فہرست پاکستان خواتین ٹیسٹ کرکٹ کھلاڑی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
Photo of Batool Fatima
بتول فاطمہ نے پاکستان کی طرف سے ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ وکٹیں لی ہیں۔

خواتین کا ٹیسٹ میچ ایک بین الاقوامی چار اننگز کا کرکٹ میچ ہوتا ہے جس میں دس سرکردہ ممالک میں سے دو کے مابین زیادہ سے زیادہ چار دن کا میچ ہوتا ہے۔ [1][2] پہلا خواتین ٹیسٹ 1934ء میں انگلستان اور آسٹریلیا کے مابین کھیلا گیا تھا۔ [3] 2014ء تک کے اعداد و شمار کے مطابق، پاکستان خواتین کرکٹ ٹیم 1998ء میں سری لنکا کے خلاف کولٹس کرکٹ کلب [4] میں کھیلے گئے پہلے میچ کے بعد سے اب تک تین ٹیسٹ میچ کھیل چکی ہے، [5]جس میں سے پاکستان خواتین کرکٹ ٹیم نے دو میچ ہارے جبکہ ایک میچ ڈرا ہوا۔ بیس خواتین پاکستان کے لیے ٹیسٹ میچ کھیل چکی ہیں۔ [6][7]

2014ء تک کے اعداد و شمار کے مطابق، چار خواتین کھلاڑی ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ میچ کھیل چکی ہیں، وہ تینوں میچ کھیل چکی ہیں۔ پانچ کھلاڑی دو دو میچوں میں شریک ہوئی ہیں اور گیارہ کھلاڑی ایک ایک میچ کھیل چکی ہیں۔ [6] شائزہ خان نے تینوں میچوں میں ٹیم کی کپتانی کی ہے۔ [8] کرن بلوچ نے مجموعی طور پر سب سے زیادہ 6 اننگز سے 360 رنز بنائے ہیں۔ [9] ان کا سب سے بڑا اسکور 242، جو ویسٹ انڈیز کے خلاف مارچ 2004ء میں کھیلا گیا تھا جو خواتین ٹیسٹ کرکٹ میں 2014ء سے اب تک کسی بھی بلے باز کا سب سے زیادہ سکور ہے۔ [10] خان نے اس فارمیٹ میں کسی بھی دوسری پاکستانی بولر سے زیادہ وکٹیں حاصل کر رکھی ہیں، انہوں نے 3 میچوں میں 19 بلے بازوں کو آؤٹ کیا۔ [11] وہ پاکستانی بالروں کے درمیان میں ایک اننگز میں باؤلنگ کے بہترین اعداد و شمار رکھتی ہیں جو 59 رن پر 7 وکٹیں ہیں۔ میچ میں 226 رنز دے کر 13 وکٹیں ٹیسٹ میں کسی بھی باؤلر کی بہترین کارکردگی ہے۔ [12] خان، عروج ممتاز اور بتول فاطمہ نے تین تین کیچ لیے جو سب سے زیادہ ہیں۔ فاطمہ پاکستان کی طرف سب سے زیادہ 5 بار آؤٹ کرنے کا ریکارڈ رکھتی ہیں۔ [13]

پہلی فہرست میں پاکستان خواتین کرکٹ ٹیم کی ایسی تمام کھلاڑی شامل ہیں جو کم از کم ایک ٹیسٹ میچ کھیل چکی ہیں۔ ابتدا میں اس ترتیب کو لکھا گیا ہے جس میں ہر کھلاڑی نے اپنی پہلی ٹیسٹ کیپحاصل کی تھی۔ جہاں ایک سے زیادہ کھلاڑیوں نے ایک ہی میچ میں اپنا پہلا ٹیسٹ کیپ حاصل کی تھی، وہ کھلاڑی حروف تہجی کے اعتبار سے درج کیے گئے ہیں۔ دوسرا ان لوگوں کی فہرست ہے جنہوں نے بطور کپتان پاکستان کی نمائندگی کی ہے۔

کلید[ترمیم]

عمومی
  • double-dagger - کیپٹن
  • dagger - وکٹ کیپر
  • پہلاڈیبیو کا سال
  • آخری - تازہ ترین میچ کا سال
  • میچ - کھیلے گئے میچوں کی تعداد
  • جیت٪ - جیتنے کا فیصد
بیٹنگ
  • تعداد اننگز
  • ناٹ آؤٹ - اننگز کی تعداد ناٹ آؤٹ
  • رنزکیریئر میں رنز بنائے گئے
  • زیادہ سکور- زیادہ سکور
  • 100 - سنچریاں
  • 50 - نصف سنچریاں
  • اوسط - اوسط رنز
  • * - بیٹسمین ناٹ آؤٹ رہی
بولنگ
  • گیندیں - کیریئر میں گیندیں کی
  • وکٹ- کیریئر میں لی گئی وکٹیں
  • بی بی آئی۔ ایک اننگز میں بہترین بولنگ
  • بی بی ایم۔ کسی میچ میں بہترین بولنگ
  • اوسط - فی وکٹ اوسط رنز
فیلڈنگ
  • کیچ- کیچز لیے
  • سٹمپ - اسٹمپ کیے

ٹیسٹ کرکٹ کھلاڑی[ترمیم]

ویسٹ انڈیز کے خلاف 15 مارچ 2004 کو پاکستان خواتین کے حالیہ ٹیسٹ میچ تک کے اعدادوشمار درست ہیں۔ [14][15][16]
عدد نام پہلا آخری میچ بلے بازی گیند بازی فیلڈنگ حوالہ
اننگز ناٹ آؤٹ سکور زیادہ سکور 100 50 اوسط گیندیں وکٹیں بہترین/اننگز بہترین/میچ اوسط کیچ اسٹمپڈ
1 کرن بلوچ, کرن بلوچ 1998 2004 3 6 0 360 242 1 1 60.00 300 2 2/41 2/56 76.50 1 0 [17]
2 سعدیہ بٹ, سعدیہ بٹ 1998 2004 3 6 2 34 10 0 0 8.50 156 0 2 0 [18]
3 عاصمہ فرزند, عاصمہ فرزند dagger 1998 1998 1 2 0 35 20 0 0 17.50 0 2 [19]
4 شازیہ حسن, شازیہ حسن 1998 1998 1 2 0 7 6 0 0 3.50 12 0 0 0 [20]
5 مہوش خان, مہوش خان 1998 2000 2 4 0 28 17 0 0 7.00 168 1 1/65 1/65 75.00 0 0 [21]
6 مقدس خان, مقدس خان 1998 1998 1 2 2 11 11* 0 0 0 0 [22]
7 شائزہ خان, شائزہ خان double-dagger 1998 2004 3 5 0 69 35 0 0 13.80 864 19 7/59 13/226 24.05 3 0 [23]
8 شرمین خان, شرمین خان 1998 2000 2 4 0 29 19 0 0 7.25 211 5 3/23 4/99 25.80 1 0 [24]
9 نازیہ نذیر, نازیہ نذیر 1998 2004 3 6 0 8 5 0 0 1.33 270 7 4/66 4/66 22.85 2 0 [25]
10 نازیہ صادق, نازیہ صادق 1998 1998 1 2 0 13 13 0 0 6.50 2 0 [26]
11 دیبہ شیرازی, دیبہ شیرازی 1998 2000 2 4 0 18 12 0 0 4.50 72 1 1/35 1/35 35.00 1 0 [27]
12 ظہمراد افضل, ظہمراد افضل 2000 2000 1 2 0 45 25 0 0 25.28 0 0 [28]
13 عظمی گوندل, عظمی گوندل dagger 2000 2000 1 2 2 0 0* 0 0 0.00 0 1 [29]
14 خورشید جبیں, خورشید جبیں 2000 2004 2 4 1 46 20* 0 0 15.33 72 1 1/35 1/35 35.00 1 0 [30]
15 ساجدہ شاہ, ساجدہ شاہ 2000 2004 2 3 0 100 98 0 1 33.33 6 0 0 0 [31]
16 مریم انور, مریم انور 2004 2004 1 0 0 [32]
17 مریم بٹ, مریم بٹ 2004 2004 1 1 1 27 27* 0 0 72 1 1/19 1/19 19.00 1 0 [33]
18 بتول فاطمہ, بتول فاطمہ dagger 2004 2004 1 1 0 0 0 0 0 0.00 3 2 [34]
19 شبانہ لطیف, شبانہ لطیف 2004 2004 1 0 0 [35]
20 عروج ممتاز, عروج ممتاز 2004 2004 1 1 0 0 0 0 0 0.00 198 2 1/24 2/97 48.50 1 0 [36]

ٹیسٹ کپتان[ترمیم]

نمبر نام [8][37] پہلا آخری میچ جیتے ہارے برابر ڈرا جیت٪
0 1 خان, شائزہشائزہ خان 1998 2004 3 0 2 0 1 0

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Records / Women's Test matches / Team records / Results summary". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  2. "Women's Test Match Playing Conditions" (PDF). بین الاقوامی کرکٹ کونسل. صفحہ 7.10. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  3. "List of women's Test matches". ای ایس پی این کرک انفو. 7 اپریل 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  4. "Pakistan women Test matches". کرک انفو. 15 جولائی 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  5. "Statistics / Statsguru / Women's Test matches / Aggregate / overall records / Matches by year". کرک انفو. 4 نومبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  6. ^ ا ب "Records / Pakistan Women / Women's Test matches / Most matches". کرک انفو. 6 دسمبر 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  7. "Most Appearances for Pakistan Women in Women's Test matches". CricketArchive. اخذ شدہ بتاریخ 13 جنوری 2015. 
  8. ^ ا ب "Records / Pakistan Women / Women's Test matches / List of captains". کرک انفو. 6 دسمبر 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  9. "Statistics / Statsguru / Women's Test matches / Batting records / Most runs". کرک انفو. 4 نومبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  10. Lillywhite، Jamie (5 فروری 2005). "Leading the new generation". بی بی سی نیوز. اخذ شدہ بتاریخ 13 جنوری 2015. 
  11. "Statistics / Statsguru / Women's Test matches / Bowling records / Most wickets". کرک انفو. 4 نومبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 مئی 2012. 
  12. "Records / Women's Test matches / Bowling records / Best figures in a match /Best bowling figures in a match". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  13. "Statistics / Statsguru / Women's Test matches / Fielding records / Most dismissals in career". کرک انفو. 4 نومبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 28 جولائی 2012. 
  14. "Players by Caps". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 28 جون 2017.  [مردہ ربط]
  15. "Pakistan Women's Test Batting Averages". ای ایس پی این کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 12 جولا‎ئی 2018. 
  16. "Pakistan Women's Test Bowling Averages". ای ایس پی این کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 12 جولا‎ئی 2018. 
  17. "Player Profile: Kiran Baluch". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  18. "Player Profile: Sadia Butt". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  19. "Player Profile: Asma Farzand". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  20. "Player Profile: Shazia Hassan". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  21. "Player Profile: Mahewish Khan". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  22. "Player Profile: Muqudos Khan". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 اکتوبر 2013. 
  23. "Player Profile: Shaiza Khan". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  24. "Player Profile: Sharmeen Khan". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  25. "Player Profile: Nazia Nazir". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  26. "Player Profile: Nazia Sadiq". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  27. "Player Profile: Deebah Sherazi". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  28. "Player Profile: Zehmarad Afzal". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  29. "Player Profile: Uzma Gondal". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  30. "Player Profile: Khursheed Jabeen". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  31. "Player Profile: Sajjida Shah". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 اکتوبر 2013. 
  32. "Player Profile: Mariam Anwar". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  33. "Player Profile: Mariam Butt". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  34. "Player Profile: Batool Fatima". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  35. "Player Profile: Shabana Latif". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 اکتوبر 2013. 
  36. "Player Profile: Urooj Mumtaz". کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 4 نومبر 2013. 
  37. "Pakistan Women Women's Test matches Captains Records". CricketArchive. اخذ شدہ بتاریخ 13 جنوری 2015. 

بیرونی روابط[ترمیم]