علووالی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
علووالی
شہر کوچک اور یونین کونسل
ملک پاکستان
صوبہ پنجاب
ضلع میانوالی
تحصیل پپلاں
منطقۂ وقت پاکستان کا معیاری وقت (UTC+5)

علووالی میانوالی کا ایک دیہی شہر اور یونین کونسل ہے۔

علووالی کے ابتدائی حالات اور دور سکھ شاہی[ترمیم]

1801 میں بعہد نواب محمد خان سدوزئی بستی چونیاں علو والی کو آباد کیا گیا۔ یہ خطہ ارض آبادکاری سے لیکر سکھوں کی آمد 1821 تک نوابزادگان آف ڈیرہ کی عملداری میں رہا۔ جس کی پہلی مرتبہ باضابطہ ملکیتی سند بھی بانی علو والی کے نام نواب آف ڈیرہ نے جاری کی۔ جبکہ 1821 میں یہ علاقہ سکھوں کی حکومت میں شامل ہوگیا۔ اس طرح ڈیرہ کے نوابوں اور سکھوں کا عرصہ اقتدار تقریباً 46 سال بنتا ہے ہے۔ اس چھیالیس سالہ دور حکومت میں گاؤں علووالی کے قیام تبدیلی نام اور بانیان علووالی کے قتل و غارت گری کے واقعات رونما ہوئے اور مالکان اعلیٰ کے مابین تقسیم جاگیر وغیرہ جیسے ذاتی تنازعات بھی سرگرم عمل رہے۔ علاوہ ازیں وصال حضرت معصوم شاہ کا مرحلہ طے ہوا، جس کے ساتھ ہی اس سرزمین کی تاریخ کا پہلا قبرستان جاری ہوگیا۔ قبل ازیں یہاں کوئی اپنا قبرستان موجود نہیں تھا۔ جبکہ متحدہ پنجاب کی مشہور و معروف گزرگاہ شیر شاہ سوری کی یادگار سڑک جرنیلی روڈ یہاں پہلے سے موجود تھی۔[1]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. تاریخ علو والی از اعجاز علو والوی، صفحہ 88