مسیحیت

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
(عیسائیت سے رجوع مکرر)
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
مسیحیت
صلیب: مسیحی مذہبی نشانی
صلیب: مسیحی مذہبی نشانی

بانی یسوع مسیح[1]
مقام ابتدا یروشلم،
Vexilloid of the Roman Empire.svg رومی سلطنت
ابتدا یہودیت سے (مسیحیوں کے عقائد کے مطابق یسوع مسیح الگ مذہب نہیں بنانے آئے تھے بلکہ وہ یہودیت کی اصلاح کے لیے آئے تھے۔)
فرقے کیتھولکیت، مشرقی، اورینٹل، پروٹسٹنٹ
مقدس مقامات
قریبی عقائد والے مذاہب حنیفیت، یہودیت، اسلام، مندائیت، بہائیت
مذہبی خاندان ابراہیمی مذہب
پیروکاروں کی تعداد The Earth seen from Apollo 17 with transparent background.png 2.4 بلین (2015ء)[2][3]

مسیحیت (انگریزی: Christianity) ایک تثلیث کا عقیدہ رکھنے والا گروہ، جو یسوع مسیح کو خدا کا بیٹا اور خدا کا ایک اقنوم مانتا ہے۔ اور اسے بھی عین اسی طرح خدا مانتا ہے، جیسے خدا اور روح القدس کو۔ جنہیں باپ، بیٹا اور روح القدس کا نام دیا جاتا ہے، بعض فرقے، مسیح، خدا اور روح القدس کی جگہ مریم کو خدائی جزو مانتے ہیں، جبکہ بعض مسیح کو صرف نبی مانتے ہیں۔ مسیحیت دنیا کا پہلا بڑا مذہب ہے جس کے پیروکار دنیا میں سب میں زیادہ مقدار میں موجود ہیں۔[4]

سرتعارف[ترمیم]

مسیحیت مذہب پہلی صدی عیسوی میں وجود میں آیا۔ یسوع مسیح جن کو اسلامی دنیا عیسیٰ علیہ السلام کے نام سے پکارتی ہے، ان کو تثلیث کا ایک جزو یعنی خدا ماننے والے مسیحی کہلاتے ہیں۔ لیکن کئی فرقے مسیح کو خدا نہیں مانتے وہ انہیں ایک نبی یا عام انسان مانتے ہیں۔

مسیحیت میں تین خداؤں کا عقیدہ بہت عام ہے جسے تثلیت بھی کہا جاتا ہے۔ عام طور پر مسیحی کہتے ہیں مسیحیت میں خدا کا تصور، بیٹا، روح القدس ایک ہے اور وہ اپنے آپ کو موحدین (ایک خدا کے ماننے والے) کہتے ہیں۔ اور اسے توحید فی التثلیث کا نام دیتے ہیں۔

مسیحیت ایک سامی مذہب ہے۔ یہ تحقیق کے مطابق پوری دنیا میں اس کے لگ بھگ دو ارب پیروکار ہیں۔[4] مسیحی یسوع مسیح پر اعتقاد رکھتے ہیں۔ مقدس بائبل مسیحیوں کی مقدس کتاب ہے۔

مقدّس کتب[ترمیم]

بائبل مسیحیت کی مقدس کتاب ہے۔
ا ) بائبل کو دو حصّوں میں تقسیم کیا جاتا ہے، عہد نامہ قدیم (عتیق) اور عہد نامہ جدید۔ عہد نامہ قدیم یہودیوں کی مقدس کتاب ہے اور اس میں موسی ‎سے پہلے تمام انبیاء کے حالات کو ضبط تحریر میں لایا گیا ہے۔ عہد نامہ جدید یسوع مسیح کے احوال پر مشتمل ہے۔
ب ) عہد نامہ قدیم اور عہد نامہ جدید کو ملا کر پوری بائبل 73 کتب پر مشتمل ہے۔ تاہم پروٹسٹنٹ بائبل جو کنگ جیمز ورژن کہلاتا ہے، 66 کتب پر مشتمل ہے۔ کیوں کہ یہ 7 کتابوں کو مشکوک سمجھتے ہیں۔ اور اس کی سند پر شک کرتے ہیں۔
اس لئے کیتھولک فرقے کے عہد نامہ قدیم میں 46 کتب ہیں جبکہ پروٹشٹنٹ کے عہد نامہ قدیم میں 39 کتب ہیں۔ جبکہ دونوں فرقوں کا عہد نامہ جدید 27 کتب پر مشتمل ہے۔
مسیحیت میں کئی فرقے ہیں، جن میں دو بڑے فرقے ہیں کیتھولک اور پروٹسٹنٹ ۔ [5]

نگار خانہ[ترمیم]

مزید دیکھیے[ترمیم]


حوالہ جات[ترمیم]

  1. يسوع المسيح (بالإنجليزية)، الموسوعة البريطانية، 27 كانون الأول 2010.
  2. المسيحية عام 2015: التنوع الديني والإتصال الشخصي، غوردون كونويل؛ 29 مايو 2015. (انگریزی زبان میں)
  3. الأديان حول العالم (بالإنجليزية)، الموسوعة البريطانية صفحة 324، 27 كانون الأول 2013. (انگریزی زبان میں)
  4. ^ 4.0 4.1 مذاہب بلحاظ آبادی: مسیحیت پہلے جبکہ اسلام دوسرے نمبر پہ Top Ten Organized Religions of the World اخذ کردہ بتاریخ 12 جولائی 2017ء
  5. مذاہب عالم میں خداکا تصّور، مصنّف: ڈاکٹر ذاکر نائیک، صفحہ :53