غلام قادر بھیروی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

مولانا غلام قادر ہاشمی سیالوی بھیروی اہلسنت کے مشہور و معروف اولیا و علما میں شمار ہتے ہیں

ولادت[ترمیم]

مولانا غلام قادر بھیروی کی ولادت 1265ھ مطابق 1849ء بھیرہ شریف ضلع سرگودھا پاکستان میں ہوئی۔

تعلیم و تربیت[ترمیم]

آپ کی ابتدائی تعلیم وتربیت مرکزالاولیاء لاہور میں ہوئی، بعد اَزاں ہند اور پاکستان کے نامور علمائے کرام کی بارگاہ میں زانوئے تلمذ تہہ کئے۔علامہ حافظ غلام محی الدین بگوی نقشبندی اورصدر الصدور مفتی صدر الدین آزردہ کا نام نمایاں ہے۔ آپ عرصہ درازتک جامعہ نعمانیہ میں تدریس فرماتے رہے،

بیعت و خلافت[ترمیم]

آپ سلسلہ عالیہ چشتیہ میں شمس العارفین خواجہ شمس الدین چشتی سیالوی سے بیعت ہوئے اور اجازت و خلافت سے بہرہ ور ہوئے۔آپ بحرِ علوم وفنون تھے۔آپ کوقطبِ لاہور کہا جاتاتھا۔

تصانیف[ترمیم]

آپ کئی کتب بھی تحریر فرمائیں، جن میں

  • اسلام کی گیارہ کتابیں
  • شَمسُ الضُّحٰی فِی مَدحِ خَیرِ الْوَریٰ
  • حقیقتِ انوارِمحمدیہ وغیرہ مشہورتصانیف ہیں۔

تلامذہ[ترمیم]

مولانا ضیاء الدین احمدمدنی، مفسرقرآن مولانا نبی بخش حلوائی اور امیرملت پیر سید جماعت علی شاہ محدث علی پوری آپ کے مشہور تلامذہ میں سے ہیں۔

وفات[ترمیم]

آپ نے19 ربیع الاول 1327ھ مطابق10، اپریل 1909ء کو وصال فرمایا۔مزار مبارک بیگم شاہی مسجد اندرون شہر الاہور پاکستان میں مَرجَعِ خَلائِق ہے۔ [1][2][3]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. تذکرہ اکابر اہل سنت: محمد عبد‌الحکیم شرف قادری:صفحہ 326 نوری کتب خانہ لاہور
  2. سیدی ضیاء الدین احمد القادری، 1/613،
  3. فیضانِ شَمسُ العَارِفِین صفحہ 64 مکتبۃالمدینہ، باب المدینہ کراچی