فرحت بانو

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
فرحت بانو
معلومات شخصیت
شریک حیات خواجہ شہاب الدین  ویکی ڈیٹا پر (P26) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

فرحت بانو ڈھاکہ نواب خاندان کی رکن اور برطانوی ہندوستان میں بنگال قانون ساز اسمبلی کی رکن تھیں۔ اس کے چچا سر خواجہ سلیم اللہ ڈھاکہ کے نواب تھے۔

کیریئر[ترمیم]

فرحت بانو برطانوی راج کی سب سے بڑی مقننہ، بنگال قانون ساز اسمبلی کی رکن تھیں۔ وہ اس کمیٹی میں منتخب کمیٹی کی ایک رکن تھیں۔ اس کمیٹی میں ان کے علاوہ دیگر 21 خواتین ارکان بھی تھیں۔ [1] انہوں نے بنگال قانون ساز اسمبلی میں یتیم خانے اور وڈو ہوم ایکٹ 1944 میں متعارف کرایا۔ [2] اس نے اس بل کی ایک کاپی ناری رکش سمیتی کے سکریٹری کموڈینی باسو کو دی۔ [3]

ذاتی زندگی[ترمیم]

فرحت بانو کی شادی 1912 میں ڈھاکہ نواب خاندان کے خواجہ شہاب الدین سے ہوئی۔ خواجہ شہاب الدین پاکستان کے شمال مغربی سرحدی صوبے کے گورنر تھے اور انہوں نے پاکستان کی کابینہ میں وزیر کی حیثیت سے خدمات انجام دیں۔ خواجہ شہاب الدین 9 فروری 1977 کو پاکستان کے شہر کراچی میں انتقال کر گئے۔ [4] اس کے والد نوابزادہ خواجہ عتیق اللہ بھی ڈھاکہ نواب خاندان کے ایک رکن تھے اور ان کے چچا سر خواجہ سلیم اللہ، ڈھاکہ کے نواب تھے۔ اس کا بیٹا لیفٹیننٹ جنرل خواجہ وصی الدین تھا۔ [5] اس کا دوسرا بیٹا خواجہ ذکی الدین تھا جو مشرقی پاکستان میں ایک بینکار تھا۔ ذکی الدین کی شادی بیگم بنو ذکی الدین سے ہوئی تھی، ان کی دو بیٹیاں الماس ذکی الدین اور یاسمین مرشد اور ایک بیٹا زاہد ذکی الدین تھے۔ معروف ماہر معاشیات رحمان سوبھن، ان کے شوہر کی بھانجی حشمت آرا بیگم کی شادی کھنڈوکر فضل سوبھن سے ہوئی تھی۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Tripathi، Dwijendra (1987). State and Business in India: A Historical Perspective (بزبان انگریزی). Manohar Publications. صفحہ 253. ISBN 9788185054261. 
  2. Halim، M. Abdul (1993). Social Welfare Legislation in Bangladesh (بزبان انگریزی). Oihik. صفحہ 141. اخذ شدہ بتاریخ 28 نومبر 2017. 
  3. The Modern Review (بزبان انگریزی). Modern Review Office. 1941. صفحہ 610. اخذ شدہ بتاریخ 28 نومبر 2017. 
  4. Alamgir، Mohammad. "Shahabuddin, Khwaja". en.banglapedia.org. Banglapedia. اخذ شدہ بتاریخ 10 مارچ 2016. 
  5. Bangladesh، Asiatic Society of (2003). Banglapedia: national encyclopedia of Bangladesh (بزبان انگریزی). Asiatic Society of Bangladesh. صفحہ 208. ISBN 9789843205841.