محمد نقشبند حجۃ اللہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

خواجہ محمد نقشبند حجۃ اللہ آپ عروۃ الوثقیٰ قیومِ ثانی خواجہ محمد معصوم کے دوسرے صاحبزادے اور قیوم ثالث ہیں۔

ولادت[ترمیم]

آپ کی ولادت 7؍ رمضان المبارک 1034ھ/1625ء بروز جمعۃ المبارک ہوئی۔مجدّد الف ثانی نے مرض الموت میں قیوم ثانی سے ارشاد فرمایا تھا کہ اس سال میرے وصال کے بعد تمہارے ہاں ایک لڑکا پیدا ہوگا جو قُرب الٰہی کے کمالات میں میرے برابر ہوگا۔

تعلیم و تربیت[ترمیم]

آپ نے علم ظاہری و باطنی اپنے والدمحترم سے حاصل کیا۔ بوجہ علو استعداد تھوڑے عرصہ میں آپ پر وُہ اسرار منکشف ہُوئے جن کی نسبت خواجہ محمد معصوم فرماتے تھے کہ یہ حیطہ درکِ عقل و تصویرِ خیال سے باہر ہیں۔ نے اپنی قیومیّت کے اکتالیسویں سال 1074ھ میں آپ کے قُطب الاقطاب اور مرتبہ قیومیّت کی بشارت دی۔ آپ نے 11؍ ربیع الاوّل 1079ھ/1668ء کو مسندِ ارشاد پر جلوس فرمایا۔ بڑے بڑے مشائخ اور علما اپنی مشیخیت اور درس و تدریس کو چھوڑ کر آپ کے مرید ہوئے۔توران، ترکستان، بدخشاں کے بادشاہ اپنی اپنی حدود تک استقبال کے لیے آئے۔

وصال[ترمیم]

28؍محرم الحرام بروز جمعرات کو آپ پر مرض کا غلبہ ہوا۔ رات کو تہجّد کی نماز ادا کر کے دیر تک فاتحہ پڑھتے رہے۔ پھر لیٹ گئے اور شب جمعۃ المبارک 29؍محرام الحرام 1114ھ/1702ء کو 35 سال مسندِ قیومیّت و ارشاد پر فائز رہ کر سرہند شریف میں رحلت فرمائی۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. تذکرہ مشائخ نقشبندیہ،ص 371،نور بخش توکلی،مشتاق بک کارنر لاہور