فہرست اراکین اقوام متحدہ سلامتی کونسل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے

یہ فہرست اقوام متحدہ سلامتی کونسل (United Nations Security Council) کے اراکین ممالک کی ہے۔

موجودہ رکنیت[ترمیم]

مستقل ارکان[ترمیم]

ملک علاقائی گروہ تاریخ رکنیت
 چین ایشیا بحر الکاہل گروپ جمہوریۂ چین
 فرانس مغربی یورپی اور دیگر گروپ 1946
 روس مشرقی یورپی گروپ 1991
 مملکت متحدہ مغربی یورپی اور دیگر گروپ 1946
 ریاستہائے متحدہ مغربی یورپی اور دیگر گروپ 1946

غیر مستقل ارکان[ترمیم]

ملک علاقائی گروہ مدت شروع مدت ختم
 آذربائیجان مشرقی یورپی گروپ 2012 2013
 ارجنٹائن لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ 2013 2014
 آسٹریلیا مغربی یورپی اور دیگر گروپ 2013 2014
 گواتیمالا لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ 2012 2013
 جنوبی کوریا ایشیا بحر الکاہل گروپ 2013 2014
 مراکش افریقی گروپ (عربی نمائندہ) 2012 2013
 پاکستان ایشیا بحر الکاہل گروپ 2012 2013
 لکسمبرگ مغربی یورپی اور دیگر گروپ 2013 2014
 روانڈا افریقی گروپ 2013 2014
 ٹوگو افریقی گروپ 2012 2013
موجودہ اراکین اقوام متحدہ سلامتی کونسل
  مستقل ارکان
  غیر مستقل ارکان

علاقائی گروپ[ترمیم]

افریقی گروپ: 3 ارکان ایشیا بحر الکاہل گروپ: 2 ارکان مشرقی یورپی گروپ: 1 رکن لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ: 2 ارکان مغربی یورپی اور دیگر گروپ: 2 ارکان؛ کم از کم ایک مغربی یورپ سے ہونا ضروری ہے۔

انتخابی نظام الاوقات[ترمیم]

مدت آغاز سال: طاق جفت
افریقی گروپ ایک رکن دو ارکان *
ایشیا بحر الکاہل گروپ ایک رکن ایک رکن *
مشرقی یورپی گروپ کوئی نہیں ایک رکن
لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ ایک رکن ایک رکن
مغربی یورپی اور دیگر گروپ دو ارکان کوئی نہیں

رکنیت بلحاظ سال[ترمیم]

سال لاطینی امریکی نشستیں دولت مشترکہ نشستیں مشرقی یورپ
اور ایشیائی نشستیں [note 1]
مشرق وسطی نشستیں مغربی یورپی نشستیں
1946  برازیل  میکسیکو  آسٹریلیا  پولینڈ  مصر  نیدرلینڈز
1947  کولمبیا  سوریہ  بلجئیم
1948  ارجنٹائن  کینیڈا  یوکرینی سوویت اشتراکی جمہوریہ
1949  کیوبا  مصر  ناروے
1950  ایکواڈور  بھارت  یوگوسلاویہ
1951  برازیل  ترکیہ  نیدرلینڈز
1952  چلی  پاکستان  یونان
1953  کولمبیا  لبنان  ڈنمارک
1954  برازیل  نیوزی لینڈ  ترکیہ
1955  پیرو  ایران  بلجئیم
1956  کیوبا  آسٹریلیا  یوگوسلاویہ
1957  کولمبیا  فلپائن  عراق  سویڈن
1958  پاناما  کینیڈا  جاپان
1959  ارجنٹائن  تونس  اطالیہ
1960  ایکواڈور  ڈومنین سیلون ||  پولینڈ
1961  چلی  ترکیہ  متحدہ عرب جمہوریہ  لائبیریا [note 2]
1962  وینیزویلا  گھانا  رومانیہ  جمہوریہ آئرلینڈ
1963  برازیل  فلپائن  مراکش[note 3]  ناروے
1964  بولیویا  آئیوری کوسٹ[note 4]  چیکوسلوواکیہ
1965  یوراگوئے  ملائیشیا  اردن  نیدرلینڈز

1966–2013[ترمیم]

سال افریقی گروپ
* عرب ممالک کے نمائندے
ایشیا بحر الکاہل گروپ
* ایشیائی ممالک کے نمائندے
لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ مغربی یورپی اور دیگر گروپ مشرقی یورپی گروپ
1966  مالی  نائجیریا  یوگنڈا  جاپان  اردن *  ارجنٹائن  یوراگوئے  نیدرلینڈز  نیوزی لینڈ  بلغاریہ
1967  ایتھوپیا  بھارت  برازیل  کینیڈا  ڈنمارک
1968  الجزائر *  سینیگال  پاکستان  پیراگوئے  مجارستان
1969  زیمبیا  نیپال  کولمبیا  فن لینڈ  ہسپانیہ
1970  برونڈی  سیرالیون  سوریہ *  نکاراگوا  پولینڈ
1971  صومالیہ  جاپان  ارجنٹائن  بلجئیم  اطالیہ
1972  جمہوریہ گنی  سوڈان *  بھارت  پاناما  یوگوسلاویہ
1973  کینیا  انڈونیشیا  پیرو  آسٹریلیا  آسٹریا
1974  کیمرون  موریتانیہ  عراق *  کوسٹاریکا  بیلاروسی سوویت اشتراکی جمہوریہ
1975  تنزانیہ  جاپان  گیانا  اطالیہ  سویڈن
1976  بینن  لیبیا *  پاکستان  پاناما  رومانیہ
1977  موریشس  بھارت  وینیزویلا  کینیڈا  مغربی جرمنی
1978  گیبون  نائجیریا  کویت *  بولیویا  چیکوسلوواکیہ
1979  زیمبیا  بنگلادیش  جمیکا  ناروے  پرتگال
1980  نائجر  تونس *  فلپائن  میکسیکو  مشرقی جرمنی
1981  یوگنڈا  جاپان  پاناما  جمہوریہ آئرلینڈ  ہسپانیہ
1982  ٹوگو  زائر  اردن *  گیانا  پولینڈ
1983  زمبابوے  پاکستان  نکاراگوا  مالٹا  نیدرلینڈز
1984  برکینا فاسو[note 5]  مصر *  بھارت  پیرو  یوکرینی سوویت اشتراکی جمہوریہ
1985  مڈغاسکر  تھائی لینڈ  ٹرینیڈاڈ و ٹوباگو  آسٹریلیا  ڈنمارک
1986  جمہوریہ کانگو  گھانا  متحدہ عرب امارات *  وینیزویلا  بلغاریہ
1987  زیمبیا  جاپان  ارجنٹائن  مغربی جرمنی  اطالیہ
1988  الجزائر *  سینیگال  نیپال  برازیل  یوگوسلاویہ
1989  ایتھوپیا  ملائیشیا  کولمبیا  کینیڈا  فن لینڈ
1990  آئیوری کوسٹ  زائر  یمن *[note 6]  کیوبا  رومانیہ
1991  زمبابوے  بھارت  ایکواڈور  آسٹریا  بلجئیم
1992  کیپ ورڈی  مراکش *  جاپان  وینیزویلا  مجارستان
1993  جبوتی  پاکستان  برازیل  نیوزی لینڈ  ہسپانیہ
1994  نائجیریا  روانڈا  سلطنت عمان *  ارجنٹائن  چیک جمہوریہ
1995  بوٹسوانا  انڈونیشیا  ہونڈوراس  جرمنی  اطالیہ
1996  مصر *  گنی بساؤ  شمالی کوریا  چلی  پولینڈ
1997  کینیا  جاپان  کوسٹاریکا  پرتگال  سویڈن
1998  گیبون  گیمبیا  بحرین *  برازیل  سلووینیا
1999  نمیبیا  ملائیشیا  ارجنٹائن  کینیڈا  نیدرلینڈز
2000  مالی  تونس *  بنگلادیش  جمیکا  یوکرین
2001  موریشس  سنگاپور  کولمبیا  جمہوریہ آئرلینڈ  ناروے
2002  کیمرون  جمہوریہ گنی  سوریہ *  میکسیکو  بلغاریہ
2003  انگولا  پاکستان  چلی  جرمنی  ہسپانیہ
2004  الجزائر *  بینن  فلپائن  برازیل  رومانیہ
2005  تنزانیہ  جاپان  ارجنٹائن  ڈنمارک  یونان
2006  گھانا  جمہوریہ کانگو  قطر *  پیرو  سلوواکیہ
2007  جنوبی افریقا  انڈونیشیا  پاناما  بلجئیم  اطالیہ
2008  برکینا فاسو  لیبیا *  ویت نام  کوسٹاریکا  کرویئشا
2009  یوگنڈا  جاپان  میکسیکو  آسٹریا  ترکیہ
2010  گیبون  نائجیریا  لبنان *  برازیل  بوسنیا و ہرزیگووینا
2011  جنوبی افریقا  بھارت  کولمبیا  جرمنی  پرتگال
2012  مراکش *  ٹوگو  پاکستان  گواتیمالا  آذربائیجان
2013  روانڈا  شمالی کوریا  ارجنٹائن  آسٹریلیا  لکسمبرگ

فہرست بلحاظ تعداد سال بطور سلامتی کونسل رکن[ترمیم]

      مستقل رکن

      موجودہ منتخب رکن (2013)

      سابقہ اقوام متحدہ رکن

سال [note 7] ملک پہلا سال تازہ ترین سال علاقائی گروپ نوٹس
68  فرانس 1946 2013 مغربی یورپی اور دیگر گروپ مستقل رکن
68  مملکت متحدہ 1946 2013 مغربی یورپی اور دیگر گروپ مستقل رکن
68  ریاستہائے متحدہ 1946 2013 مغربی یورپی اور دیگر گروپ مستقل رکن
45  سوویت یونین 1946 1991 مشرقی یورپی گروپ سابق مستقل رکن، سے تبدیل روس
43  چین 1971 2013 ایشیا بحر الکاہل گروپ مستقل رکن
25  تائیوان 1946 1971 ایشیائی سابق مستقل رکن، سے تبدیل چین
23  روس 1991 2013 مشرقی یورپی گروپ مستقل رکن
20  برازیل 1946 2011 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
20  جاپان 1958 2010 ایشیا بحر الکاہل گروپ
17  ارجنٹائن 1948 2013 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ سلامتی کونسل کی موجودہ رکنیت دسمبر 2014 میں ختم ہو جاتی ہے
14  کولمبیا 1947 2012 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
14  بھارت 1950 2012 ایشیا بحر الکاہل گروپ
14  پاکستان 1952 2013 ایشیا بحر الکاہل گروپ سلامتی کونسل کی موجودہ رکنیت دسمبر 2013 ء میں ختم ہو جاتی ہے
12  کینیڈا 1948 2000 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
12  اطالیہ 1959 2008 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
10  بلجئیم 1947 2008 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
10  جرمنی 1977 2012 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
10  پاناما 1958 2008 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
9  آسٹریلیا 1946 2013 مغربی یورپی اور دیگر گروپ سلامتی کونسل کی موجودہ رکنیت دسمبر 2014 میں ختم ہو جاتی ہے
9  مصر 1946 1997 افریقی گروپ (عربی)
9  نیدرلینڈز 1946 2000 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
9  پولینڈ 1946 1997 مشرقی یورپی گروپ
8  چلی 1952 2004 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
8  ڈنمارک 1953 2006 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
8  نائجیریا 1966 2011 افریقی گروپ
8  ناروے 1949 2002 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
8  پیرو 1955 2007 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
8  ہسپانیہ 1969 2004 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
8  وینیزویلا 1962 1993 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
7  میکسیکو 1946 2010 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
7  رومانیہ 1962 2005 مشرقی یورپی گروپ
7  سوریہ 1947 2003 ایشیا بحر الکاہل گروپ (عربی)
7  ترکیہ 1951 2010 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
7  یوگوسلاویہ 1950 1989 مشرقی یورپی گروپ پیشرو بوسنیا و ہرزیگووینا, کرویئشا, مقدونیہ, مونٹینیگرو, سربیا اور سلووینیا
6  الجزائر 1968 1989 افریقی گروپ (عربی)
6  آسٹریا 1973 2010 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
6  بلغاریہ 1966 2003 مشرقی یورپی گروپ
6  کوسٹاریکا 1974 2009 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
6  کیوبا 1949 1991 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
6  ایکواڈور 1950 1992 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
6  گیبون 1978 2011 افریقی گروپ
6  گھانا 1962 2007 افریقی گروپ
6  انڈونیشیا 1973 2008 ایشیا بحر الکاہل گروپ
6  مراکش 1963 2013 افریقی گروپ (عربی) سلامتی کونسل کی موجودہ رکنیت دسمبر 2013 ء میں ختم ہو جاتی ہے
6  فلپائن 1957 2004 ایشیا بحر الکاہل گروپ
6  پرتگال 1979 2012 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
6  سویڈن 1957 1998 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
6  تونس 1959 2003 افریقی گروپ (عربی)
6  یوکرین 1948 2001 مشرقی یورپی گروپ
6  زیمبیا 1969 1988 افریقی گروپ
5  جمہوریہ آئرلینڈ 1962 2002 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
5  ملائیشیا 1965 2000 ایشیا بحر الکاہل گروپ
5  نیوزی لینڈ 1954 1994 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
5  یوگنڈا 1966 2010 افریقی گروپ
4  بنگلادیش 1979 2001 ایشیا بحر الکاہل گروپ
4  بینن 1976 2005 افریقی گروپ
4  بولیویا 1964 1979 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
4  برکینا فاسو 1984 2009 افریقی گروپ
4  کیمرون 1974 2003 افریقی گروپ
4  آئیوری کوسٹ 1964 1991 افریقی گروپ
4  ایتھوپیا 1967 1990 افریقی گروپ
4  فن لینڈ 1969 1990 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
4  یونان 1952 2006 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
4  جمہوریہ گنی 1972 2003 افریقی گروپ
4  گیانا 1975 1983 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
4  مجارستان 1968 1993 مشرقی یورپی گروپ
4  عراق 1957 1975 ایشیا بحر الکاہل گروپ (عربی)
4  جمیکا 1979 2001 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
4  اردن 1965 1983 ایشیا بحر الکاہل گروپ (عربی)
4  کینیا 1973 1998 افریقی گروپ
4  لبنان 1953 2011 ایشیا بحر الکاہل گروپ (عربی)
4 لیبیا کا پرچم لیبیا 1976 2009 افریقی گروپ (عربی)
4  مالی 1966 2001 افریقی گروپ
4  موریشس 1977 2002 افریقی گروپ
4  نیپال 1969 1989 ایشیا بحر الکاہل گروپ
4  نکاراگوا 1970 1984 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
4  جمہوریہ کانگو 1986 2007 افریقی گروپ
4  سینیگال 1968 1989 افریقی گروپ
4  جنوبی افریقا 2007 2012 افریقی گروپ
4  تنزانیہ 1975 2006 افریقی گروپ
4  ٹوگو 1982 2013 افریقی گروپ سلامتی کونسل کی موجودہ رکنیت دسمبر 2013 ء میں ختم ہو جاتی ہے
4  زائر 1982 1991 افریقی گروپ اب کے طور پر جانا جمہوری جمہوریہ کانگو
4  زمبابوے 1983 1992 افریقی گروپ
3  سلوواکیہ 1964 1979 مشرقی یورپی گروپ پیشرو چیک جمہوریہ اور چیکوسلوواکیہ
3  شمالی کوریا 1996 2013 ایشیا بحر الکاہل گروپ سلامتی کونسل کی موجودہ رکنیت دسمبر 2014 میں ختم ہو جاتی ہے
3  روانڈا 1994 2013 افریقی گروپ سلامتی کونسل کی موجودہ رکنیت دسمبر 2014 میں ختم ہو جاتی ہے
2  انگولا 2003 2004 افریقی گروپ
2  آذربائیجان 2012 2013 مشرقی یورپی گروپ سلامتی کونسل کی موجودہ رکنیت دسمبر 2013 ء میں ختم ہو جاتی ہے
2  بحرین 1998 1999 ایشیا بحر الکاہل گروپ (عربی)
2  بوسنیا و ہرزیگووینا 2010 2011 مشرقی یورپی گروپ
2  بوٹسوانا 1995 1996 افریقی گروپ
2  برونڈی 1970 1971 افریقی گروپ
2  بیلاروسی سوویت اشتراکی جمہوریہ 1974 1975 مشرقی یورپی گروپ اب کے طور پر جانا بیلاروس
2  کیپ ورڈی 1992 1993 افریقی گروپ
2  ڈومنین سیلون||1960||1961||ایشیا بحر الکاہل گروپ||اب کے طور پر جانا سری لنکا
2  کرویئشا 2008 2009 مشرقی یورپی گروپ
2  چیک جمہوریہ 1994 1995 مشرقی یورپی گروپ
2  جبوتی 1993 1994 افریقی گروپ
2  گیمبیا 1998 1999 افریقی گروپ
2  مشرقی جرمنی 1980 1981 مشرقی یورپی گروپ
2  گواتیمالا 2012 2013 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ سلامتی کونسل کی موجودہ رکنیت دسمبر 2013 ء میں ختم ہو جاتی ہے
2  گنی بساؤ 1996 1997 افریقی گروپ
2  ہونڈوراس 1995 1996 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
2  ایران 1955 1956 ایشیا بحر الکاہل گروپ
2  کویت 1978 1979 ایشیا بحر الکاہل گروپ (عربی)
2  مڈغاسکر 1985 1986 افریقی گروپ
2  مالٹا 1983 1984 مغربی یورپی اور دیگر گروپ
2  موریتانیہ 1974 1975 افریقی گروپ
2  نمیبیا 1999 2000 افریقی گروپ
2  نائجر 1980 1981 افریقی گروپ
2  سلطنت عمان 1994 1995 ایشیا بحر الکاہل گروپ (عربی)
2  پیراگوئے 1968 1969 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
2  سیرالیون 1970 1971 افریقی گروپ
2  سنگاپور 2001 2002 ایشیا بحر الکاہل گروپ
2  سلوواکیہ 2006 2007 مشرقی یورپی گروپ
2  سلووینیا 1998 1998 مشرقی یورپی گروپ
2  صومالیہ 1971 1972 افریقی گروپ
2  سوڈان 1972 1973 افریقی گروپ (عربی)
2  تھائی لینڈ 1985 1986 ایشیا بحر الکاہل گروپ
2  ٹرینیڈاڈ و ٹوباگو 1985 1986 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
2  قطر 2006 2007 ایشیا بحر الکاہل گروپ (عربی)
2  متحدہ عرب امارات 1986 1987 ایشیا بحر الکاہل گروپ (عربی)
2  متحدہ عرب جمہوریہ 1961 1962 افریقی گروپ (عربی) پیشرو شام اور مصر
2  یوراگوئے 1965 1966 لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ
2  ویت نام 2008 2009 ایشیا بحر الکاہل گروپ
2  یمن 1990 1991 ایشیا بحر الکاہل گروپ (عربی)
1  لائبیریا 1961 1961 افریقی گروپ group="note"}}
1  لکسمبرگ 2013 2013 مغربی یورپی اور دیگر گروپ سلامتی کونسل کی موجودہ رکنیت دسمبر 2014 میں ختم ہو جاتی ہے

مستقبل کے امیدوار[ترمیم]

افریقی گروپ ایشیا بحر الکاہل گروپ مشرقی یورپ لاطینی امریکا اور کیریبین گروپ مغربی یورپی اور دیگر گروپ
2013 چاڈ,[2] نائجیریا[2] سعودی عرب[2] جارجیا,[2] لتھووینیا[2] چلی[2]
2014 انگولا[3] فجی,[4] ملائیشیا[5] ? نیوزی لینڈ,[6][7] ہسپانیہ,[8] ترکی[9][10]
2015 سینیگال[11] بنگلہ دیش,[12] جاپان[13] یوکرین[14] یوراگوئے[15]
2016 کینیا,[16] سیچیلیس[17] قازقستان,[18] تھائی لینڈ[19] ? اطالیہ[20]
2017 ? ? پولینڈ[21] پیرو[22]
2018 ? مالدیپ[23] ? بیلجیم,[24][25][26] جرمنی,[25][26] اسرائیل[25][26]
2019 ? ویتنام[27] استونیا[28] ?
2020 ? ? ? جمہوریہ آئرلینڈ,[29] ناروے[30]
2021 ? ? البانیہ[31] ?
2022 ? منگولیا[18] ? سوئٹزرلینڈ[32]
2024 ? ? ? یونان[33]
2029 ? ? کرویئشا[34] ?

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Commonwealth Bureau of Census and Statistics. Official Year Book of the Commonwealth of آسٹریلیا No. 47 – 1961. Aust. Bureau of Statistics. صفحہ 1143. GGKEY:5SX8QTW3P5T. 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  2. ^ ا ب پ ت ٹ ث "First Timers چاڈ, جارجیا, لتھووینیا and سعودی عرب Among Those Vying for UNSC Seats in 2014-15". UN Tribune. 10 April 2013. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2013. [مردہ ربط]
  3. لوا خطا ماڈیول:Citation/CS1/Utilities میں 38 سطر پر: bad argument #1 to 'ipairs' (table expected, got nil)۔
  4. Dobell، Graeme (5 September 2012). "UN Security Council: What if we lose?". The Interpreter. اخذ شدہ بتاریخ 20 اگست 2013. 
  5. "Canberra backs KL for UN Security Council seat". جنوبی افریقہn Foreign Policy Initiative. 8 November 2012. اخذ شدہ بتاریخ 07 ستمبر 2013. 
  6. "Minister to lobby for Security Council seat". Stuff. 24 September 2012. اخذ شدہ بتاریخ 02 جنوری 2013. 
  7. "نیوزی لینڈ UN Security Council Candidate 2015-16". نیوزی لینڈ Ministry of Foreign Affairs and Trade. 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 03 جنوری 2012. نیوزی لینڈ is seeking a non-permanent seat on the United Nations Security Council in 2015-16. Elections are in 2014. 
  8. "Tracing our Footsteps; نیوزی لینڈ and the UN Security Council". نیوزی لینڈ Ministry of Foreign Affairs and Trade. 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 03 جنوری 2012. ... so far only two are seeking election in 2014 – ہسپانیہ and نیوزی لینڈ 
  9. "Press Release from ترکی No.129 (Unofficial Translation)" (PDF). Member States Portal New York. 25 دسمبر 2018 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 03 جنوری 2012. Thus, ترکی is announcing its candidacy for non-permanent membership in the U.N. Security Council (UNSC) for the years 2015 2016. 
  10. "No: 129, 18 May 2011, Press Release Regarding the ترکی's Candidacy for the U.N. Security Council". Republic of ترکی Ministry of Foreign Affairs. 24 ستمبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 03 جنوری 2012. Thus, ترکی is announcing its candidacy for non-permanent membership in the U.N. Security Council (UNSC) for the years 2015 2016. 
  11. "سینیگال favors مراکش's return to AU". Saudi Gazette. 21 March 2013. اخذ شدہ بتاریخ 20 اگست 2013. 
  12. دیش-for-un-security-council-for-2016-17&catid=35:national&Itemid=34 "آسٹریلیا to support بنگلہ دیش for UN Security Council for 2016-17" تحقق من قيمة |url= (معاونت). بنگلہ دیش Business News. 16 April 2012. اخذ شدہ بتاریخ 20 اگست 2013. [مردہ ربط]
  13. MOFA: Press Conference by Minister for Foreign Affairs Seiji Maehara (January 11, 2011)
  14. https://archive.today/20120805082940/www.mfa.gov.ua/uno/en/announce/detail/2910.htm
  15. "'We Must Move Forward!' Assembly President Says, Challenging Member States to Be Brave Enough to Reject Static Positions, Make United Nations Better". اقوام متحدہ. 29 September 2010. اخذ شدہ بتاریخ 07 ستمبر 2013. 
  16. "EAC member states endorse Kutesa for UN". New Vision. اخذ شدہ بتاریخ 20 اگست 2013. 
  17. "سیچیلیس bids for UN Security Council seat". Associated Press. 5 August 2012. اخذ شدہ بتاریخ 20 اگست 2013. [مردہ ربط]
  18. ^ ا ب "Secretary-General, Opening Annual General Debate, Urges World Leaders to Tackle Global Challenges Decisively for Sake of Future Generations". اقوام متحدہ. 21 September 2011. اخذ شدہ بتاریخ 07 ستمبر 2013. 
  19. Ashayagachat، Achara (4 September 2013). "PM gears up for historic UN speech". Bangkok Post. اخذ شدہ بتاریخ 07 ستمبر 2013. 
  20. "Rappresentanza Permanente d'Italia all'ONU". اطالیہun.esteri.it. [مردہ ربط]
  21. "Community of Democracies meeting: Suu Kyi receives Geremek Award". Ministry of Foreign Affairs of the Republic of پولینڈ. 29 April 2013. اخذ شدہ بتاریخ 20 اگست 2013. 
  22. "TEXT FOR DIP NOTE RESPONDING TO پیرو'S DIP NOTE REQUESTING SUPPORT FOR CANDIDACY TO UNSC NON-PERMANENT SEAT". ویکی لیکس. 19 March 2008. اخذ شدہ بتاریخ 20 اپریل 2013. 
  23. "بھارت – مالدیپ Relations" (PDF). Ministry of External Affairs of بھارت. January 2012. اخذ شدہ بتاریخ 20 اگست 2013. 
  24. Diplomatie.be
  25. ^ ا ب پ "Surprise UN attack: جرمنی v. اسرائیل". New York Post. 16 May 2013. اخذ شدہ بتاریخ 20 اگست 2013. 
  26. ^ ا ب پ "Is جرمنی Preventing اسرائیل from Joining the Security Council?". Jewish Voice. 22 May 2013. 04 مارچ 2016 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 مئی 2013. 
  27. "ویتنام makes bilateral leap with یوکرین towards prosperity" تحقق من قيمة |url= (معاونت). ویتنام News. 17 November 2012. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2013. [مردہ ربط]
  28. "استونیاn Security Policy". استونیاn Embassy in Stockholm. 1 March 2011. 02 اکتوبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2013. 
  29. آئرلینڈunnewyork.org/home/index.aspx?id=81389 "Department of Foreign Affairs" تحقق من قيمة |url= (معاونت). جمہوریہ آئرلینڈunnewyork.org. [مردہ ربط]
  30. "ناروے and the United Nations: Common Future, Common Solutions". Ministry of Foreign Affairs of ناروے. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2013. 
  31. "آرکائیو کاپی". 22 مارچ 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 22 مارچ 2012. 
  32. "Swiss aim for UN Security Council in 2023–24. – swissinfo". Swissinfo.ch. 12 January 2011. 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 24 ستمبر 2013. 
  33. Candidatures - The Permanent Mission
  34. "MVP RH". Un.mfa.hr. 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 24 ستمبر 2013. 

ملاحظات[ترمیم]

  1. The مشرقی یورپ group included Asian countries from 1956 onwards
  2. لائبیریا took the place of the مغربی یورپan country in 1961
  3. مراکش took the place of the Middle Eastern country in 1963–1964
  4. کوت داوواغ took the place of a member of the Commonwealth in 1964–1965
  5. At the time of election, and until August 1984, the country was known as Republic of Upper Volta.
  6. The election was secured by South يمن, and in May 1990, during its membership of the Security Council, it unified with North يمن to form the single country of يمن.
  7. Table shows years completed or in progress. Each term on the Council consist of 2 years. Any odd number of years are countries currently serving the first year of a term, countries with terms between 1956 and 1967, when the order of the council changed, or the three countries (میکسیکو، مصر and the نیدرلینڈز) who had the first terms in 1946 and changed in 1947