مسعود انور

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مسعود انور ٹیسٹ کیپ نمبر121
Masood anwer.jpeg
کرکٹ کی معلومات
بلے بازیبائیں ہاتھ کے بلے باز
گیند بازیسست بائیں ہاتھ کا آرتھوڈوکس بولر
بین الاقوامی کرکٹ
قومی ٹیم
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ ٹیسٹ کرکٹ فرسٹ کلاس کرکٹ
میچ 1 128
رنز بنائے 39 2308
بیٹنگ اوسط 19.50 18.03
100s/50s -/- -/5
ٹاپ اسکور 37 76*
گیندیں کرائیں 161 31050
وکٹ 3 587
بولنگ اوسط 34.00 21.71
اننگز میں 5 وکٹ - 38
میچ میں 10 وکٹ - 9
بہترین بولنگ 2/59 8/44
کیچ/سٹمپ -/- 46/-
ماخذ: [1]

مسعود انور (انگریزی: Masood Anwar)(پیدائش:12 دسمبر 1967ء خانیوال، پنجاب) ایک پاکستانی کرکٹر ہے۔جس نے پاکستان کی طرف سے[1] صرف ایک ٹیسٹ میں شرکت کی ہے مسعود انور جو کہ دائیں ہاتھ کے بلے باز اور سلو لیفٹ آرم آرتھوڈوکس باولر تھے پاکستان کے علاوہ فیصل آباد ،لاہور،ملتان ،پاکستان آٹو موبائلز کارپوریشن،یونائیٹیڈ بینک لمیٹڈ کی طرف سے بھی اپنے جوہر دکھائے ہیں

ٹیسٹ کرکٹ[ترمیم]

مسعود انور کو ویسٹ انڈیز کے خلاف 1990ء میں ٹیسٹ ٹیم کا حصہ بنایا گیا تھا جو کہ ان کا اکلوتا ٹیسٹ ثابت ہوا۔ لاہور میں کھیلے جانے والے اس ٹیسٹ میں ویسٹ انڈیز کی ٹیم نے 294 رنز سکور کئے جس میں کارل ہوپر کے 134، برائن لارا 44 رنز کی باریاں تقویت کا باعث بنی تھیں۔ پاکستان کی طرف سے وسیم اکرم 61/4، وقار یونس 57/1، عبدالقادر 75/1 کے ساتھ بولنگ کے شعبے میں اپنی سی محنت کرتے دکھائی دیئے۔ اپنا پہلا ٹیسٹ کھیلنے والے مسعود انور نے 59/2 کے ساتھ ویسٹ انڈیز کے 2 کھلاڑی قابو میں کئے تھے۔ انہوں نے کارل ہوپر کو زاہد فضل کے ہاتھوں کیچ کروا کر اپنی پہلی ٹیسٹ وکٹ حاصل کی جبکہ وکٹ کیپر بیٹسمین جیف ڈوجان ان کی دوسری وکٹ بنے جو معین خان کے ہاتھوں سٹمپ ہوکر پویلین لوٹ گئے تھے۔ بیٹنگ کے شعبے میں مسعود انور صرف 2 رنز ہی بنا سکے۔ ویسٹ انڈیز کی دوسری اننگ میں مسعود انور کے ہاتھ ایک اور وکٹ آئی جب انہوں نے ڈیسمنڈ ہینز کو 12 رنز پر کریز سے رخصت کیا۔ دوسری اننگ میں مسعود انور نے 37 رنز بنائے جس کیلئے انہوں نے 128 منٹ انتظار کیا۔ یہ ٹیسٹ برابری پر ختم ہوگیا تھا۔

اعداد و شمار[ترمیم]

مسعود انور نے ایک ٹیسٹ کی 2 اننگز میں 37 کے بہترین انفرادی سکور کے ساتھ 39 رنز کا مجموعہ کرکٹ کی ریکارڈ بکس کا حصہ بنایا۔ 19.50 کی اوسط سے یہ رنز بنائے گئے تھے جبکہ 128 فرسٹ کلاس میچوں کی 170 اننگز میں 42 دفعہ ناٹ آئوٹ رہ کر انہوں نے 2308 رنز سکور کئے۔ 18.03 کی اوسط سے بننے والے اس مجموعے میں 76 ناٹ آئوٹ اس کا سب سے زیادہ سکور تھا۔ مسعود انور نے 102 رنز دے کر 3 ٹیسٹ وکٹیں حاصل کیں۔ 2/59 ان کی کسی ایک اننگ اور 3/102 کسی ایک میچ کی بہترین بولنگ تھی جس کیلئے انہیں 34.00 کی اوسط سے رنز دینے پڑے۔ فرسٹ کلاس میچوں میں مسعود انور کی وکٹوں کی تعداد 587 تھی۔ 44/8 اس کی بہترین بولنگ کا ریکارڈ تھا۔ 21.71 کی اوسط سے حاصل کی جانے والی ان وکٹوں کیلئے اس نے 12746 رنز کا خسارہ برداشت کیا تھا۔ 38 دفعہ ایک اننگ میں 5 یا اس سے زائد اور 9 دفعہ اننگز میں 10 یا اس سے زائد وکٹیں بھی ان کے ریکارڈ کا حصہ ہیں۔ بطور امپائر انہوں نے 11 میچوں کو سپروائز کیا۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. انگریزی ویکیپیڈیا کے مشارکین. "Masood Anwar".