محمد شعیب تورڈھیری

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

حضرت الشیخ مولانا حافظ محمد شعیب تورڈھیری درانی سلسلہ قادریہ کے مشہور و معروف بزرگ ہیں۔
ان کے والد محترم کا نام حافظ گل یاد بن ملک غازی خان تھا جو احمد شاہ ابدالی کے ساتھ پانی پت گئے اور اس کے بعدعلاقہ یوسف زئی میں وارد ہوئے ابتدائی تعلیم اپنے علاقے میں ہی حاصل کی کمالات باطنی کا حصول مولانا حافظ محمد ہشتنگری سے کیا یہ میاں عمر اور ملامحمد محمد زئی سے بھی شہرت رکھتے ہیں۔ چاروں سلاسل (قادریہ، چشتیہ،نقشبندیہ،سہروردیہ)میں خلیفہ مجاز او اذن یافتہ تھے اورخصوصی اجازت تھی سلسلہ قادریہ کو ترویج دینے کی۔
یہ اپنے مرشد کی اجازت سے اپنے علاقے میں مدارس اور تصوف کا مرکز قائم کرنے میں مشغول رہے ان کی وفات 1232ھ بمطابق 1816ء میں ہوئی اور مزار مبارک تورڈھیری ضلع صوابی نزدیک مردان ہے۔

اخوند عبد الغفور عرف حضرت سوات المعروف سیدو بابا ان کے مشہور خلیفہ ہیں۔[1][2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. تاریخ اولیاء،ابو الاسفارعلی محمد بلخی،صفحہ210،نورانی کتب خانہ قصہ خوانی بازار پشاور
  2. تواریخ حافظ رحمت خانی، پیر معظم شاہ صفحہ 617،پشتو اکیڈمی پشاور