محمد باقر (مصنف)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
ڈاکٹر محمد باقر
پیدائش 4 اپریل 1910 (1910-04-04)ء
لائل پور (موجودہ فیصل آبادبرطانوی ہندوستان
وفات 25 اپریل 1993 (1993-04-25)ء
لاہور، پاکستان
قلمی نام محمد باقر
پیشہ افسانہ نگار، محقق، نقاد، ماہرِ تعلیم
زبان اردو، فارسی، پنجابی
قومیت پاکستانپاکستانی
نسل پنجابی
تعلیم پی ایچ ڈی
مادر علمی پنجاب یونیورسٹی، لندن یونیورسٹی
صنف افسانہ، تحقیق، تنقید
نمایاں کام اُردوئے قدیم - دکن اور پنجاب میں
لندن سے لاہور تک
احوال و تعلیمات شیخ ابو الحسن ہجویری داتا گنج بخش
شعرائے پنجاب
خدا کی لاٹھی

ڈاکٹر محمد باقر (پیدائش: 4 اپریل، 1910ء- وفات: 25 اپریل، 1993ء) پاکستان سے تعلق رکھنے والے اردو، فارسی اور پنجابی کے نامور اسکالر ، محقق، افسانہ نگار، نقاد اور ماہرِ تعلیم اور پنجاب یونیورسٹی کے شعبۂ فارسی کے صدر تھے۔

حالات زندگی[ترمیم]

ڈاکٹر محمد باقر 4 اپریل، 1910ء کو لاہور بنگلہ، لائل پور (موجودہ فیصل آبادبرطانوی ہندوستان میں پیدا ہوئے[1][2]۔1939ء میں انہوں نے لندن یونیورسٹی سے پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی ۔ 1950ء سے 1970ء تک وہ پنجاب یونیورسٹی کے شعبۂ فارسی کے صدر رہے اور 1965ء میں پنجاب یونیورسٹی اورینٹل کالج کے پرنسپل مقرر ہوئے۔ان کی تصانیف میںاُردوئے قدیم - دکن اور پنجاب میں، تہذیب عمل، شعرائے پنجاب، لندن سے خطوط، لندن سے لاہور تک، احوال و آثار اقبال، احوال و تعلیمات شیخ ابوالحسن ہجویری داتا گنج بخش اور Lahore Past and Present کے نام سرفہرست ہیں۔[1]

تصانیف[ترمیم]

  • اُردوئے قدیم - دکن اور پنجاب میں
  • احوال و تعلیمات شیخ ابو الحسن ہجویری داتا گنج بخش
  • لندن سے لاہور تک
  • لندنی دوست کے نام خطوط
  • لندن سے خطوط
  • خدا کی لاٹھی
  • سیاہ کار اور دوسرے افسانے
  • شعرائے پنجاب
  • تہذیب عمل
  • شرح بانگ درا
  • احوال و آثار اقبال

وفات[ترمیم]

ڈاکٹر محمد باقر 25 اپریل، 1993ء کو لاہور، پاکستان میں وفات پاگئے۔ وہ لاہور کے ماڈل ٹاؤن قبرستان میں سپردِ خاک ہوئے۔[1][2]

حوالہ جات[ترمیم]