محمد رضوان (کرکٹ کھلاڑی)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
محمد رضوان
رضوان 2021ء میں
ذاتی معلومات
پیدائش1 جون 1992ء (عمر 31 سال)
پشاور، صوبہ سرحد، پاکستان
قد5 فٹ 7 انچ (170 سینٹی میٹر)
بلے بازیدائیں ہاتھ کا بلے باز
گیند بازیدائیں ہاتھ کا میڈیم پیس گیند باز
حیثیتوکٹ کیپر، بلے باز
بین الاقوامی کرکٹ
قومی ٹیم
پہلا ٹیسٹ (کیپ 224)25 نومبر 2016  بمقابلہ  نیوزی لینڈ
آخری ٹیسٹ17 دسمبر 2022  بمقابلہ  انگلینڈ
پہلا ایک روزہ (کیپ 200)17 اپریل 2015  بمقابلہ  بنگلہ دیش
آخری ایک روزہ30 اگست 2023  بمقابلہ  نیپال
ایک روزہ شرٹ نمبر.16
پہلا ٹی20 (کیپ 60)24 اپریل 2015  بمقابلہ  بنگلہ دیش
آخری ٹی2017 اپریل 2023  بمقابلہ  نیوزی لینڈ
ٹی20 شرٹ نمبر.16
ملکی کرکٹ
عرصہٹیمیں
2008–2015پشاور پینتھرز
2011–2018/19سوئی ناردرن گیس پائپ لائنز لمیٹڈ
2016–2017لاہور قلندرز (اسکواڈ نمبر. 16)
2017سلہٹ سکسرز
2018-2020کراچی کنگز (اسکواڈ نمبر. 16)
2018پنجاب
2019/20– تاحالخیبر پختونخوا (اسکواڈ نمبر. 16)
2021– تاحالملتان سلطانز (اسکواڈ نمبر. 16)
2022سسیکس (اسکواڈ نمبر. 116)
2023کومیلا وکٹورینز (اسکواڈ نمبر. 116)
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ ٹیسٹ ایک روزہ ٹوئنٹی20آئی فرسٹ کلاس
میچ 28 61 85 113
رنز بنائے 1,423 1,542 2,797 6,188
بیٹنگ اوسط 39.52 34.26 49.07 43.27
100s/50s 2/8 2/10 1/25 13/31
ٹاپ اسکور 115* 115 104* 224
کیچ/سٹمپ 71/3 59/2 43/11 309/18
ماخذ: ای ایس پی این کرک انفو، 30 اگست 2023

محمد رضوان ( پیدائش 1 جون 1992ء) ایک پاکستانی بین الاقوامی کرکٹ کھلاڑی ہے جس نے 2015ء سے بین الاقوامی کرکٹ میں پاکستان کی نمائندگی کی ہے اور پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) فرنچائز ملتان سلطانز کے کپتان ہیں۔ [1] [2] [3]

رضوان ٹی ٹوئنٹی میں ایک کیلنڈر سال میں 2000 اسکور بنانے والے واحد بلے باز ہیں۔ [4] [5] [2] [3] وہ دائیں ہاتھ کے بلے باز اور وکٹ کیپر ہے اور اس نے تینوں بین الاقوامی فارمیٹ میں سنچریاں اسکور کی ہیں: ٹیسٹ، ایک روزہ بین الاقوامی اور ٹوئنٹی20 بین الاقوامی۔ [6] [7] وہ ٹیسٹ کرکٹ میں پاکستان کرکٹ ٹیم کے نائب کپتان ہیں۔ [8] وہ 2021ء میں وزڈن کرکٹرز آف دی ایئر میں سے ایک تھے۔ [9] وہ آئی سی سی ٹی/20 کرکٹ میں سال کا بہترین مرد کھلاڑی 2021ء بھی تھے۔ [10] انھوں نے پاکستان سپر لیگ 2021ء میں ملتان سلطانز کو فتح دلائی۔ [11] محمد رضوان ٹی ٹوئنٹی بین الاقوامی ایک کیلنڈر ایئر میں 26 اننگز میں 73.66 کی اوسط سے 1326 اسکور کر کے سب سے زیادہ اسکور کرنے والے کھلاڑی ہیں۔

وہ 2016ء سے 2017ء تک پاکستان سپر لیگ میں لاہور قلندرز کے لیے، 2018ء سے 2020ء تک کراچی کنگز کے لیے اور 2023ء تک ملتان سلطانز کے کپتان رہے۔ وہ گھریلو کرکٹ میں خیبرپختونخوا کے کپتان ہیں۔ [12]

ابتدائی کیریئر[ترمیم]

رضوان یکم جون 1992ء کو پشاور میں اختر پرویز کے ہاں چھ بہن بھائیوں کے ایک پشتون گھرانے میں پیدا ہوئے۔ رضوان تین بھائیوں میں دوسرے نمبر پر ہیث اور اس نے اسلامیہ کالج اور بعد میں شمع کلب جیسے کلبوں میں شمولیت سے قبل ٹیپ بال سے اپنے کرکٹ کیریئر کا آغاز کیا۔ بالآخر 2007ء میں پشاور انڈر 19 کے لیے کھیلا۔ [13]

گھریلو کیریئر[ترمیم]

2008-09ء کے سیزن کے دوران پشاور کے ساتھ اپنا فرسٹ کلاس کرئیر کا آغاز کرتے ہوئے، رضوان نے اپنی پہلی سات اننگز میں پانچ 50 اسکور بنائے، جن میں چار ناقابل شکست تھے۔ اس نے اپنے اچھے نتائج کی وجہ سے، بلے بازی اور وکٹوں کیپر کے طور پر، وہ باسط علی، سوئی ناردرن گیس پائپ لائنز لمیٹڈ کرکٹ ٹیم کے کوچ کی توجہ مبذول کرائی، جس نے اسے 2011-12ء کے سیزن کے لیے اپنی ٹیم میں شامل کیا۔[13]

2014-15ء میں قائداعظم ٹرافی کے فائنل میں سوئی ناردرن گیس پائپ لائنز لمیٹڈ کی طرف سے کھیلتے ہوئے، رضوان نے 224 اسکور بنائے جس کی مدد سے سوئی ناردرن کو پہلی اننگز میں 301 اسکور کی برتری حاصل ہوئی اور ان کا دوسرا ٹائٹل تھا۔ [14] اس نے دسمبر 2014ء میں کینیا کے خلاف پانچ محدود اوور کے میچوں میں پاکستان اے کے لیے وکٹ کیپری کی۔ [15]

اپریل 2018ء میں، انھیں پاکستان کپ 2018ء کے لیے پنجاب کے اسکواڈ کا نائب کپتان نامزد کیا گیا۔ [16] [17] 1 مئی 2018ء کو، اس نے لسٹ اے کرکٹ میں اپنا سب سے زیادہ سکور بنایا، فیڈرل ایریاز کے خلاف 123 گیندوں پر 140 اسکور بنائے۔ [18] مارچ 2019ء میں، انھیں پاکستان کپ 2019ء کے لیے فیڈرل ایریاز اسکواڈ کا کپتان نامزد کیا گیا۔ [19] [20]

ستمبر 2019ء میں، رضوان کو قائد اعظم ٹرافی 2019-20ء ٹورنامنٹ کے لیے خیبر پختونخوا کا کپتان نامزد کیا گیا۔ [21] [12] اکتوبر 2019ء میں، انھیں قومی ٹی/20 کپ 2019-20ء میں 215 اسکور بنانے اور چھ وکٹیں لینے پر ٹورنامنٹ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔ [22]

انھیں خیبرپختونخوا نے 2020-21ء کے گھریلو سیزن کے لیے ٹیم کے کھلاڑی اور کپتان کے طور پر برقرار رکھا۔ [23] [24]

دسمبر 2021ء میں، اسے سسیکس نے 2022ء میں کاؤنٹی چیمپئن شپ اور ٹی/20 کرکٹ کھیلنے کے لیے سائن کیا تھا۔ [25] [26]

پاکستان سپر لیگ[ترمیم]

پی ایس ایل میچز میں محمد رضوان کا ریکارڈ
میچ اسکور ایچ ایس 100 50 اوسط ایس آر
71 [27] 1996 110* 1 16 43.39 128.60

رضوان نے اپنے پی ایس ایل کیریئر کا آغاز 2016ء میں لاہور قلندرز سے کیا۔ تاہم، ٹیم کے ساتھ ان کا دو سالہ دور مایوس کن تھا، کیونکہ لاہور قلندرز دونوں سیزن میں پلے آف کے لیے کوالیفائی کرنے میں ناکام رہی۔ مزید برآں، اس عرصے کے دوران رضوان کی انفرادی کارکردگی توقعات سے کم رہی، کیونکہ وہ 16 میچوں میں صرف 233 اسکور بنانے میں کامیاب ہوئے۔

وہ 2018ء سے 2020ء تک پی ایس ایل کے اگلے تین ایڈیشن میں کراچی کنگز کے لیے کھیلے۔ بین الاقوامی کرکٹ میں پاکستان کا پہلا انتخاب وکٹ کیپر بلے باز بننے کے باوجود، اس نے خود کو کنگز کے لیے ایک باقاعدہ ٹیم کھلاڑی کے طور پر قائم کرنے کے لیے جدوجہد کی، اکثر وہ ٹاپ آرڈر میں اپنی ترجیحی پوزیشن کی بجائے صرف نچلے درجے کے بلے باز کے طور پر پیش ہوتے ہیں۔ [28]

پی ایس ایل میں رضوان کی کامیابی 2021ء میں اس وقت ہوئی جب اس نے ملتان سلطانز کو ان کے کپتان کے طور پر جوائن کیا۔ رضوان کی کپتانی میں سلطانز نے پی ایس ایل میں شاندار کامیابیاں حاصل کیں۔ بحیثیت کپتان اپنے پہلے سیزن میں، اس نے ٹیم کو فتح سے ہمکنار کیا، جبکہ اگلے دو ٹورنامنٹس میں رنر اپ کے طور پر کامیابی حاصل کی۔

انفرادی طور پر، رضوان نے سلطانوں کے ساتھ اپنے عروج کو دیکھا، کیونکہ وہ 2021-2023ء تک 1596 رنز بنانے میں کامیاب رہے اور پی ایس ایل 8 میں سب سے زیادہ رنز بنانے والے حنیف محمد کیپ جیتنے میں کامیاب ہوئے۔ وہ 3 پی ایس ایل سیزن میں 500+ رنز بنانے والے واحد بلے باز بھی بن گئے۔ فروری 2023ء میں، پی ایس ایل 8 میں کراچی کنگز کے خلاف کھیلتے ہوئے، اس نے ملتان کرکٹ اسٹیڈیم میں اپنی دوسری ٹی 20 سنچری اور پی ایس ایل کی پہلی سنچری، 64 گیندوں پر ناقابل شکست 110 رنز بنائے۔

بین الاقوامی کیریئر[ترمیم]

رضوان نے اپریل 2015 ءمیں بنگلہ دیش کے خلاف پاکستان کے لیے اپنے ایک روزہ بین الاقوامی (ODI) کرئیر کا آغاز کیا، 58 گیندوں پر 67 اسکور بنائے۔ [29] انھوں نے اسی سیریز میں پاکستان کے لیے ٹی ٹوئنٹی بین الاقوامی کرئیر کا آغاز کیا۔ [30] انھوں نے 25 نومبر 2016ء کو نیوزی لینڈ کے خلاف پاکستان کے لیے ٹیسٹ کرئیر کا آغاز کیا۔ [31] وہ اپنی پہلی ٹیسٹ اننگز میں گولڈن ڈک پر آؤٹ ہوئے۔ [32]

اعزازات اور پہچان[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Mohammad Rizwan profile"۔ ESPNcricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 10 اپریل 2022 
  2. ^ ا ب "ICC Men's T20I Player Batting Rankings"۔ ICC (بزبان انگریزی)۔ 2022-08-30۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 ستمبر 2022 
  3. ^ ا ب "Most runs in a calendar year"۔ Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 جون 2022 
  4. "PAK vs WI: Mohammad Rizwan Becomes 1st Batter to Score 2,000 T20 Runs in a Calendar Year"۔ www.news18.com (بزبان انگریزی)۔ اخذ شدہ بتاریخ 10 اپریل 2022 
  5. "From Mohammad Rizwan to KL Rahul: Know the batters with the highest averages in T20 internationals"۔ SportsAdda (بزبان انگریزی)۔ 2022-08-29۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 ستمبر 2022 
  6. "Mohammad Rizwan became the second wicket-keeper in the world to score a century in all formats"۔ LING NEWS 24 (بزبان انگریزی)۔ 2021-02-12۔ 22 فروری 2021 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 10 اپریل 2022 
  7. Faisal Saeed (2021-02-12)۔ "Mohammad Rizwan becomes first Pakistani wicket-keeper to score century across all formats"۔ Mashable Pakistan (بزبان انگریزی)۔ اخذ شدہ بتاریخ 10 اپریل 2022 
  8. "'Never been desperate for captaincy': Pakistan Test vice-captain Mohammad Rizwan"۔ Hindustan Times (بزبان انگریزی)۔ 2021-06-30۔ اخذ شدہ بتاریخ 10 اپریل 2022 
  9. "Darren Stevens Named Among Five Wisden Cricketers Of The Year In 2021"۔ Wisden (بزبان انگریزی)۔ 2021-04-14۔ اخذ شدہ بتاریخ 10 اپریل 2022 
  10. "All the winners of the 2021 ICC Awards announced"۔ www.icc-cricket.com (بزبان انگریزی)۔ اخذ شدہ بتاریخ 10 اپریل 2022 
  11. "Multan Sultans win maiden PSL title, beat Peshawar Zalmi in final"۔ The Indian Express (بزبان انگریزی)۔ 2021-06-25۔ اخذ شدہ بتاریخ 10 اپریل 2022 
  12. ^ ا ب "Sarfaraz Ahmed and Babar Azam to take charge of Pakistan domestic sides"۔ ESPNCricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 08 ستمبر 2020 
  13. ^ ا ب Osman Samiuddin (22 May 2021)۔ "Mohammad Rizwan: 'The pain of letting through four byes will never go'"۔ Wisden۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 اگست 2023 
  14. National Bank of Pakistan v Sui Northern Gas Pipelines Limited 2014–15
  15. Kenya in Pakistan 2014–15
  16. "Pakistan Cup one-day tournament to begin in Faisalabad next week"۔ Geo TV۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 اپریل 2018 
  17. "Pakistan Cup Cricket from 25th"۔ The News International۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 اپریل 2018 
  18. "Pakistan Cricket Cup: Kamran hammers 170 off 96 balls"۔ The News International۔ اخذ شدہ بتاریخ 02 مئی 2018 
  19. "Federal Areas aim to complete hat-trick of Pakistan Cup titles"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 مارچ 2019 
  20. "Pakistan Cup one-day cricket from April 2"۔ The International News۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 مارچ 2019 
  21. "PCB announces squads for 2019-20 domestic season"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 04 ستمبر 2019 
  22. "Northern beat Balochistan to be crowned National T20 Cup champions"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 اکتوبر 2019 
  23. "Six Cricket Association squads confirmed"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 28 اگست 2020 
  24. "PCB reveals squads for National T20 Cup"۔ Geo Super۔ اخذ شدہ بتاریخ 09 ستمبر 2020 
  25. "Pakistan star Mohammad Rizwan to play County Championship and T20 cricket for Sussex in 2022" 
  26. "Pakistan star Mohammad Rizwan signs for Sussex | Sussex Cricket"۔ sussexcricket.co.uk۔ اخذ شدہ بتاریخ 13 اپریل 2022 
  27. "Pakistan Super League Cricket Team Records & Stats | ESPNcricinfo.com"۔ Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 02 جولا‎ئی 2023 
  28. "Rizwan bitter at being left out by captain Imad | thenews.com.pk"۔ The News۔ اخذ شدہ بتاریخ 02 جولا‎ئی 2023 
  29. "Pakistan tour of Bangladesh, 1st ODI: Bangladesh v Pakistan at Dhaka, Apr 17, 2015"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 17 اپریل 2015 
  30. "Pakistan tour of Bangladesh, Only T20I: Bangladesh v Pakistan at Dhaka, Apr 24, 2015"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 24 اپریل 2015 
  31. "Pakistan tour of New Zealand, 2nd Test: New Zealand v Pakistan at Hamilton, Nov 25–29, 2016"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2016 
  32. "A rare slump for Younis Khan"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2016 
  33. ^ ا ب "Rizwan steals limelight in PCB Awards 2021"۔ www.samaa.tv۔ اخذ شدہ بتاریخ 07 جنوری 2022 
  34. "ICC Men's T20I Team of the Year revealed"۔ International Cricket Council۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 جنوری 2022 
  35. "The ICC Men's T20I Cricketer of the Year revealed"۔ www.icc-cricket.com (بزبان انگریزی)۔ اخذ شدہ بتاریخ 23 جنوری 2022 
  36. "Babar Azam, Mohammad Rizwan, Shaheen Afridi receive ICC trophies" 

بیرونی روابط[ترمیم]

اعزازات
ماقبل 
پہلا
آئی سی سی ٹی/20 کرکٹ میں سال کا بہترین مرد کھلاڑی
2021
مابعد 
--