتھ شائع ہوا۔ افضل حسین الیاس کا انگریزی ترجمہ۔ پہلی بار 2007 میں زم زم پبلشرز نے شائع کیا۔ [6]
  • امام طحاوی کا عقیدہ ، ترجمہ، تعارف اور تشریح حمزہ یوسف نے کیا۔ پہلی بار 2009 میں Fons Vitae کے ذریعہ شائع ہوا۔
  • امام طحاوی کا عقیدہ ، ترجمہ محمد ابراہیم تیموری۔ خود مترجم کے مطابق یہ ترجمہ حمزہ یوسف اور اقبال احمد اعظمی کی تخلیقات کا بہت زیادہ مرہون منت ہے۔
  • ' عقیدہ طحاویہ (کنڈل ایڈیشن)، طاہر محمود کیانی نے ترجمہ کیا۔ پہلی بار 2012 میں ٹی ایم کیانی نے شائع کیا۔ [7]
  • عقائد طحاویہ: عربی متن انگریزی ترجمہ اور تفسیر کے ساتھ ، فہیم ہوسن نے ترجمہ اور تیار کیا ہے۔ اس ایڈیشن میں ایک مختصر اور سادہ تفسیر شامل ہے۔ اظہر اکیڈمی نے پہلی بار 2015 میں شائع کیا ہے۔ [8] [9] دوسرا ایڈیشن دارالثقفہ نے 2018 میں شائع کیا۔
  • امام طحاوی کا عقیدہ اسلام: ایک نمائش ، امجد محمود نے ترجمہ کیا ہے۔ اس ایڈیشن میں حنفی عالم، جج اور ماتریدی ماہر الٰہیات Abu Hafs Siraj al-Din al-Ghaznawi [ar] کی تفسیر شامل ہے۔ (متوفی 773/1372)۔ ہیریٹیج پریس کے ذریعہ پہلی بار 2020 میں شائع ہوا۔ [10]

فرانسیسی ایڈیشن[ترمیم]

  • عقیدہ طحاویہ (La profession de foi des gens de la Sunna) ، کورینٹین پابیوٹ نے ترجمہ اور تبصرہ کیا ہے۔ [11] Maison d'Ennour کے ذریعہ 2015 میں شائع ہوا۔ [12]

مالائی ایڈیشن[ترمیم]

  • ترجمہن عقیدہ طحاویہ ، راجہ احمد مخلص الازہری نے ترجمہ کیا ہے۔ [13]

فارسی ایڈیشن[ترمیم]

  • عقیدہ طحاوی ، ترجمہ محمد ابراہیم تیموری، سعید احمد پالنپوری کے پیش لفظ کے ساتھ۔
  • عقیدہ طحاوی ، ترجمہ سعدی محمودی نے۔ [14]

روسی ایڈیشن[ترمیم]

ترکی ایڈیشن[ترمیم]

  • اہل سنت اکیدی؛ محتسر طحاوی اکدیسی شرہی ، ترجمہ Ebubekir Sifil [tr] [16] [17]
  • Tahâvî Şerhi Bâberî Tercümesi ، اکمل الدین الببرتی (متوفی 786/1384) کی تفسیر کے ساتھ اسمائلا فکیہ و تیلف کورولو کا ترجمہ۔ [18]
  • طحاوی اکیدی بابرتی شرحی ، البابرتی (متوفی 786/1384) کی تفسیر کے ساتھ ترجمہ ازیت کاراسکال۔ [19]
  • طحاوی اکیدیسی ببرطی شرحی ، الببرتی (متوفی 786/1384) اور Siraj al-Din al-Ghaznawi [ar] کی تفسیر کے ساتھ ترجمہ (d. 773/1372) از یاسین کراتاش۔ [20]
  • اسلام اکیڈ میٹنلیری ، ترجمہ علی پیکن نے کیا۔ [21]

اردو ایڈیشن[ترمیم]

  • شرح العقیدہ الطحاویہ، احسان اللہ شایق کی تفسیر کے ساتھ ترجمہ۔ [22]
  • العسیدہ السماویہ شرح العقیدہ الطحاویہ ، ردا الحق کی تفسیر کے ساتھ ترجمہ۔ [23]
  • عقائد طحاوی و العقائد الحسنۃ ، ترجمہ عبد الحمید خان سواتی۔ کتاب میں عقیدہ کے بارے میں دو کام شامل ہیں جن کا ترجمہ اور ایک ہی موضوع پر اشتراک کی وجہ سے ایک ساتھ شائع کیا گیا ہے۔ پہلا عقیدہ طحاویہ ہے اور دوسرا شاہ ولی اللہ کی عقیدہ الحسنۃ ہے۔ [24]

ازبک ایڈیشن[ترمیم]

  • عقیدہ طحاویہ شریننگ تلقیسی ، محمد انور بدخشانی کی "تلخیس شرح عقیدہ طحاویہ" کا ترجمہ شیخ محمد صادق محمد یوسف نے کیا ہے۔ [25]

مزید پڑھنے[ترمیم]

  • امام طحاوی کا عقیدہ؛آئی ایس بی این 097028439X
  • اسلام کی آوازیں: روایت کی آوازیں، ص 208۔آئی ایس بی این 0275987337آئی ایس بی این 0275987337

مزید دیکھو[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Vincent J. Cornell, Voices of Islam: Voices of tradition, p 208. آئی ایس بی این 0275987337
  2. Bosworth، C.E.؛ van Donzel، E.؛ Heinrichs، W.P.؛ Lecomte، G.؛ Bearman، P.J.؛ Bianquis، Th. (2000). Encyclopaedia of Islam. X (T-U) (ایڈیشن New). Leiden, Netherlands: Brill. صفحہ 101/102. ISBN 9004112111. 
  3. Ibn-Abi-Al-Izz، Ibn Abi. Commentary on The Creed of At-Tahawi. Al-Imam Muhammad ibn Saud Islamic University. صفحات xxxiv. 
  4. Islamic Belief. IQRA International Educational Foundation. 1995. صفحات 22 pages. ISBN 9781563160585. 
  5. "The Creed of At-Tahawiyy (A Brief Explanation of The Sunniy Creed)". islamicplace.com. 14 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 03 جون 2022. 
  6. "Aqeedatut Tahawi with Commentary by Qari Muhammad Tayyib". 15 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 15 نومبر 2020. 
  7. "Al-'Aqidat at-Tahawiyyah". گڈ ریڈز. 14 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  8. "Al-Aqida al-Tahawiyya (With English Commentary)". 16 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 16 نومبر 2020. 
  9. "Al-Aqida al-Tahawiyya (With English Commentary)". meccabooks.com. 14 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 03 جون 2022. 
  10. "Imam Al-Tahawi's Creed of Islam". heritagepress.co.uk. Heritage Press. 
  11. "La 'Aqîda Tahâwiyya, traduit et annoté par Corentin Pabiot". 16 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 16 نومبر 2020. 
  12. "La 'Aqîda Tahâwiyya (La Profession De Foi Des Gens De La Sunna)". 16 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 16 نومبر 2020. 
  13. "Terjemahan Al-Aqidah Al-Thahawiyyah". 17 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2020. 
  14. "عقيده طحاوي". persianbook.org. Persian Books Corporation. 13 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  15. "Акыда ат-Тахавийя. Разъяснение вероубеждения Ахлю-Сунна валь Джама'а". 14 August 2018. 17 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2020. 
  16. "Ehl-i Sünnet Akaidi; Muhtasar Tahâvî Akidesi Şerhi". 17 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2020. 
  17. "Ehli Sünnet Akaidi, Muhtasar Tahavi Akidesi Şerhi, Ebubekir Sifil". 17 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2020. 
  18. "Tahâviyye Şerhi Bâbertî Tercümesi (Kırık Manalı – İzahlı)". 17 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2020. 
  19. "Tahavi Akaidi Baberti Şerhi, İmam Tahavi, İmam Baberti". 17 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2020. 
  20. Tahavi Akidesi Baberti Şerhi: İsmiyle Meşhur Olan Gaznevi Şerhi. Ilim ve Hikmet Yayinlari. 2018. صفحات 346 pages. ISBN 9786052451694. 
  21. "İslam Akaid Metinleri". 17 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2020. 
  22. "Sharh Aqeedatul Tahawiyah". 15 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 15 نومبر 2020. 
  23. "Al-Aseedah as-Samawiyyah Sharh al-Aqeedah At-Tahawiyyah". 15 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 15 نومبر 2020. 
  24. "Aqidat al-Tahawi wa al-Aqidah al-Hasanah". 16 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 16 نومبر 2020. 
  25. ""Ақийдатут-Таҳовия шарҳининг талхийси"".