مشتاق احمد بیگ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مشتاق احمد بیگ
پیدائشی نام مشتاق احمد بیگ
پیدائش 21 دسمبر 1951ء

لہر سلطان پور گاؤں، ضلع چکوال، صوبہ پنجاب
وفات 25 فروری 2008ء (57 سال)

راولپنڈی، پنجاب، پاکستان
وابستگی Flag of Pakistan.svg پاکستان
نوکری/شاخ  پاکستان فوج
سالہائے کار 1976ء2008ء
عہدہ US-O9 insignia.svg لیفٹیننٹ جنرل
یونٹ پاکستان آرمی میڈیکل کور
سالار سرجن جنرل پاکستان آرمی میڈیکل کور
ڈائریکٹر جنرل طبی خدمات
[کمانڈنٹ] فوجی طبی کالج
جنگیں/محارب کارگل جنگ
بھارت اور پاکستان کے تعطل (2001)
شمال مغرب پاکستان میں جنگ
آپریشن راہ راست
اعزازات ہلال امتیاز

لیفٹیننٹ جنرل مشتاق احمد بیگ پاک فوج کے سرجن جنرل جنہیں خود کش حملے میں ہلاک کیا گیا تھا۔

ولادت[ترمیم]

مشتاق احمد بیگ کی ولادت 1951ء صوبہ پنجاب میں ضلع چکوال کے گاؤں لہڑ سلطانپور میں ہوئی۔

تعلیم[ترمیم]

ابتدائی تعلیم اپنے علاقے میں حاصل کرنے کے بعد لاہور کِنگ ایڈورڈز میڈیکل کالج سے طب کی تعلیم مکمل کی۔

پاک آرمی میں شمولیت[ترمیم]

حاصل کرنے کے بعد انہوں نے جنوری 1976ء میں فوج کے شعبۂ طب میں کمیشن حاصل کیا۔ 2003ء میں میجر جنرل اور 8 فروری 2007ء کو لیفٹیننٹ جنرل کے عہدے پر ترقی دے کر پاک فوج کے شعبۂ طب کا سربراہ بنا دیا گیا۔

ہلال امتیاز[ترمیم]

لیفٹیننٹ جنرل مشتاق احمد بیگ پاک فوج کے ان اعلیٰ افسران میں سے تھے جو انتہائی متوسط گھرانے سے ہونے کے باوجود فوج کے اعلیٰ ترین عہدے پر پہنچے۔ فوج میں خدمات کے پیشِ نظر انہیں فوجی اعزاز ہلال امتیاز سے بھی نوازا گیا۔[1]

شہادت[ترمیم]

25 فروری 2008 کو راولپنڈی کے مال روڈ پر خود کش حملے میں شہید ہوئے۔ ان کی یاد میں لیفٹیننٹ جنرل مشتاق احمد بیگ شہید میموریل ہسپتال چوآسیدن شاہ میں قائم کیا گیا۔[2]

حوالہ جات[ترمیم]