مظہر کلیم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مظہر کلیم
MAZHAR KALEEM.jpg
پیدائش 22 جولائی 1942ء (عمر 75 سال)
Kiri Afghanan، ملتان، پاکستان
وفات ملتان، پاکستان
پیشہ قانون دان، ناول نگار، اینکرپرسن
دور 1968 - تا حال
اصناف جاسوسی ادب

مظہر کلیم (پ:1942ء – وفات: 26 مئی 2018ء) پاکستان کے کامیاب قانون دان اور ناول نگار جو عمران سیریز کی وجہ سے خاصے مقبول ہوئے۔ ریڈیو ملتان کا مشہور سرائیکی ریڈیو ٹاک شو "جمہور دی آواز" کے اینکرپرسن بھی رہے۔ ملتان بار کونسل کے نائب صدر بھی منتخب ہوئے نیز ملتان کی ضلعی عدالتوں کی سربراہی بھی کی۔
مظہر کلیم عمران سیریز - جس کا آغاز ابن صفی نے کیا تھا- تحریر کرنے میں ابن صفی کے معاصر رہے ہیں تاہم اس میں مزید توسیع اور نئے کرداروں کو متعارف کروایا۔ اسی کے ساتھ بچوں کے لیے بھی مختصر حکایتیں تحریر کیں۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

مظہر کلیم کی پیدائش 22 جولائی 1942ء کو پاکستان کے شہر ملتان میں ہوئی۔ والد حمید یار خان ایک برخاست شدہ پولس افسر تھے۔ مظہر کلیم کا اصل نام مظہر نواز خان ہے لیکن مظہر کلیم خان کے قلمی نام سے شہرت پائی۔

تعلیم[ترمیم]

ملتان اسلامیہ ہائی اسکول میں تعلیم حاصل کی اور دانشگاہ ایمرسن (Emerson College) سے فراغت حال کی؛ اس کے بعد جامعہ ملتان (حالیہ جامعہ بہاء الدین زکریا) سے اردو ادب میں ایم اے اور ایل ایل بی کی۔

پیشہ ورانہ زندگی[ترمیم]

پیشہ کے لحاظ سے ایک قانون دان ہے اور ناول نگاری کو ایک جزوقتی مشغلہ کے طور پر اپنایا۔ نیز ریڈیو ملتان کا مشہور سرائیکی ریڈیو ٹاک شو "جمہور دی آواز" کے اینکرپرسن بھی رہے۔

اولاد[ترمیم]

مظہر کلیم کے 2 لڑکے اور 4 لڑکیاں ہیں۔ لیکن سب سے بڑا بیٹا فیصل جان 31 سال کی عمر میں وفات پاگیا اور دوسرا لڑکا فہد عثمان خان ایک بنک میں ملازم ہے۔

مطبوعات[ترمیم]

مظہر کلیم کی تحریر کردہ ناولوں کی تعداد سینکڑوں سے متجاوز ہو چکی ہے۔ ذیل میں چند ناولوں کے نام درج ہیں:

  1. عمران کی موت
  2. ایکشن گروپ
  3. ایکس ٹو کون
  4. کایا پلٹ
  5. طاغوتی دنیا
  6. گرینڈ وکٹری
  7. ڈاگ کرائم
  8. بلیک ماسک
  9. چیف ایجنٹ
  10. ری بائٹ
  11. سیکرٹ سروس مشن
  12. ہاف مشن
  13. ڈبل ڈاج
  14. ڈینجر مشن
  15. سائرل
  16. مکروہ جرم
  17. بلیک ورلڈ
  18. لاسلکی
  19. پی کاک
  20. جناتی دنیا

وفات[ترمیم]

26 مئی 2018ء کو ملتان میں وفات پائی۔

حوالہ جات[ترمیم]