مائیکروسافٹ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

مائیکروسوفٹ کارپوریشن
عوامی
تجارت بطور
آئی ایس آئی این US5949181045
صنعت
قیام اپریل 4، 1975؛ 44 سال قبل (1975-04-04)، البیکرکی، نیو میکسیکو، ریاست ہائے متحدہ میں
بانی
صدرمقام ون مائیکروسوفٹ وے، ریڈمنڈ، واشنگٹن، ریاست ہائے متحدہ
علاقہ خدمت
عالمگیر
کلیدی افراد
مصنوعات
خدمات
آمدنی Increase2.svg امریکی ڈالر110.36 بلین (2018)
Increase2.svg امریکی ڈالر35.05 بلین (2018)
Increase2.svg امریکی ڈالر16.57 بلین (2018)
کل اثاثے Increase2.svg امریکی ڈالر258.84 بلین (2018)
کل ایکوئٹی Increase2.svg امریکی ڈالر82.71 بلین (2018)
ملازمین کی تعداد
Increase2.svg 134,944 (2018)
ذیلی ادارے List of Microsoft assets
ویب سائٹ microsoft.com

مائیکروسوفٹ کارپوریشن (ایم ایس/ MS) ایک امریکی کثیر القومی ٹیکنالوجی کمپنی ہے جس کے صدر دفاتر ریڈمنڈ، واشنگٹن میں واقع ہیں۔ یہ کمپنی کمپیوٹر سوفٹ ویئر، صارفی الیکٹرانکس، ذاتی کمپیوٹر اور متعلقہ خدمات کی تشکیل، تیاری، سپورٹ کی فراہمی اور فروخت کرتی ہے۔ اس کی معروف ترین سوفٹ ویئر مصنوعات میں آپریٹنگ سسٹم مائیکروسوفٹ ونڈوز، مائیکروسوفٹ آفس، انٹرنیٹ ایکسپلورر اور مائیکروسوفٹ ایج ویب براؤزر شامل ہیں۔ اس کی نمایاں ہارڈویئر مصنوعات میں ایکس باکس ویڈیو گیم کنسول اور مائیکروسوفٹ سرفیس شامل ہیں۔ 2016ء کے مطابق، آمدنی کے اعتبار سے مائیکروسوفٹ دنیا کی عظیم ترین سوفٹ ویئر کمپنی ہے۔ لفظ ’’مائیکروسوفٹ‘‘ دو الفاظ ’’مائیکرو کمپیوٹر‘‘ اور ’’سوفٹ ویئر‘‘ کا مرکب ہے۔ 2018ء میں مجموعی آمدنی کے لحاظ سے ریاست ہائے متحدہ کی عظیم ترین کمپنیوں کی فورچیون 500 درجہ بندی کے مطابق مائیکروسوفٹ 30ویں نمبر پر ہے۔

مائیکروسوفٹ 4 اپریل 1975ء کو بل گیٹس اور پال ایلن نے قائم کی تاکہ آلتیئر 8800 کے لیے بیسک انٹرپریٹر تیار اور فروخت کیے جائیں۔ 1980ء کی دہائی میں ایم ایس ڈوس کی پیش کش کے ساتھ کمپنی نے ذاتی کمپیوٹروں کے آپریٹنگ سسٹم کی مارکیٹ میں ترقی کے زینے چڑھنا شروع کیے، جس کے بعد مائیکروسوفٹ ونڈوز نامی آپریٹنگ سسٹم پیش کیے گئے۔ 1986ء میں کمپنی کی ابتدائی پبلک آفرنگ (IPO) اور بعد ازاں اس کے حصص کی قدر میں بتدریج اضافے نے مائیکروسوفٹ کے عملے میں تین لوگوں کو کھرب پتی اور اندازاً 12,000 لوگوں کو ارب پتی بنایا۔ 1990ء کی دہائی سے، آپریٹنگ سسٹم کی مارکیٹ سے لے کر کئی کارپوریٹ اداروں کی خریداری کے ذریعے اس میں اضافہ ہوتا رہا ہے۔ مائیکروسوفٹ کی سب سے بڑی کاروباری خریداری دسمبر 2016ء میں 26.2 بلین امریکی ڈالر کے بدلے لنکڈن کو خریدنا تھا، جس سے پہلے مئی 2011ء میں 8.5 بلین امریکی ڈالر کے بدلے اسکائپ ٹیکنالوجیز کو خریدا گیا تھا۔

2015ء کے مطابق، آئی بی ایم کے ذاتی کمپیوٹروں سے ہم آہنگ آپریٹنگ سسٹم بنانے والی مارکیٹ میں اور آفس سوفٹ ویئر کی مارکیت میں مائیکروسوفٹ کا پلڑا بھاری تھا، باوجود اس کے کہ آپریٹنگ سسٹم کی مارکیٹ کا بڑا حصہ اینڈرائیڈ آنے کے بعد مائیکروسوفٹ کے ہاتھوں سے نکل گیا۔ کمپنی ڈیسک ٹاپ اور سرور کے لیے دیگر صارفی اور ادارہ جاتی سوفٹ ویئر کی بڑی تعداد بھی تیار کرتی ہے، جن میں ویب سرچ (بذریعہ بنگ)، ڈیجیٹل سروسز مارکیٹ (بذریعہ ایم ایس این)، مرکب حقیقت یا مکسڈ رئیلٹی (ہولولینس)، کلاؤڈ کمپیوٹنگ (ایژر) اور سوفٹ ویئر ڈویلپمنٹ (ویژیول اسٹوڈیو) شامل ہیں۔

ذیلی سافٹ وئیرز[ترمیم]

مائیکرو سافٹ کے مقبول ترین سافٹ وئیرزسافٹ ویئر جو مائیکرو سافٹ کی مقبولیت کا سبب بنے;

  • سسٹم سافٹ وئیرز
  • ایپلیکیشن سافٹ وئیرزApplication

سسٹم سافٹ وئیرز[ترمیم]

ایپلیکیشن سافٹ وئیرز[ترمیم]

توسیع[ترمیم]

حال ہی میں مائیکرو سافٹ نے نوکیا کمپنی کو خرید لیا ہے۔
اب نوکیا موبائل کمپنی مائیکرو سافٹ کمپنی کی ملکیت ہے۔ دوسرے الفاظ میں مائیکرو سافٹ نے اپنی کمپنی کی توسیع کرلی ہے۔
مائیکرو سافٹ نوکیا ونڈو فون کی بجائے اینڈروئیڈ موبائل فون مارکیٹ میں متعارف کروانے کا ارداه رکھتی ہے

متنازع[ترمیم]

2013ء میں بلومبرگ نے انکشاف کیا کہ مائیکروسافٹ امریکی حکومت سے جاسوسی کے میدان میں بھرپور تعاون کرتا ہے۔[1]

مزید[ترمیم]

  1. "Not just telcos, THOUSANDS of companies share data with US spies"۔ دی رجسٹر۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔