قدرت نقوی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
قدرت نقوی
پیدائش سید شجاعت علی نقوی
10 نومبر 1925(1925-11-10)ء
عبداللہ پور، میرٹھ ضلع، برطانوی ہندوستان
وفات 16 دسمبر 2000(2000-12-16)ء
کراچی، پاکستان
قلمی نام قدرت نقوی
پیشہ محقق، ماہر لسانیات، ماہر غالبیات، شاعر
زبان اردو
نسل مہاجر
شہریت Flag of پاکستانپاکستانی
اصناف تحقیق، لسانیات، غالب شناسی، شاعری
نمایاں کام غالب شناسی
گل رعنا
غالب صد رنگ
غالب کون ہے؟
لسانی مقالات
رانی کیتکی (مرتب)

سید قدرت نقوی (پیدائش: 10 نومبر، 1925ء - وفات: 16 دسمبر، 2000ء) پاکستان سے تعلق رکھنے والے اردو کے ممتاز محقق، ماہر لسانیات، شاعر، معلم اور غالب شناس تھے۔ وہ غالب پر تحقیق کے حوالے سے شہرت رکھتے تھے۔

حالات زندگی[ترمیم]

قدرت نقوی 10 نومبر، 1925ء کو عبد اللہ پور، میرٹھ ضلع، برطانوی ہندوستان میں پیدا ہوئے۔ ان اصل نام سید شجاعت علی نقوی تھا[1][2]۔ وہ متعدد تعلیمی اداروں میں بحیثیت معلم وابستہ رہے۔ تقسیم ہند کے بعد 1969ء میں وہ اردو لغت بورڈ کراچی سے بطور مدیر وابستہ ہوئے اور 1985ء تک اس ادارے میں خدمات انجام دیں۔[2]

ادبی خدمات[ترمیم]

قدرت نقوی غالب پر تحقیق کے حوالے سند تسلیم کیے جاتے ہیں۔ انہوں نے غالب کی شخصیت و فن پر کئی اہم کتابیں اور مضامین تحریر کیے جن میں غالبیات، گل رعنا، غالب آگہی، غالب شناسی، ہنگامہ دل آشوب، غالب کون ہے؟، غالب صد رنگ، نسخہ شیرانی اور دیگر مقالات اور عظت غالب کے نام سر فہرست ہیں۔ ان کی دیگر تصانیف میں سیرت النبی، رانی کیتکی (ترتیب)، لسانی مقالات (دو جلدیں)، بحر الفصاحت، مطالعہ عبد الحق، ولی کامل اور مقالات قدرت نقوی شامل ہیں۔ انہوں نے راجا راجیشور راؤ اصغر کی مشور ہندی-اردو لغت کو بھی ازسرِ نو مرتب کیا۔[2]

تصانیف[ترمیم]

  • نسخۂ شیرانی اور دوسرے مقالات (غالبیات)
  • لسانی مقالات حصہ اول
  • لسانی مقالات حصہ دوم
  • اُردو-ہندی لغت (ترتیب)
  • بحرالفصاحت (ترتیب)
  • غالب شناسی (غالبیات)
  • گل رعنا (غالبیات)
  • غالب صد رنگ (غالبیات)
  • غالب آگہی (غالبیات)
  • ہنگامۂ دل ِ آشوب (غالبیات)
  • غالب کون ہے (غالبیات)
  • عظمت غالب (غالبیات)
  • لسانی مقالات حصہ اول
  • مطالعہ عبد الحق
  • رانی کیتکی (ترتیب)
  • اساس ِاُردو
  • سب رس
  • سیرت النبی
  • ولی کامل
  • مقالات قدرت نقوی

وفات[ترمیم]

قدرت نقوی 16 دسمبر، 2000ء کو کراچی، پاکستان میں وفات پاگئے اور محمد شاہ قبرستان نارتھ کراچی میں سپردِ خاک ہوئے۔[1][2]

حوالہ جات[ترمیم]