فلسطین میں اسلام

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

فلسطین میں اسلام ایک بڑا مذہب ہے، یہ فلسطینی آبادی کی اکثریت کا مذہب ہے۔ فلسطینی مسلمانوں میں سب سے بڑا فرقہ 85% سنی ہیں (زیادہ تر شافعی) اور دیگر 14% غیر فرقہ پرست مسلمان ہیں۔

آبادی[ترمیم]

اسلام[ترمیم]

آج اسلام غزہ اور مغربی کنارے دونوں میں ایک ممتاز مذہب ہے۔ ریاست فلسطین میں زیادہ تر آبادی مسلمانوں کی ہے۔ (85% مغربی کنارے میں اور 99% غزہ کی پٹی میں)[1][2]

سنی اسلام[ترمیم]

سنی فلسطینی مسلمانوں میں 85% ہیں،[3] جن میں زیادہ تر شافعی ہے، جو سنی اسلام میں اسلامی فقہ کے چار مکاتب میں سے ایک ہے۔ سلفیت نے 1970ء کی دہائی میں غزہ میں جڑ پکڑی، جب فلسطینی طلباء سعودی عرب کے مذہبی اسکولوں میں بیرون ملک تعلیم حاصل کرکے واپس آئے۔ غزہ میں متعدد سلفی گروہوں کو ریاض سے مالی امداد مل رہی ہے۔[4][5]

شیعہ اسلام[ترمیم]

1923ء سے 1948ء تک، فلسطین میں شیعہ اکثریت والے سات گاؤں تھے (جسے میتاولی بھی کہا جاتا ہے): تربیخا، صلحہ، مالکیہ، النبی یوشع، قدس، ہونین اور آبل القمح۔[6] یہ دیہات 1923ء کے سرحدی معاہدے کے نتیجے میں فرانسیسیوں سے برطانوی علاقے میں منتقل ہوئے تھے۔ ان سب کو 1948ء کی عرب اسرائیل جنگ کے دوران خالی کر دیا گیا تھا اور ان کے سابقہ ​​مقامات اب شمالی اسرائیل میں ہیں۔ 1931ء کی مردم شماری میں فلسطین میں 4,100 میٹاوالیوں کی گنتی کی گئی۔[7]

1979ء کے بعد سے، ایران کے اثر و رسوخ کی وجہ سے، کچھ فلسطینی سنیوں نے شیعہ اسلام قبول کیا۔ اسرائیلی ہاریتز نے 2012ء میں رپورٹ کیا کہ حماس کے غزہ میں بڑھتے ہوئے ایرانی اثر و رسوخ کے خوف کی وجہ سے تنظیم نے خیراتی اداروں سمیت شیعہ تنظیموں کے خلاف کریک ڈاؤن کیا۔ اس کے باوجود غزہ کی پٹی میں شیعہ بننے کا رجحان بڑھتا جا رہا ہے۔

احمدیہ[ترمیم]

احمدیہ فلسطین میں ایک چھوٹا فرقہ ہے۔ کمیونٹی، جسے مرکزی دھارے کے مسلمانوں نے حقیقی اسلامی کے طور پر تسلیم نہیں کیا ہے، اسے ظلم و ستم کا سامنا ہے اور مقامی شرعی عدالتوں کی طرف سے عائد ازدواجی پابندیوں کا سامنا ہے۔ اگرچہ کوئی تخمینہ دستیاب نہیں ہے، رپورٹس بتاتی ہیں کہ مغربی کنارے میں "درجنوں" فلسطینی احمدی مسلمان ہو چکیں ہیں۔[8]

بلا فرقہ مسلمان[ترمیم]

پیو ریسرچ سینٹر کے مطابق فلسطینی مسلمانوں کی آبادی کا 15 فیصد بلا فرقہ مسلمان ہیں۔[3]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "The World Factbook." CIA. 19 December 2015. West Bank
  2. "The World Factbook." CIA. 19 December 2015.
  3. ^ ا ب "Religious Identity Among Muslims". Pew Research Center's Religion & Public Life Project (بزبان انگریزی). 2012-08-09. اخذ شدہ بتاریخ 06 جولا‎ئی 2020. 
  4. Clarke، Colin P. (2019-08-14). "How Salafism's Rise Threatens Gaza". Foreign Affairs : America and the World (بزبان انگریزی). ISSN 0015-7120. اخذ شدہ بتاریخ 06 جولا‎ئی 2020. 
  5. Read The 'Wahhabi Myth' Online by Haneef James Oliver | Books (بزبان انگریزی). 
  6. Kaufman (2006). The 1922 census also listed the Muslim minority in البصہ، عکا as Shia, but Kaufman determined they were actually Sunni.
  7. Census of Palestine 1931; Palestine Part I, Report. Volume 1. Alexandria. 1933. صفحہ 82. 
  8. Maayana Miskin (May 31, 2010). "PA's Moderate Muslims Face Threats". Israel National News. اخذ شدہ بتاریخ March 11, 2015.