مرکز المملکہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مركز المملکہ
عمومی معلومات
حیثیت Complete
قسم تجارتی دفاتر
رہائش گاہیں
ہوٹل
معماری طرز ماڈرن
مقام شارع ملک فہد
ریاض، سعودی عرب
متناسقات 24°42′41″N 46°40′28″E / 24.711389°N 46.674444°E / 24.711389; 46.674444متناسقات: 24°42′41″N 46°40′28″E / 24.711389°N 46.674444°E / 24.711389; 46.674444
آغاز تعمیر 1999
تکمیل 2002
لاگت ریال 1.7 بلین
اونچائی
تعمیراتی 302.3 میٹر (991.80 فٹ)
اوپر کی منزل 290.4 میٹر (952.76 فٹ)
مشاہدہ گاہ 290.4 میٹر (952.76 فٹ)
تکنیکی تفصیلات
منزلوں کی تعداد 74
2 below ground
منزل رقبہ 185,000 میٹر2 (1,991,323 فٹ مربع)
لفٹیں 45
ڈیزائن اور تعمیر
معمار Ellerbe Becket
Omrania and Associates
ڈیولپر کنگڈم ہالڈنگ کمپنیاں
ساختی انجینئر Arup
اہم ٹھیکیدار EL-Seif Engineering Contracting
حوالہ جات
[1][2][3][4]
برج المملکہ کا ایک دلکش منظر

مركز المملکہ یا کنگڈم سینٹر سعودی عرب کے دار الحکومت ریاض میں واقع ملک کی بلند ترین عمارت ہے جسے دنیا کی خوبصورت ترین عمارتوں میں سے ایک شمار کیا جاتا ہے۔ 302 میٹر (992 فٹ) بلند یہ عمارت دنیا کی بلند ترین عمارات کی فہرست میں 25 ویں نمبر پر ہے۔ برج 94 ہزار 230 مربع میٹر پر جبکہ کل عمارت 3 لاکھ مربع میٹر پر پھیلی ہوئی ہے۔

مركز المملکہ سعودی شہزادے الولید بن طلال بن عبد العزیز السعود کی ملکیت ہے۔ اس منصوبے پر کل 1.717 ارب سعودی ریال کی لاگت آئی۔ برج کا سنگ بنیاد 1999ء میں رکھا گیا اور 2002ء میں پایہ تکمیل پر پہنچا۔ برج شہر کے مرکز میں شاہراہ شاہ فہد اور کوچہ العروبہ کے درمیان ریاض کے ابھرتے ہوئے کاروباری مرکز اولایا میں واقع ہے۔

مركز المملکہ 2002ء میں ایمپورس اسکائی اسکریپر ایوارڈ جیت چکا ہے جس میں اس کے منفرد اور دلکش ڈیزائن کو سراہا گیا۔

عمارت میں دفاتر اور خریداری کے مراکز کے علاوہ ہوٹل اور رہائشی اپارٹمنٹ بھی واقع ہیں۔

اس میں واقع مسجد دنیا کی بلند ترین مسجد بھی واقع ہے جبکہ اس کی ایک اور خصوصیت اس چھت کے دونوں سروں کے درمیان واقع پل ہے جہاں سے پورے ریاض کا دلکش نظارہ دیکھا جاسکتا ہے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]